کاشف نصیر

تبدیلی کی ہوا

کوئی شک نہیں کہ میدان کپتان کے لئے خالی ہے، فضاء ہموار اور نوجوان تیار ہیں، بلکہ اس سے کہیں زیادہ پورا شہری پنجاب، سرحد اور یہاں تک یہ شہر کراچی عمران خان کی جھولی میں گرنے کے لئے بے چین ہے، وجوہات کئی ہیں جن میں ایک یہ کہ قوم بھی کپتان کی طرح […]

خود کلامی کی عادت نہیں مجھے

کچھ پڑھنے اور لکھنے کے لئے وقت نکالنا کبھی اتنا مشکل نہ تھا جتنا کہ بیتے کچھ مہینوں میں رہا،تین مہینے ہوتے ہیں کہ کوئی کتاب پڑھی ہو، رواں ماہ رمضان میں مطالعہ قرآن کا حال بھی قابل رحم ہے، کئی تفاسیرمطالعہ گاہ میں دھری ہیں لیکن مجال ہے جو ابتدائیہ سے آگے بڑھ سکا […]

نئے بلاگ پر خوش آمدید

خدا خدا کرتے کفر توٹا اور ایک عرصے غائب رہنے کے بعد اردو بلاگستان میں واپسی نصیب ہوئی۔ البتہ عرصہ ڈیڑھ سال میں ورڈ پریس سے ڈاٹ کو ڈاٹ سی سی اور پھر واپس وڑد پریس سے ہوتے ہوئے اس نئے زاتی اور قدرے مستقل بلاگ پر آتے آتے بہت کچھ بدل چکا ہے۔ آج […]

الزام اکیلے مولانا مودودی پر کیوں!

کیا لوگ ابن سباء کو بھول گئے، سیدنا عثمان نے اسے مدینہ سے بے دخل کیا تو کوفہ اور مصر میں بیٹھ کر اسنے سازشوں کے جال بچھائے۔ مدینہ، سفین، جمل، نہروان اور کربلہ میں اسکے کارندے بروکار آئے اور جو شیرو شکر تھے انہیں باہم دست و گریباں کردیا۔ عیسائیت میں سینٹ پال اور اسلام میں […]

سب سے پہلے پاکستان

اس روز جرنل معین الدین حیدر کی لمبی چوڑی تقریر سن کر ہمارے چہرے لٹکے ہوئے تھے اور ہمیں بادل نا خواستہ یہ بات سمجھ آگئی تھی کہ حکومت نے نوے ڈگری یو ٹرن لینے کا فیصلہ کرلیا ہے۔ ہمارے پاس کہنے کیلئے کچھ نہ تھا اور نہ کوئی ہماری بات سننے کے لئے تیار […]

کہانی روشنیوں کے شہر کی

قیام پاکستان کے وقت کسی نے کہا تھا کہ آج دیلی کراچی کی قسمت پر رشک کررہی ہے اور کیوں نہ کرتی کہ جو مقام دلی کو صدیوں کے انقلابات زمانہ نے بخشا، کراچی نے چند برسوں میں ہی سمیٹ لیا۔بھلا کون کہ سکتا تھا کہ بحرہ عرب کے کنارے آباد بلوچ ماہی گیروں کی […]

قدر و قیمت میں ہے خوں جن کا حرم سے بڑھ کر

حضرت عبداللہ شاہ غازی رحمہ اللہ کے مقبرے کی عقبی دیوار پر بیٹھا میں سمندر میں ڈوبتے سورج کو دیکھ رہا تھا، میری نظروں کے سامنے سمندر کی وسعت تھی اور سورج کسی ننھے پروانے کی مانند اسکی گہرائی میں ڈوبتا اور اسکی وسعت میں غائب ہوتا محسوس ہورہا تھا۔ سمندر اور سورج؟ دنیا اور […]

غریب الوطن پاکستانیوں کی داستان غم

سرخ رنگت، دراز کد، کشادہ چھاتی، اوف بڑھاپے میں بھی ایسے کہ کوئی دیکھے تو دیکھتا رہے۔ چھوٹے پوچھتے ہیں کہ اس ضعف میں وجاہت کا یہ عالم ہے تو اجلی جوانی نے کیا قیامت ڈھائی ہوگی۔ بڑے بتاتے ہیں کہ اسی ضعم میں دلیب کمال کو پچھاڑنے ممبئی یاترا پر گئے لیکن “اداکاری” نہ […]

ملا کو جو ہے ہند میں سجدے کی اجازت

مولوی صاحب سیکولرازم صرف روشن خیالوں کے ڈرائنگ روم کے ہی نخرے نہیں بلکہ فی الحقیقت روایتی مولویوں اور مشائخ کو بھی اسکی اتنی ہی ضرورت ہے بلکہ برصغیر کے روایتی مولوی طبقہ کے لئے تو سیکولرازم گویا اکسیجن گیس ہے اقبال نے ایسی ہی تھوڑی کہا تھا ملا کو جو ہے ہند میں سجدے […]

گھرکب آؤ گے

لاکھوں کروڑوں لوگ ایک آس کی پیاس لئے شدید بے چینی میں تمہاری راہ دیکھ رہے ہیں، انہوں نے ہوائی اڈے سے دارلسلطنت تک ایک لمبی قطار بنا رکھی ہے کہ تمہارا فقید المثال استقبال کرسکیں۔ نوجوان سب سے آگے اور مستعد ہیں، بزرگ بھی تمہاری نشان راہ تک رہے ہیں اور بچوں کا بھی […]

کس نے کہا تھا کہ ارکان اسمبلی کی ڈگریاں چیک کریں!

لیں اب کر لیں گل، کردیا نہ حقہ پانی بند، بڑے چوڑے ہوئے پھر رہے تھے۔ تھوڑی سی سستی شہرت کیا مل گئی، سمجھے تھے کہ سیدی حکومت گردادیں گے۔ اتنی ہمت کہ ان کم ظرفوں، کم ذاتوں عابد شیر علی اور جاوید لغاری کے پیچھے جاکر کھڑے ہوگئے۔ دے دھڑا دھڑ دن رات سب […]

جی کا جانا ٹھہر گیا ہے صبح گیا یا شام گیا

اطلاعات کے مطابق پاکستان میں تبدیلی کا اصولی فیصلہ کرلیا گیا ہے اور گزشتہ تین چار دنوں میں نظر آنے والی ڈرامائی ملاقاتیں اور سیاسی ہلچل اسی فیصلے کا عملی نتیجہ ہیں۔ منصوبہ کے مطابق سوئس مقدمات کھولنے کے اعلی عدالتی احکامات نہ ماننے کے الزام میں وزیر اعظم کے خلاف توہین عدالت کا مقدمہ […]

آج اردو کا جنازہ ہے ذرا دھوم سے نکلے

کل کسی کام کیلئے اردو یونیورسٹی گیا تو وہاں بیٹھے بیٹھے مجھے خیال آیا کہ کیوں نہ اس یونیورسٹی میں گزارے اپنے دو سالوں کے احوال پر کچھ لکھوں، پھر خیال آیا کہ کیا لکھوں۔ طلبہ تنظیموں کی کی مار دھاڑ پر اور نعرے بازیوں پر، کسی پولنگ اسٹیشن کا منظر دیتی مرکزی راہ داری […]

ہمیں منزل نہیں رہنما چاہئے

لیکن ہمیں صرف جتنا معلوم ہے اتنا ہی بیان کرنا چاہئے اور اصل معاملہ تو اللہ ہی بہتر جانتا ہے، اسے معلوم ہے کہ سچ کیا ہے اور جھوٹ کیا ہے اور پیش منظر اور پس منظر دنوں سے وہی واقف ہے۔اسکی لاٹھی بے آواز ہے اسکی مار بہت سخت ہے۔ لوگوں کو محض بولنا […]

وہ حبس ہے کہ لو کی دعا مانگتے ہیں لوگ ۔۔۔

بہت کم ہیں جو ادراک رکھتے ہیں اور وہ تو نہ ہونے کہ برابر جو شجر سے پیوستہ اور منتظر صبح بہاراں ہوں مگر اکثر حال سے بے حال اور کیوں نہ ہو کہ ننگ پا، راہ میں کانٹے ہی کانٹے اور منزل کی کوئی خبر نہیں۔ کوئی کس پر بھروسہ کرے کہ ہر چہرا […]

غامدی صاحب اور تجدد پسندی

حال ہی میں خوارج ،معتزلہ، باطنیہ، بہائیہ، بابیہ، قادیانیت اورپرویزیت کی طرح ایک نئے فتنے نے سر اٹھایا ہے جو اگرچہ تجدد پسندی کی کوکھ سے بر آمد ہوا ہے مگر اس نے اسلام کے متوازی ایک نئے مذہب کی شکل اختیار کر لی ہے، اس فتنے کا نام ہے ’’غامدیت!‘‘ہے۔ اگر ہم تاریخ کے […]

تقویٰ کا لباس

اللہ تعالی نے بنی نوح انسان کو اپنا خلیفہ بناکر اس دنیا میں بھیجا اور اس کی تن پوشی کے لئے لباس کو پسند فرمایا کیونکہ عریانیت اللہ کے یہاں انتہائی ناپسندیدہ عمل ہے۔ ہمارے ماں باپ حضرت بی بی حوا اور حضرت آدم علیہ سلام بھی بلاشبہ حیادار تھے۔ جب ابلیس کے جال میں […]

خدا کیلئے! ٹانگیں مت کھینچے

ٹھیک ہے اگر مارشل لاء یا اس طرز کے کسی غیر معمولی اور غیر آئینی اقدامات ناگزیر ہیں تو کم از کم آپ منافقت اور دوعملی ختم کرکے جاگیرداروں، سرداروں اور زرداروں کے ساتھ اس طویل اور پرتعیش شراکت اقتدار سے باہر نکل آئیں اور محب وطن جرنیلوں کی ٹینکوں پر بیٹھ کر ایوان صدر […]

فخر عالم کہاں ہے

صبح کےدس بج رہے تھے اور میں دو اجنبی نوجوان ساتھیوں کی مفیت میں پی اے ایف میوزیم کا راستہ پوچھتا پوچھاتا اب مرکزی راہ داری سے میوزیم کی حدود میں داخل ہورہا تھا. یہ دونوں نوجوان میرے لئے کچھ دیر پہلے تک بلکل اجنبی تھے لیکن پچھلے آدھ گھنٹے میں میری انسے کافی شناسائی […]

کل میرے شہر کی انتہا ہو گئی

آدھا ملک سیلاب کے پانی میں ڈوبا ہوا ہے اور آدھا دہشت گردی اور اسکے خلاف لڑی جانے والی نام نہاد جنگ میں مبتلا ہے، ایک کونے میں سب سے الگ تھلگ بحرہ عرب کی بے چین موجوں کے کنارے یہ شہر کراچی آباد ہے جو کسی بے لوث باپ کی طرح اور کسی مہربان […]

Pages