بلاگستان

تاریخ اشاعت: بدھ, December 21, 2011 - 20:10
سال2011ء میں پاکستانی کرکٹ ٹیم نے ٹیسٹ کرکٹ میں بھی بہترین کھیل کا مظاہرہ کیا۔ 2011ء میں قومی ٹیم 5 ٹیسٹ سیریز کھیلی جس میں 4 میں کامیابی حاصل کی اور ایک سریز برابر رہی۔ پاکستان نے نیوزی لینڈ کوایک صفرسےشکست دی اوراورویسٹ انڈیز سے سریزایک ایک سے برابر رہی۔ اس کے بعد زمبابوےاورسری لنکا کوایک صفر، اوربنگلہ دیش کودوصفرسے شکست دے کرچار...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, December 21, 2011 - 18:58
سال2011ء قومی کرکٹ کیلئے کافی کامیاب سال رہا۔ 2011ء میں گرین شرٹس نے چھ ون ڈے سیریز کھیلی اور تمام میں ریکارڈ کامیابی حاصل کی۔ اس سے قبل پاکستانی ٹیم دو بار ایک سال کے دوران پانچ پانچ ون ڈے سیریز جیت چکی ہے۔ 2011ءمیں پاکستان ٹیم نے عالمی کپ کےسیمی فائنل تک بھی رسائی حاصل کی۔شاہد آفریدی کی کپتانی میں پاکستان نے نیوزی لینڈ...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, December 21, 2011 - 14:26
مصنف: سعدیہ سحر




کسی نے کہا انقلاب آنے والا ھے کسی نے کہا اسے انقلاب کی چاپ سنائ دے رھی ھے کسی نے کہا حالات انقلاب والے ھیں اس لیے انقلاب کو آنے سے کوئ نہیں روک سکتا -

کسی نے تبدیلی کا نعرہ لگایا کسی نے انکشاف کیا عوام جاگ گئے - نجانے عوام کون سی نیند سو رھے تھے خواب خرگوش کے مزے لے رھے تھے یا گھوڑے بیچ کر سو رھے تھے یا غفلت کی نیند سو  رھے تھے

کسی نے کہا عوام میں شعور بیدار ھو گیا ھے انھیں اپنے حقوق کا علم ھو گیا ھے اب عوام کو کوئ بے وقوف نہیں بنا سکتا - اب عوام کی حکومت آئے گی - کسی نے کہا اب سونامی آنے والا ھے

آج تحریک انصاف کے جلسے میں عجیب...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, December 21, 2011 - 13:25
مصنف: دریچہ
پچھلے ہفتے کی بات ہے معلوم ہوا طلباء نے انٹر کے نتیجے میں تاخیر کے خلاف مظاہرہ کیا اور راولپنڈی بورڈ آف انٹرمیڈیٹ اینڈ سیکنڈری ایجوکیشن کی عمارت میں توڑپھوڑ کی اور آگ بھی لگائی۔ اسی موضوع پر گفتگو کے دوران میری رائے یہی تھی کہ یقیناً بچے بہت پریشان ہیں اور مایوس بھی لیکن توڑ پھوڑ کرنے اور پبلک پراپرٹی کو نقصان پہنچانے سے مسئلہ حل تو نہیں ہو گا۔ بلکہ ایسے نقصان کی قیمت پوری قوم کو ٹیکسوں کی صورت میں چکانا پڑتی ہے۔ ہم ہر مسئلے کا حل تشدد سے نکالنے کے عادی ہوتے جا...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, December 21, 2011 - 11:31
پاکستانی سیاست میں آئے دن نت نئے تماشے ہوتے رہتے ہیں ۔ کل قصورمیں ہونے والے تحریک انصاف کے جلسے کے اختتام پر جلسے کے شرکاءجن میں خواتین مرد اور بچے شامل تھے جلسہ گاہ میں موجود تمام کرسیاں لے کررفو چکر ہوگئے۔ عمران خان جو آئے روز سونامی کو پکار پکار کر بلا رہے تھے آخر وہ سونامی آ ہی گیا اور تمام کرسیاں بہا لے گیا۔ کرسیاں لے کرفرار ہو جانے سے اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ پاکستانی لیڈران کی طرح قوم کو بھی کرسی کتنی پیاری ہے۔ اطلاعات کے مطابق جلسہ گاہ میں 30 ہزار پلاسٹک کی "نئی" کرسیاں موجود تھیں۔ میرے اندازے کہ مطابق پلاسٹک کی ایک کرسی کی قیمت 400 روپے ہے۔ اگر واقعی 30...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, December 20, 2011 - 15:05
مصنف: کاشف نصیر
بھلا کون کہ سکتا تھا کہ بحرہ عرب کے کنارے آباد بلوچ ماہی گیروں کی  ایک چھوٹی سی بستی کی قسمت کبھی ایسے جاگے گی کہ وہ عالم اسلام کی سب سے بڑی اور دنیا کی تیسری بڑی ریاست کے دارلحکومت کا روپ ڈھال لے گی ، اسے وادی سندھ کی اقصادی شہ رگ اور […]
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, December 20, 2011 - 04:15

جی ہاں وہ جو کہتے ہیں نا کہ افٹر شاکس، تو کراچی کے ایک مدرسہ کے خلاف سماء ٹی وی کی من گھڑت رپورٹ  کے افٹر شاکس  اب بھی محسوس کئے جارہے ہیں ۔


ایک طرف اس رپورٹ کو بہانہ بنا کر پوش علاقوں میں مدارس بند کرنے کے نوٹس  جارہی ہوئے ہیں ،جس کے سبب ہزاروں بچوں کی مفت تعلیمی سلسلے میں رکاوٹ پیداہوجائے گی۔


دوسری طرف  نشیؤں کے اصلاحی مرکز  کو بند کرنے  کے بعد جو مریض اپنے گھروں کو واپس بھجوا دئے گئے تو ان میں سے کئی ایسے ہیں کہ اب ان کے والدین کاراحت و آرام غارت ہوگیا ہے، اسلئے کہ اب انکو اپنے ان نشئی اولاد  سے جان کے خطرئے لاحق ہوئے ہیں ۔


چنانچہ...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, December 19, 2011 - 23:15
جی ہاں وہ جو کہتے ہیں نا کہ افٹر شاکس، تو کراچی کے ایک مدرسہ کے خلاف سماء ٹی وی کی من گھڑت رپورٹ  کے افٹر شاکس  اب بھی محسوس کئے جارہے ہیں ۔ ایک طرف اس رپورٹ کو بہانہ بنا کر پوش علاقوں میں مدارس بند کرنے کے نوٹس  جارہی ہوئے ہیں ،جس کے [...]
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, December 19, 2011 - 16:50
المانیہ او المانیہ: جرمنی کی سیرمحمد خلیل الرحمٰنقسط نمبر ایک
ہمیں کالے پانی کی سزا ہوگئی۔ یہ وہی سزا ہے جسے منچلے پردیس کاٹنا کہتے ہیں۔ سنتے ہیں کہ قسمت والوں ہی کے مقدر میں یہ سزا ہوتی ہے۔ عرصہ ایک سال ہم نے بڑی کٹھنائیاں برداشت کیں اور یہ وقت کاٹا۔ پھر یوں ہوا کہ ہمارے لیے اس علاقے ہی کو جنت نظیر بنادیا گیا۔پھر تو پانچوں انگلیاں گھی میں تھیں اور سر کڑھائی میں۔ پھر ہمیں یہ مژدہ جاں فزاء سننے کو ملا کہ ہمیں جرمنی میں پانچ ہفتے کی تربیت یا جبری مشقت کے لیے چن لیا گیا ہے۔ ہم خوشی سے پھولے نہ سمائے۔ اپنا سفری بیگ اٹھایا اور کراچی کے لیے روانہ ہوگئے۔ گھر پہنچ کر گھر والوں کو بھی یہ خوشخبری...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, December 18, 2011 - 23:08
مصنف: عادل بھیا
’’بیٹا آپ۔۔۔۔ کیسے ہو؟ ‘‘ اُنہوں نے گیٹ کھولا اور مُجھے دیکھتے ہوئے بولیں۔’’جی۔۔۔۔ الحمدُللہ۔۔۔آنٹی۔۔۔ میں جُنید سے ملنے آیا تھا؟‘‘’’بیٹا، وہ تو جم گیا ہوا ہے بس آتا ہی ہوگا۔ آپ باہر کیوں کھڑے ہو، آؤ اندر۔۔۔۔ بیٹھو۔‘‘میں نے اپنا عُذر بیان کرتے ہوئے اجازت طلب کی لیکن جُنید کی والدہ کے بے حد اسرار کے سامنے مُجھے ہار ماننا پڑی۔
جگری یاری کے باعث ہمارا اکثر ایک دوسرے کے گھر آنا جانا رہتا ہی ہے۔ یہی وجہ ہے کہ اُس کی والدہ مُجھ اور میرے خاندان سے بخوبی شناسا ہیں۔ حال احوال پوچھنے کے بعد کہنے لگی: ’’بیٹا اچھا ہوا آپ آگئے۔۔۔ میں کچھ دِنوں سے جُنید کی وجہ سے بہت پریشان ہوں۔‘‘’’کیوں...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, December 18, 2011 - 17:18
مصنف: کاشف نصیر
 خاکی وردی والے کب تک مشرف کے بوجھ تلے دبے رہتے لیکن اگر زرداری صاحب آرٹیکل چھ کو بروکار لاتے اورمشرف کو محفوظ راستہ دے کر بھگانے کے بجائے الٹا لٹکا دیتے، اگر سیاسی یتیموں کو بے ساکھی پکڑا کر کھڑا نہ کرتے اور جمہوریت کو مستحکم کرتے تو آج خود انکی گردن کے گرد […]
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, December 15, 2011 - 02:56






انسانی زندگی کی مثال ایسی ہے جیسے شہر کی سڑک۔ لہراتی بل کھاتی اپنی منزل کی طرف رواں دواں۔ مگر اس سڑک کی موجودہ شکل کے نیچے، کہیں نیچے اس کا ماضی دفن ہوتا ہے۔ مختلف وقتوں کولتار ڈال  ڈال کر اسے پختہ بنایا جاتا رہتا ہے۔ کہیں ٹوٹ پھوٹ کی مرمت کرنے کے لیے یا کبھی کسی تشریف لانے والے صدر یا وزیرِ اعظم کے استقبال کے لیے۔ تہہ در تہہ کولتار بچھ بچھ کر اس سڑک کی وہ شکل ہوجاتی ہے جو آپ ہم دیکھتے ہیں۔ اور ضروری نہیں وہ شکل اچھی بھی ہو!!

زندگی کی اس سڑک پر کتنے ہی مقام آتے ہیں۔۔ کتنی ہی تہیں چڑھ جاتی ہیں، کتنے ہی روپ ہم بدل لیتے ہیں اور ۔۔ کتنے راستے...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, December 15, 2011 - 01:59


دجالی و شیطانی قوتوں کی خوشی  کیلئے یہ ( کار خیر ) کا کارنامہ انجام دینے والے نجی ٹی وی چینل کا لوگو ذیل میں ہے ہے۔جن کا دعویٰ ہے کہ ہم سنسنی نہیں بلکہ خبریں شئیر کرتے ہیں لیکن۔اسکے کردار وگفتار میں فرق صاف ظاہر ہے۔


ایک دوست کہتا ہے کہ یہ نجی ٹی وی چینل  جھوٹ نہیں بولتا ہے۔کیونکہ...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, December 14, 2011 - 20:59
دجالی و شیطانی قوتوں کی خوشی  کیلئے یہ ( کار خیر ) کا کارنامہ انجام دینے والے نجی ٹی وی چینل کا لوگو ذیل میں ہے ہے۔جن کا دعویٰ ہے کہ ہم سنسنی نہیں بلکہ خبریں شئیر کرتے ہیں لیکن۔اسکے کردار وگفتار میں فرق صاف ظاہر ہے۔ ایک دوست کہتا ہے کہ یہ نجی ٹی [...]
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, December 14, 2011 - 15:01
ایک  جینئس سردار نے بل گیٹس کو خط لکھا۔سر مجھے کچھ سوال پوچھنے ہیں۔
کی بورڈ کے لیٹرزصیح جگہ پر نہیں ہیں۔ کی بورڈکاصیح وژن کب آئے گاَ؟
ونڈوز میں“Start”کا بٹن ہے” Stop ” کا کیوں نہیں؟
ہم “ Ms Word ”استعمال کرتے ہیں “ Mr Word ”کب ریلیزہو گا؟
کی بورڈمیں” “ AnyKeyکا بٹن نہیں توپھر کمپوٹر کیوں “ Press Any Key ”مانگتا ہے؟
آخر میں ایک ذاتی سوال آپ کا نام "گیٹس"ہے تو آپ "ونڈوز"کیوں بناتے ہیں؟
زمرہ: اردو بلاگ

خلجان سپردِ قرطاس ------ میری ڈائری کا ایک ورق

تاریخ اشاعت: منگل, December 13, 2011 - 16:17
مصنف: محمود مغل
:کتھارسس:آج نہ میں آیا ہوں نہ میرا بھوت نہ میرا ہمزاد۔۔۔ ۔ میں ایک خالی آدمی ہوں خالی گھر کی طرح جو ۔۔سائیں سائیں کرتا ہے۔۔ جو، رو نہیں سکتا۔۔ جس کا سینہ چھلنی بھی ہوجائے  تو سانس کی دھونکنی چلتی رہتی ہے۔۔۔ میں ان لوگوں میں سے ہوں جو شیزوفرینیا میں مبتلا ہیں ۔۔جو ہزاروں الفاظ کے مرقع سے اپنے لیے صرف دکھ کشید کرتے ہیں۔۔میں وہ ہوں جو سینے کے جہنم کو بجھنے اس لیے نہیں دیتا کہ اس آگ کی لذّت ہی کچھ محمد محمود مغلnoreply@blogger.com2
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, December 13, 2011 - 10:59
ایک شیر کا بچہ شیروں کے گروہ سے علیحدہ ہو کر کھو گیا ، چلتا پھرتا وہ بکری کے ریوڑ میں شامل ہو گیا اور انہی کے ساتھ پل کر بڑا ہونے لگا انہی کی طرح چال ڈھال اور آواز بھی اختیار کر لی، ایک دفعہ بھیڑیوں نے بکریوں کے ریوڑ کو گھیر لیا  یہ دیکھ کر شیر کو بہت غصہ آیا جب بھیڑیوں نے بکریوں پر حملہ کیا تو شیر کا غصہ شدید ہو گیا اور اس نے دھاڑ کر شیروں والی آواز نکالی ، آواز سنتے ہی بھیڑیے سہم گئے شیر بلاامتیازhttp://www.blogger.com/profile/01265011304348792367noreply@blogger.com10
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, December 10, 2011 - 03:49

پاکستان میں پولیو کے قطرے پلانے کے بعد بھی  پولیو کے کیس سامنے آتے ہیں۔


اور یہ بات انتہائی پریشانی کی ہے کہ بعض وکلاء اور ڈاکٹروں نے باقاعدہ
پولیو کے قطروں کے خلاف پریس کانفرنس کی تھی ۔ لیکن پھر انکو خاموش کرادیا گیا۔


 ذیل کے کالم  انصاری محمد صاحب  نے اردو سائٹ ہماری ویب میں بھی پولیو کے قطروں کے بارے میں وضاحت کی گئی ۔ لھذا پڑھیئے اور سر دھنئے۔


(بشکریہ انصاری محمد صاحب اور  ہماری ویب)


بسم اللہ الرحمٰن الرحیم


اسلام و مسلم دشمن عناصر کی ہمیشہ سے یہ کوشش رہی ہے کہ مسلمانوں کی جڑیں کاٹ کر صفحہٴ ہستی سے ہمیشہ...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, December 9, 2011 - 22:49
پاکستان میں پولیو کے قطرے پلانے کے بعد بھی  پولیو کے کیس سامنے آتے ہیں۔ اور یہ بات انتہائی پریشانی کی ہے کہ بعض وکلاء اور ڈاکٹروں نے باقاعدہ پولیو کے قطروں کے خلاف پریس کانفرنس کی تھی ۔ لیکن پھر انکو خاموش کرادیا گیا۔  ذیل کے کالم  انصاری محمد صاحب  نے اردو سائٹ ہماری [...]
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, December 3, 2011 - 11:07
لارڈ میکالے کے نظام تعلیم   اور جدید تہذیب  نے   مسلمانوں کے ذہنوں پر جو اثرات مرتب کیے ہیں ، اس کی عجیب عجیب مثالیں دیکھنے کو ملتی رہتی ہیں،  یہود ونصاری نے ہمارے جوانوں کی اس حد تک برین واشنگ کردی ہے کہ  یہ    نہ صرف جدید تہذیب و ثقافت  کو اپنی بنیادی ضرورت سمجھ چکے ہیں بلکہ کچھ   نے تو اس تہذیب و ثقافت کو اس حد تک مقدس جان لیا   کہ اس کو  انبیا   کے لیے بھی لازمی قرار دینے پر اتر آئے ہیں ۔ ایک صاحب لکھتے ہیں  " اگر نبی پاک یورپ میں پیدا ہوتے تو کیا ان کا لباس اس ثقافت جیسا نہ ہوتا. . . . . . . . .جناب ثقافت سے بچنا کوئی آسان...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, December 3, 2011 - 10:58
اس پوسٹ کی دسویں قسط یہاں ملاحظہ فرمائیں
گڈو کو دفن کیا جا چکا ہےاوراب محلے کی مسجد کے امام صاحب انتہائی عجزوانکساری سے گڈوکیلئے دعا مانگ رہے ہیں۔ آسمان پر بادل اورگہرے ہوچکے ہیں۔ ننھےگڈوکی موت پرآسمان کا سینہ بھی غم سے پھٹ پڑاہےاوروہ بھی مسلسل روئےچلاجارہا ہے۔ وقفے وقفےسے بادل یوں گرجتے ہیں جیسے کوئی بوڑھیا اپنے جوان بیٹے کی موت پرنوحہ کررہی ہوں...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, December 2, 2011 - 00:28
کئی دن ہوگئے کچھ تحریر کیے ہوئے۔ 
اپنے اس جملے سے ہمیں دلاور فگار صاحب کا مشہورِ زمانہ مصرعہ یاد آگیا:
ع           حالاتِ حاضرہ کو کئی سال ہوگئے۔۔۔
واقعی اب تو ہمیں لگنے لگا ہے ہمارے حالاتِ حاضرہ مستقلہ مستمرہ ہوگئے ہیں۔ جمود ہے کہ بڑھتا چلا جا رہا ہے۔ زنگ ہے کہ لگتا چلا جا رہا ہے۔ کچھ ایام قبل ہم نے کتب پر جو ہلہ بولا تھا، اب وہ جوش بھی کچھ ٹھنڈا دکھائی دیتا ہے۔ کافی ساری کتب ان پڑھی موجود ہیں اور جنہیں جلد ختم کرنا ہے کیوں کہ اس مہینے میں کراچی کا عالمی کتب میلہ آرہا ہے۔ اور ہم اس دفعہ وہاں سے ٹھیک ٹھاک خریداری کرنے کا ارادہ کیے بیٹھے ہیں۔
...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, December 1, 2011 - 19:24
مصنف: عرفانیات
   co.ccیہ دیکھ کر آج دکھ کے مارے ہنسی نکل گئی کہ گوگل نے
ڈومین کو ڈی انڈیکس کر دیا ہوا ہے۔ یعنی مفت کے مزے لوٹنے والے کو کہیں نہ کہیں، کبھی نہ کبھی امتیازی سلوک سے دوچار ہونا ہی پڑتا ہے۔ حد ہے بھئی۔ حالانکہ والوں نے اپنی سائٹ پر لکھ رکھا ہے کہco.cc free domain name works exactly like a .com
اب کیا ہو گا؟co.ccمطلب اب یہ ہوا کہ یہ والا بلاگ اور دیگر تمام بلاگ جو
پر چل رہے ہیں وہ گوگل سرچ کے نتائج میں نظر نہیں آ پائیں گے۔ گویا اگر ہم چاہیں...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, November 30, 2011 - 15:44

Download( رائٹ کلک + سیو ایز)
یہود ونصاریٰ  اور روشن خیال و تجدد نواز طبقہ اسلامی احکام  کو سخت ، انسانی حقوق  اور عقل کے خلاف...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, November 29, 2011 - 23:01

پاکستان میں امریکہ یا نیٹو کے ہاتھوں کئی لوگوں کی جان جاچکی ہے جن میں اکثریت بےگناہ لوگوں کی تھی لیکن ہماری سپاہ ہمیشہ اس کاالزام حکومت کو دیتی رہی کہ وہ ہمیں اجازت نہیں دیتی ورنہ ہم بھی حملے روک سکتے ہیں۔
یکایک سپاہ غیرت کیوں کھا گئی کہ اس نے تندوتیز بیان جاری کردیے۔ کیا پہلے بھی پاکستانی نہیں‌مرتے رہے نیٹو یا امریکہ کے ہاتھوں۔
کیا اس لیے کہ حملے میں ان کے لوگ مارے گئے ہیں۔
کیا سویلین جانور اور خچر ہیں جو وہ مرتے رہے تو کسی کے کان پر جوں نہیں رینگی اور اب انسان مرے ہیں تو غیرت آنے لگی۔

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, November 29, 2011 - 21:00
آج میں نے اردو بلاگر ساتھیوں کے لیے ایک انگریزی بلاگرسانچے کو اردو میں تبدیل کیا ہے۔ اس ٹیمپلیٹ میں اردو میں تبصرہ جات لکھنے کے لیے علیحدہ اردو ایڈیٹر اور مصنف کے تبصروں کو علیحدہ انداز میں دکھانے کی سہولت موجود ہے۔میں نے ٹیمپلیٹ کی ٹیسٹنگ کے لیے ایک ٹیسٹ بلاگ بھی تشکیل دیا ہے۔ آپ لوگوں سے درخواست ہے کہ اگر اس ٹیمپلیٹ میں کوئی خرابی نظرآئے تومجھے مطلع کریں۔ انشا اللہ میں جلد مزید ٹیمپلیٹس کو اردو میں تبدیل کر کے آپ کے ساتھ شئیر کرونگا۔ امید ہے کہ آپ کو یہ سانچہ پسند آئے گا۔
...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, November 27, 2011 - 14:50

چند دنوں سے میں کچھ زیادہ ہی مصروف تھا۔اور یہ بات اظہر من الشمس ہے کہ مصروفیت کے سبب بندہ کے خیالات بھی منتشر ہوتے ہیں۔ان حالات میں بلاگر صرف کاپی پیسٹ پرہی گذارا کرتا ہے  یا فقط دوسرے بلاگروں کے بلاگز پر تبصرے ہی کرتا ہے۔


دراصل ہمارے گھر نئے مہمان کی آمد تھی  اللہ تعالیٰ نے ایک ننھی منی پیاری سی  گڑیا سے نوازا ۔خاندان کے کچھ لوگ تو خفاء ہیں کہ بیٹا نہیں ہوا ،لیکن پتہ نہیں کیوں میں انکی اس بے وقوفانہ بات پر خاموشی سے مسکرا دیتا ہوں۔دراصل انکو  بیٹی کے فضائل معلوم نہیں ۔


...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, November 27, 2011 - 09:50
چند دنوں سے میں کچھ زیادہ ہی مصروف تھا۔اور یہ بات اظہر من الشمس ہے کہ مصروفیت کے سبب بندہ کے خیالات بھی منتشر ہوتے ہیں۔ان حالات میں بلاگر صرف کاپی پیسٹ پرہی گذارا کرتا ہے  یا فقط دوسرے بلاگروں کے بلاگز پر تبصرے ہی کرتا ہے۔ دراصل ہمارے گھر نئے مہمان کی آمد تھی  [...]
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, November 26, 2011 - 19:16
ہاں واقع تبدیلی کائنات کا خمیر ہے، بارہا ایسا ہوتا ہے کہ ہم تبدیلی نہیں چاہتے، کچھ لمحے ، کچھ پل ایسے ہوتے ہیں کہ دل کرتا ہے گھڑی کی سوئیاں تھم جائیں، سمے رُک جائے، اور بس ہم اسی لمحے میں زندہ رہیں، ایسے ہی کسی وقت کے لئے شاعر کہتا ہے کہ
لمحوں میں سمٹ آیا ہے صدیوں کا سفر
زندگی تیز بہت تیز چلی ہو جیسے
کچھ لمحے ایسے بھی ہوتے ہیں کہ دل کرتا بس یہ وقت جلدی سے گزر جائے اور زندگی میں دوبارہ ایسا کبھی نا ہو، جی چاہتا ہے کہ ہمارے پاس جادو کی چھڑٰ ی ہو اور ہم اس منظر سے غائب ہو جائیں، زمین پھٹ جائے، آسمان ٹوٹ پڑے ، کچھ بھی پر یہ لمحہ گزر جائے۔...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, November 26, 2011 - 15:33
نئے ہجری سال 1433 کی آمد آپ سب کو مبارک ہو۔
آج بمطابق عیسوی تقویم ، 26/نومبر 2011 کو سعودی عرب میں یکم محرم الحرام قرار پائی ہے۔

ہر نیا ہجری سال ہمیں رسول اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کی عظیم ہجرت کی یاد دلاتا ہے!
وہ ہجرت جس کے باعث اسلام کا غلبہ اور اقتدار ہوا اور جس کی وجہ سے مدینہ منورہ کی پہلی اسلامی ریاست...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, November 25, 2011 - 01:51

میرے دوست (محترم احمد اسلام جارصاحب)اپنی خالہ کے حوالے سے یہ واقعہ بیان کرتے ہیں کہ صوبہ ہلمند کے علاقے ہزارہ جفت میں امریکی فوجی تربیت یافتہ کتے کے ہمراہ ہمارے گھر میں تلاشی کے بہانے گھس آئے۔


 ان کے فوجی بندقوں،پستولوں،نیزوں،دستی بموں اورکتوں سے لیس تھے،...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, November 24, 2011 - 22:21
موجودہ دورمیں انسانی زندگی میں بے پناہ ترقی ہو چکی ہے۔جس کا تصور آج سے کئی برس قبل نہیں کیا جاسکتا تھا۔ غرضیکہ انسانی زندگی میں لاتعدادآسائشوں اور سہولتوں کا اضافہ ہوگیا ہے۔ آسائشوں اور سہولتوں کے بعد ہونا تو یہ چاہیے تھا کہ انسان پہلے سے زیادہ خوش وخرم رہتا اور زندگی کو بھرپور انجوائے کرتا لیکن ایسا نہیں ہے۔وجہ؟
 آسائشیں اور...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, November 24, 2011 - 20:51
میرے دوست (محترم احمد اسلام جارصاحب)اپنی خالہ کے حوالے سے یہ واقعہ بیان کرتے ہیں کہ صوبہ ہلمند کے علاقے ہزارہ جفت میں امریکی فوجی تربیت یافتہ کتے کے ہمراہ ہمارے گھر میں تلاشی کے بہانے گھس آئے۔  ان کے فوجی بندقوں،پستولوں،نیزوں،دستی بموں اورکتوں سے لیس تھے،ہمارے گھر کے حفاظتی کتے کی نگائیں جب امریکی [...]
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, November 24, 2011 - 20:14
مصنف: عرفانیات
؀
وہی مکان، وہی گلیاں مگر وہ لوگ نہیں،
یہی مراد تو ہے بستیاں اجڑنے سے۔
انسان کا بھی عجیب معاملہ ہے۔ پیدا ہوتا ہے تو وہ کچھ بھی نہیں ہوتا۔ بعد کی زندگی میں اپنے گمان کے مطابق کامیابی حاصل کرنے کے لیے سالہا سال چیزوں کے حصول اور کاموں کی تکمیل کی خاطر اندھا دھند بھا گتا رہتا ہے، اس بات سے بے خبر کہ اس دوران زندگی گزرتی جا رہی ہے۔
پھر ایک دن غیر متوقع طور پر موت کا فرشتہ مقرر کیے ہوئے وقت سے نہ ایک سیکنڈ پہلے نہ ایک لمحہ بعد جان نکال لینے کے لیے آ پہنچتا ہے۔موت سے اس اپنے شب و روز میں مگن انسان کی یہ دنیا والی زندگی اختتام پذیر ہو جاتی ہے اور پھر وہ ایک اور ہی جہاں...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, November 24, 2011 - 03:16
مصنف: فراز بیگ

گستاخی کی معافی چاہتا ہوں لیکن فرض کریں آپ کو کسی جگہ قید کر دیا جاتا ہے. قید خانہ میں آپ کے علاوہ اور بھی بہت سے لوگ ہیں. لیکن اس قیدخانہ کے ضوابط عجیب ہیں. آپ واحد قیدی ہیں جس کو بولنے کی اجازت نہیں ہے، آپ کے علاوہ باقی سب کو بولنے کی اجازت ہے لیکن سننے کی نہیں. آپ دوسرے جس ساتھی کو بولنے کا کہیں گے وہ چپ نہیں رہ سکتا. یہ آپ کے اوپر ہے کہ سب کو ایک ساتھ بولنے دیں یا ایک ایک کر کے یا سب کو چپ کرا دیں.
خیر تو آپ نے ایک ساتھی کو بولنے کی اجازت دی. وہ شروع ہوا. ” یار آج کل ڈینگی بڑا پھیلا ہوا ہے بہت لوگ مر رہے ہیں ، اور تم نے وہ نیا موبائل دیکھا وہ جس میں چار سم ہوتی...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, November 24, 2011 - 03:10

مولانا عاصم عمر صاحب ایک زیرک اور وطن دوست عالم دین ہیں۔ دشمنان اسلام و پاکستان پر گہری نظر  رکھنے میں خصوصی مہارت رکھتے ہیں۔


اور پھر وقتافوقتا  اس خدشہ کا تحریر و تقریر کے ذریعے اظہار کرتے رہتے ہیں۔ تاکہ لوگ اس خطرے سے اگاہ ہوجائیں۔


چنانچہ اس سلسلے میں انہوں نے کئی کتابیں بھی لکھی ہیں۔ جن میں سے ایک   کتاب   (برمودہ تکون اور دجال ) بھی ہے۔


 میں نے جب یہ کتاب دیکھی تو اسکو کھول کر پڑھنے لگا۔یقین جانئے کہ جب تک اس  کو مکمل ختم نہیں کیا ،دل کو قرار نہیں مل رہا تھا۔


 کتاب ہی ایسی تھی کہ اسکو بغیر پڑھے دل  کو قرار نہیں آرہا تھا۔


کتاب...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, November 23, 2011 - 21:14
مصنف: فراز بیگ

ایک دفعہ کا ذکر ہے کہ ایک کنویں میں کچھ مینڈک رہتے تھے. ویسے تو ان کی زندگی میں کوئی مسئله نہیں تھا لیکن ان کا کوئی بادشاہ نہیں تھا.اسی پریشانی میں ان کے دن رات بسر ہو رہے تھے کہ ایک دن کہیں سے لکڑی کا ایک بڑا سا شہتیر آن گرا. زور کا چھپاکہ ہوا اور کنویں میں، جو ظاہر ہے ان کی پوری دنیا تھی، بھونچال آگیا. سب مینڈک ادھر ادھر چھپ گئے. آنکھوں آنکھوں میں ایک دوسرے کو اشارے کیے گئے. ” یہ تو کوئی بہت ہی طاقتور مخلوق لگتی ہے!” “ہاں ہاں اس کو اپنا بادشاہ بنا لیتے ہیں” چنانچہ سب کے سب دست بستہ اس لکڑی کے تختے کے آگے آئے اور عرض کی “مہاراج، آپ کی بہت مہربانی کہ...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, November 22, 2011 - 18:11

1- ایمپئر:۔
برقی کرنٹ کا پیمانہ اگر خلا میں دو متوازی کنڈیکٹروں میں (جن کا کراس سیکشن ایریا انتہائی کم ہو) سے جو کہ ایک دوسرے سے ایک میٹر کے فاصلہ پر ہوں، اتنی کرنٹ مسلسل گزاری جائے کہ وہ ان پر -7^10*2 نیوٹن فی میٹر لمبائی کے مساوی قوت پیدا کرے۔

2- ایمپئر آور:۔
برقی قوت کا یونٹ جو کہ 3600 کالمب کے برابر ہے۔ اگر ایک ایمپئر کرنٹ ایک گھنٹہ تک مسلسل گزرے تو اس کو ایک یونٹ ایمپئر آور کہا جاتا ہے۔

3- کولمب: ۔
برقی چارج کا یونٹ۔ برقی رو کی وہ مقدار جو کہ ایک سیکنڈ میں ایک ایمپئر شرح کرنٹ گزارتی ہے۔

4- ڈیسی بیل: ۔
آواز یا برقی پاور کی نسبت۔ اگرچہ بنیادی...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, November 21, 2011 - 17:44


ہر طرف اک تماشا ہے    کھیل جاری ہےمیدان سجا ہے جنگوں کا   کھیل جاری ہے
سروں کی فصل کاٹ کر    ظالم یہ کہتا ہےقیام امن کا ارادہ ہے        کھیل جاری ہے
بارود کے ڈھیر برسا کر    رہے وہ پاک دامنحقوق انساں کا پھر نعرہ ہے     کھیل جاری ہے
ہنستے بستے شہروں کو بنا دیا جنہوں نے کھنڈرتعمیر کا انہیں ہی دعوی ہے       کھیل جاری ہے
ہر ستم کی حد      اب اس دنیا نے تمام کر دیتہذیب پر بھی انکا گزارہ ہے  کھیل جاری ہے
یہ  گرم   گرم   سرخ لہو     چلا کے...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, November 21, 2011 - 15:32
اس پوسٹ کی نویں قسط یہاں ملاحظہ فرمائیں
ننھے گڈو کی میت ایک چھوٹے سے جلوس کی شکل میں قبرستان کی طرف جارہی ہے۔ گڈوکی ماں تقریبا پاگل ہوچکی ہے اور روتی چیختی باہر گلی میں آچکی ہے، محلے کی عورتوں نے گڈوکی ماں کو پکڑ رکھا ہے جو اپنے آپ کو چھڑانے کی دیوانہ وار کوشش کر رہی ہےتاکہ وہ دوڑ کر اُن بیدرد لوگوں کو روک لے جو اُس کے لخت جگرکواُس سے ہمیشہ ہمیشہ کیلئے دور لے جارہے ہیں۔
گڈوکی ماں پاگلوں کی طرح رورہی ہے اور چیخ چیخ کر کہے چلی جارہی ہے "رُک جاؤ ، رُک جاؤ ،خداکے لئے رُک جاؤ !۔۔۔۔۔۔ خداکے...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, November 20, 2011 - 20:56


Filed under: بلاگنگ, تصاویر, طنز و مزاح Tagged:...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, November 20, 2011 - 11:36
اونچی آواز میں دعا مانگوں یا اللہ مجھے محبت عطا کر تو ارد گرد نمازی تجسس بھری نگاہوں سے گھورے گے ضرور ۔ بد بخت مسجد میں بھی نفسانی خواہشیں لپیٹ لایا ہے ۔ گھر میں لبوں پہ یہی دعا گنگنائے تو رات کا کھانا خراب طبیعت کے بہانے میں رہ جائے ۔
جو رہتا ہے تو رہ جائے جو بگڑے سو بگڑے مگر دل کی بات کہنے سے نہ کوئی روک پائے ۔ ایک محبت کی کمی نے زندگی بے رنگ کر دی ۔ خواہشیں انگڑائی لینا بھول گئیں ۔ گناہ توبہ کی کسوٹی سے پرکھنے لگے ۔ نیکیاں آرزؤں کی سولی پر لٹک کر جھولنے لگیں ۔ ارمان گھٹ گھٹ مرنے لگیں ۔ لطیف سانس اکھڑ اکھڑ کر حلق میں اٹکنے لگے تو قلب رازِ محبت کے بار سے بیٹھنے لگے ۔ خشک ہونٹ نامراد...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, November 19, 2011 - 21:39
مصنف: آہنگ ادب
جب آنگن میں بیری کے پیڑ پتھر کے عذاب سہنے لگیں ، جب محبوب کی یاد غزل کے بے معنی حرفوں میں معنی بھرنے آئے ، جب ٹوٹا ہوا پتا اور بکھرا ہوا خواب درد کی جوت لگائے ، جب آفتاب مثالِ ماہ شبِ سیاہ کا سفر اختیار کرے ، جب آنکھوں میں کسی خیال [...]
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, November 18, 2011 - 18:52
مصنف: نقش بر آب
میرا منیجر ہر وقت مجھے ڈانٹتا رہتا ہے۔ میرے کام میں کچھ نہ کچھ نقص نکالتا رہتا ہے۔ یہ کردیا تو وہ کیوں نہیں کیا، وہ کام کیا تو ٹھیک سے کیوں نہیں کیا۔ غرض یہ کہ تنگ آمد بجنگ آمد والی صورتحال بنتی جارہی ہے۔ آج تو حد ہوگئی۔ فیکٹری میں سارے ساتھیوں کے […]
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, November 18, 2011 - 14:45
گوگل نے آن لائن میوزک کیلئے نئی سروس "گوگل میوزک" کا اجراء کردیا ہے۔ نئی سروس کی لانچنگ کیلئے لاس اینجلس میں تقریب ہوئی جس میں گوگل انتظامیہ نے اپنی سروس میں نئے اضافے کے بارے میں تفصیلات سے آگاہ کیا۔ گوگل میوزک پر اینڈرائڈ استعمال کرنے والے افراد  کے لیےگانے خریدنے اور ایم پی تھری فائلز کی اسٹریمنگ کی سہولت میسر ہوگی۔ ساتھ ہی صارفین...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, November 18, 2011 - 01:17


بحرِ رمل میں میری ایک غزل۔ کافی اغلاط ہیں اس میں کوئی صاحب اصلاح فرمانا چاہیں تو ممنون ہونگا۔

 نالہ کیا کیجے، فغاں کیا کیجے،دل نہیں لگتا یہاں، کیا کیجے،

دل تو اظہارِ تمنّا چاہے،وہ نہیں سنتے، بیاں کیا کیجے،

شوخیٔ گل کا خدا حافظ ہو،بلبلیں گریہ کناں،کیا کیجے،

جام سب خالی پڑے ہیں دل کے،چل دیا پیرِ مغاں، کیا کیجے،

کب ملے ہیں حسینوں کے خطوط؟چند تصویرِ بُتاں کیا کیجے،

چھوڑ کر بیٹھ گیا جو ہم کو،اس کے بن جائیں کہاں، کیا کیجے،

شب سی تاریکی سرِ شام ہے کیوں,دل مرا ڈوب گیا، کیا کیجے

محمد امین قریشی۔...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, November 16, 2011 - 20:29
پاکستان بلاگ ایوارڈز2011 کا انعقاد ہورہا ہے اور مقابلہ جاری ہے جس میں میرا اردوبلاگ "دانش نامہ" بھی نامزد ہوا ہے آپ تمام دوستوں سے گزارش ہے کہ آپ مجھے ووٹ دیں اور مجھےاس مقابلے میں کامیاب بنائیں۔
اگر آپ میرے بلاگ کو بطور بہترین اردو بلاگ کا ووٹ دینا چاہیں تو یہاں کلک کریں اور کھلنے والے صفحہ پر موجود ستاروں کے ذریعے اپنی پسندیدگی کا اظہار کریں۔

...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, November 14, 2011 - 20:43
مصنف: عرفانیات
مڑے ہوئے پتوں پہ
بوندوں کی کھنک۔۔۔
زیروبم،
لاجونتی،
مدھ بھری،
ارغوانی زندگی۔

زندگی۔۔۔
تتلی،
ترنگ،
سوہنی
سہانی زندگی۔
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, November 13, 2011 - 12:56
مصنف: محمد اسد

(گزشتہ سے پیوستہ)

ورکشاپ کا دوسرا روز بڑا اہم اور دلچسپ تھا کیوں اس دن پینل ڈسکشن میں ایکسپریس ٹریبیون کے مدیران جہانزیب حق اور فاریہ سید کے ساتھ ساتھ ڈان ڈاٹ کام کی سمیرا ججہ نے بھی حصہ لیا۔ ان کے علاوہ سوشل میڈیا کی دو معروف شخصیات عواب علوی اور...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, November 11, 2011 - 11:22
رات کی تاریکی میں سڑک کے کنارے کھمبے پر لگے بلب کی تیز پیلی روشنی میں  اس کے سائے کا قد اس کے اصل قد سے کئی گنا بڑھ چکا تھا لیکن جیسے ہی وہ روشنی سے دور ہوتا گیا اس کے سائے کا قد گھٹتا گیا حتی کہ اندھیرے میں پہنچ کر اس کے قد کا سایا ہی نہ رہا۔بلاامتیازhttp://www.blogger.com/profile/01265011304348792367noreply@blogger.com6
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, November 10, 2011 - 11:11
ہاسٹل میں ہمارے وارڈن صاحب حو کہ اردو ڈیپارٹمنٹ کے ہیڈ بھی تھے ان سے کافی علیک سلیک ہو گئی اس کی ابتداء یوں ہوئی کہ جب سٹڈی آور میں وہ کمروں کا چکر لگانے آیا کرتے تو میں لمبی تان کر سو رہا ہوتا لیکن بلکل کمرے کے دروازے کے سامنے میز پر ایک شاعری کی کتاب رکھ دیا کرتا وہ دروازہ کھول کر مجھے سویا دیکھتے اور کتاب اٹھا کر لے جاتے آگلے دن کتاب واپس لے آتے ۔ میں اپنی دانست میں ان کو یہ رشوت دیا کرتا ، بلاامتیازhttp://www.blogger.com/profile/01265011304348792367noreply@blogger.com8
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, November 9, 2011 - 19:58
مصنف: کاشف نصیر
کوئی شک نہیں کہ میدان کپتان کے لئے خالی ہے، فضاء ہموار اور نوجوان تیار ہیں، بلکہ اس سے کہیں زیادہ پورا شہری پنجاب، سرحد اور یہاں تک یہ شہر کراچی عمران خان کی جھولی میں گرنے کے لئے بے چین ہے، وجوہات کئی ہیں جن میں ایک یہ کہ قوم بھی کپتان کی طرح […]
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, November 9, 2011 - 11:37
پاکستان کے تعلیمی اداروں میں یہ پڑھایا اور بتایا جاتا ہے کہ علامہ اقبال نےپاکستان کا خواب دیکھا تھا یعنی علامہ اقبال نےپاکستان کا تصورپیش کیا تھا۔ مگرعلامہ اقبال اوپن یونیورسٹی کے ڈگری پروگرام کی کتاب مطالعہ پاکستان کے مطابق علامہ اقبال سے پہلے ہی بہت سے لوگ تصورپاکستان پیش کرچکےتھے۔
مطالعہ پاکستان کی کتاب کے صفحہ نمبر 102 پر یہ الفاظ تحریر ہیں
سن1930ءمیں مسلمانوں میں یہ تصور مقبول ہونے لگا کہ ہندوستان کو ہندواکثریت اور مسلم اکثریت کے صوبوں میں تقسیم کرکےمسلمانوں کیلئےعلحیدہ مملکت ہونی چاہیے ۔اس وقت اس تصورکا برملا اظہار علامہ اقبال کےاس خطبےمیں ہواجوانہوں نے...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, November 9, 2011 - 10:23
 قرآن پاک نے علمائے یہود کی ایک نشانی یہ بتلائی ہے کہ (من الذین ھادوا یحرفون الکلم عن مواضعہ ) یہودیوں میں سے کچھ لوگ ایسے ہیں جو کلام کو اس کے موقعوں سے پھیرتے رہتے ہیں۔ یہود نےاپنی اسی عادت پرنا صرف اپنی  مذہبی کتابوں کو بدل ڈالا، بلکہ اپنے ایجنٹ دوسرے مذاہب میں داخل کرکے ان کی مذہبی کتابوں کو بھی بدلنے کی کوشش کی ۔ چنانچہ  پولس جسے عیسائیت کا بانی کہا جاتا ہے حقیقت میں یہودی تھا، اس نےخود کو عیسائی مخلص باور کروا کر  بائبل اور عیسائی تعلیمات کا حلیہ بگاڑ کر رکھ دیا، عیسائیت  میں تثلیت کا عقیدہ ڈال کر اسے مشرک مذہب بنادیا ، اسی روش پر  یہودیوں نے اسلام کا...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, November 9, 2011 - 00:54

مرغ

دورِ حاضر کے ایک نقاد کے بقول حضرت علامہ اقبالؒ بلاشبہ ایک عظیم شاعر تھے مگران کی ایک بات پر مجھے شدید اعتراض ہے۔ انھوں نے اپنی شاعری میں شاہین نامی ایک فرضی پرندے کا تو بہت زیادہ ذکر کیا ہے جبکہ مرغ نامی ایک عوامی پرندے کو وہ نظرانداز کر گئے۔ شاہین فرضی پرندہ اس لیے کہ یہ پرندہ کبھی ہمارے ملک میں نظر نہیں آیا۔ اس کا ذکر ماضی بعید کی کہانیوں میں یا پھر علامہ اقبالؒ کی شاعری میں ہی ملتا ہے۔ اس کے برعکس مرغ ایک ایسا پرندہ ہے جو...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, November 8, 2011 - 09:23

میں نے کچھ عرصہ قبل سرفراز شاہ قتل کیس کے سلسلے میں ایک مضمون انگریزی میں فیس بک پر لکھا تھا۔ جوں کا توں یہاں پیش کر رہا ہوں۔ بشرطِ موڈ اسے اردو میں ترجمہ کرکے بھی پیش کردوں گا۔ امید ہے معلومات افزاء ہوگا۔

After 2 days of discussion and regrets about the 9th June incident of Clifton, I recognized a fact that besides the inhuman behaviour of security personnel out there, certain facts need to be analysed carefully and sensibly. First of all, individuals from law-enforcing forces should always act with their nerves held. This job is not like guarding a bank or vault, where you...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, November 8, 2011 - 09:16
کوا چلا ہنس کی چال۔۔۔۔(ہماری اردو کی حالتِ زار)محمد امینؔ  قریشیقوموں کی ثقافت، تہذیب اور ترقی میں انکی زبان کا کردار بہت اہمیت کا حامل ہے۔ زبان صرف رابطے ہی کا ذریعہ نہیں ہوتی بلکہ تخلیق و ایجاد اور معاشرے کی روحانی آسودگی (spiritual peace) میں بھی مدد کرتی ہے۔ کہا جاتا ہے کہ آدمی کی سوچ اور خواب اسکی مادری زبان میں ہی ہوتے ہیں، چاہے وہ خواب نیند کے دوران دیکھے جائیں یا جاگتے ہوئے۔ اور یہ بھی کہ تخلیق اور ایجاد (Invention and innovation) ہماری سوچ اور خواب کا ہی نتیجہ ہوتے ہیں۔ تو ہم بلاشبہ یہ بھی کہہ سکتے ہیں کہ تخلیق کے لیے انسان کو اپنی زبان کا مکمل علم ہونا چاہیے۔
ہماری زبان...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, November 8, 2011 - 02:55



(۲۷ اکتوبر ۲۰۱۱ کو رات ڈیڑھ بجے نیند نہ آنے کے سبب کچھ لکھنے کی ٹھانی۔۔اور منتشر سے الفاظ اور خیالات ہیں، امید ہےاحباب اغلاط سے صرفِ نظر کریں گے)

آج طبیعت ٹھیک نہیں تھی سارا دن۔ پچھلے دو دنوں سے انگلی کا کنارا اندرونی طور پر پک رہا ہے اور شدید دھوپ میں بائک کا سفر۔ آج صدرِ مملکت یا وزیرِ اعظم کے قافلے کی وجہ سے شاہراہِ فیصل کچھ دیر کو بند تھی اور اتفاق سے ہمیں بھی وہیں سے گزرنا تھا سڑی بسی دوپہر میں۔

اس تکلیف اور دھوپ کی شدت نے گھر آنے کے بعد بھی بے چین کیے رکھا۔ آدھی رات کے وقت 3 گھنٹے سے سونے کی کوشش کرتے ہوئے خیال آیا کہ منتشر خیالات کو جمع ہی کرلیا...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, November 7, 2011 - 10:54

بسم اللہ الرحمٰن الرحیم
السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ۔
میری طرف سے آپ کو اور آپ کے اہل خانہ بمعہ دوستوں کو عید مبارک ہو۔  امید ہے کہ آپ سب عید کی خوشیوں کا مزہ لے رہے ہوں گے ۔اللہ کرے کہ ہر ایک ہمیشہ خوش و خرم شاد و باد رہے۔
جو مسلمان حج کے لیے گئے ہیں، اللہ ان کے حج کو قبول فرمائے،ا ور ہمیں بھی اپنے گھر کی زیارت نصیب فرمائے۔
اور جو مسلمان سنت ابراہیمی ادا کر رہے ہیں اللہ ان کی قربانی قبول فرمائے اور ان سے ایک عرض ہے کہ آپ ان مسلمان بھائیوں کا نہ بھولیں جو کہ قربانی کی استطاعت نہیں رکھتے۔جہاں آپ دوست و رشتہ داروں میں گوشت تقسیم کریں وہیں ایک حصہ اپنے ان غریب بہن...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, November 7, 2011 - 02:02
مصنف: نقش بر آب
2004ء میں جب پہلی بار کراچی گیا تھا، تو وہاں کی دیواروں پر ‘جو قائد کا غدار ہے، وہ موت کا حقدار ہے’ لکھا ہوا دیکھ کر کراچی والوں کی قائد اعظم سے محبت پر رشک آیا۔ سوچا، یہ لوگ تو واقعی قائداعظم سے محبت کرتے ہیں۔ وہ تو بعد میں معلوم پڑا کہ وہ […]
زمرہ: اردو بلاگ

Pages

Subscribe to بلاگستان فیڈز