بلاگستان

تاریخ اشاعت: جمعہ, September 14, 2012 - 08:06
مصنف: چراغ شب
یہ نظم ایک شاعر کا احساس ہے۔ ویسے تو یہ نبی کریم کے گستاخانہ خاکوں کی اشاعت کے وقت تخلیق کی گئی تھی لیکن امریکہ میں اسلام اور حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم کی توہین پر مبنی حالیہ متنازعہ فلم منظر عام پر آنے کے بعد یہ  احساس تازہ ہو جاتا ہے۔ شاعر کا نام کوشش کے باوجود نہیں مل سکا۔ ضروری نہیں کہ آپ اس خیال سے مکمل اتفاق رکھتے ہوں۔
یورپ یورپ
نفرت کی دیوار ذرا نیچی تھی شایداور اس چھوٹی سی دیوار کو دیوانوں نے پھاند لیا تھاسر میں سودا لے کرکتنے پاگلاس کی بنیادوں کو توڑ رہے تھےکتنے سوچنے، لکھنے والےاس کی اینٹوں سے اپنا سر پھوڑ رہے تھےپہلے یہ دیوار ذرا نیچی...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, September 13, 2012 - 19:16
بچوں کا استحصال دنیا کے ہر معاشرے کا بنیادی مسئلہ ہے۔ ایک طرف امریکی ریپ سنٹر میں تین اور چار سال کے ان بچوں کا علاج ہو رہا ہے جن کے ساتھ زیادتی کی گئی تھی۔ تو دوسری طرف عامر خان جب ٹی وی پر ایک ایسے شو کا آغاز کرتا ہے جس میں ہندوستان [...]
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, September 13, 2012 - 17:24
تقریباً ۱۰ سال پہلے کی بات ہے ۔ ایک فلپائنی شہری میرے پاس علاج کی غرض سے آیا۔ اس وقت میڈیکل انشورینس لازمی نہیں تھی اور بہت سارے مقیم بغیر انشورنس کے سعودی عرب میں کام کررہے تھے۔ اس وقت میں سعودی عرب نیا نیا آیا تھا اور تعلقات بنانے کی دھن طاری تھی۔ میں […]
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, September 12, 2012 - 19:38
ہمارے اردگرد منکرین حدیث بنام اہل قرآن  کے فتنے سے  نوتعلیم یافتہ جدید و ماڈرن طبقہ ذیاده متاثر نظرآتا ہے  اس کی وجہ یہ ہے کہ یہ  لوگ پڑھنے ،  سننے میں خود کو  کسی حد کے پابند نہیں سمجھتے 'مطالعہ کرنے کا ذوق ہوتا ہے، جس کسی کی کتاب بھی ہاتھ لگ جاتی ہے مطالعہ کرلیتے ہیں۔ اہل باطل کی دینی موضوعات پر بھی کتابیں پڑھنے سے دریغ نہیں کرتے، پھر چونکہ انہوں نے نہ  خود دین کو گہرائی میں کسی استاذ سے پڑھا ہوتا   ہے اور نہ مستند علما اور انکی کتابوں سے انکا کوئی تعلق ہوتا   ہے اس لیے  اہل باطل کے مکر کو سمجھ نہیں سکتے اور  ان کی تحریروں سے...
زمرہ: اردو بلاگ

مولانا ڈیزل اور ان پر لگنے والے الزامات

تاریخ اشاعت: بدھ, September 12, 2012 - 19:19
گذشتہ دنوں ایک مولانا صاحب سے ملاقات ہوئی جو خیر سے مولانا فضل الرحمن کے  پر جوش حمایتی اور  مرید تھے۔ ہماری پھوٹی قسمت کہ باتوں باتوں میں مولانا فضل الرحمن کو مولانا ڈیزل کہہ بیٹھے بلکہ یہ کہنا زیادہ مناسب ہو گا کہ اپنی مصیبت کو آواز دے بیٹھے کہ آ مولانا مجھے مار۔ خیر یہ لقب سننا تھا کہ وہ صاحب جلال میں آ گئے اور پنجے جھاڑ کہ مجھ پہ چڑھ دوڑے اور زور و شور سے مولانا کے حق میں دلائل دینے لگے محمد عبداللہhttps://plus.google.com/102848413842402001777noreply@blogger.com9
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, September 12, 2012 - 11:31
مصنف: محمد وارث
ایک صاحب نے اکبر الہٰ آبادی کو لکھتا۔ " میں صاحبِ ذوق ہوں۔ آپ کی الہامی شاعری کا پرستار اور والہ و شیدا، اتنی استطاعت نہیں کہ آپ کے دیوان یا کلیات کو خرید کر پڑھ سکوں۔ اس لیے ازراہِ علم دوستی اپنے دیوان کی ایک جلد بلا قیمت مرحمت فرما کر ممنون فرمائیے۔"

خط دیکھ کر کہنے لگے۔ " اور سنئے ۔۔۔۔ آج مفت دیوان طلب فرما رہے ہیں، کل فرمائش کریں گے کہ صاحبِ ذوق ہوں، مفت میں " جانکی بائی " کا گانا سنوا دیجیے۔"
-----

ایک مرتبہ اکبر الٰہ آبادی کے دوست نے انہیں ایک ٹوپی دکھائی جس پر قل ہو اللہ کڑھا ہوا تھا۔ آپ نے دیکھتے ہی فرمایا “بھئی عمدہ چیز ہے۔ کسی دعوت میں کھانا ملنے میں دیر...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, September 11, 2012 - 09:41
مصنف: محمد وارث
ریاست جموں و کشمیر، ہندوستان سے ہمارے کرما فرما اور "اردو جاوداں" کے مدیر جناب شیخ خالد کرار صاحب کی ایک غزل۔ انکی مزید شاعری انکی ویب سائٹ "ورود"ربط پر پڑھی جا سکتی ہے۔

یہی دھڑکا مرے پندار سے باندھا ہوا ہے
مرے اثبات کو انکار سے باندھا ہوا ہے

مرے ہاتھوں میں کِیلیں گاڑھ رکھّی ہیں کسی نے
مرے ہی جسم کو دیوار سے باندھا ہوا ہے

یا رستہ دائروں کی قید میں ہے میری خاطر
یا میرے جسم کو پرکار سے باندھا ہوا ہے
...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, September 11, 2012 - 00:22
مصنف: کاشف نصیر
اب وقت آگیا کہ پڑھے لکھے مذہبی طبقے کے درمیان کچھ ایسے موضوعات پر سنجیدہ گفتگو اور ڈائیلاگ کا سلسلہ شروع ہو جن پر دانستہ خاموشی اور چشم پوشی اختیار کرلی گئی ہے، مذہبی طبقے کا یہ رویہ عام اور کم پڑھے لکھے اسلام پسندوں کے لئے جہاں غلط فہمی اور گمراہی کا سبب بن […]
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, September 9, 2012 - 18:59
مصنف: جعفر

زمانہ اتنا خراب ہوگیا ہے کہ میرے جیسے بندے کو سوچ کے پسینہ آنے لگتا ہے۔ ایمانداری، راستبازی، حق پرستی تو عبرانی کی اصطلاحات لگنے لگی ہیں۔ یہ پُرفِتن دور بھی دیکھنا تھا کہ خالص وہسکی بھی منہ مانگے داموں دستیاب نہیں ہوتی۔ اللہ بھلا کرے ڈپلومیٹک انکلیوز والوں کا یا اپنے حسین ایثار کا، اگر یہ دونوں نہ ہوں تو ہم جیسے مسکین پیاسے مر جائیں۔ اوپر سے خرچے اتنے بڑھ گئے ہیں کہ خدا کی پناہ۔ میرے جیسے...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, September 9, 2012 - 12:35
ہم نے یہاں اپنی تحریر میں  محققین  کی تحقیق اور اسم و رجال کے حوالہ سے لکھا کہ   صحابہ کے اختلافی واقعات کی ایسی تمام روایات  جن سے صحابہ کا کردار مجروح ہوتا نظر آتا ہے اور وہ واضح قرآن وحدیث کی صحابہ کے متعلق گواہی اور تفصیل کا بھی  خلاف ہیں '  سبائی راویوں اور دشمنان صحابہ کی اپنی وضع کردہ ہیں ۔ اس کے  ثبوت  میں ہم  ابو مخنف لوط کی تین روایات پر تجزیہ   پیش کررہے ہیں، جس سے ان لوگوں کا مکر اور طریقہ واردات بھی کھل کر سامنے آجائے گا۔
...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, September 9, 2012 - 01:40
کل رات کو ہی پیاچنزہ میں پہنچ گئے تھے، ہوٹل میں کمرہ کمپنی کی طرف سے بک تھا،  خیر جاتے ہیں دھڑام سے گرے اور سو گئے۔ صبح دس بجے میٹنگ کا وقت تھا ، جبکہ میری آنکھ حسب عادت سات بجے سے پہلے ہی کھل گئی، شاید اسکی ایک وجہ یہ بھی تھی کہ کمرے کہ ایئر کنڈیشنر بند ہوچکا تھا اور کھڑکی مکمل بندہونے کی وجہ  پسینہ پسینہ ہوچکا تھا۔
بعد از غسل، ٹائی شائی لگا، جب بوٹوں کے تسمے بند کرنے لگا تو محسوس ہوا کہ لو جی بوٹ کا تلوہ تو اکھڑ گیا ہے،  چلو کوئی بات نہیں،  نیچے  گیا  اور کاؤنٹر سے پتہ کیا کہ کمپنی کا کوئی اور...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, September 7, 2012 - 03:18
میرا اس موضوع پر لکھنے کا قطعاً ارادہ نہیں تھا۔ خواہش یہی ہوتی ہے کہ اس موضوع پر حیا والیاں ہی طبع آزمائی کریں تو بہتر ہے۔ لیکن پھر میں نے ایک ایسی چیز دیکھی جس نے مجھے حیران کردیا اور میں مجبور ہوا کہ دل کی بات کر دوں۔ بہت سے لوگوں کا گمان […]
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, September 6, 2012 - 11:44
مصنف: محمد وارث
رانا سعید دوشی کی ایک خوبصورت غزل

کہاں کسی کی حمایت میں مارا جاؤں گا
میں کم شناس مروّت ميں مارا جاؤں گا

میں مارا جاؤں گا پہلے کسی فسانے میں
پھر اس کے بعد حقیقت میں مارا جاؤں گا

مجھے بتایا ہوا ہے مری چھٹی حس نے
میں اپنے عہدِ خلافت میں مارا جاؤں گا

مرا یہ خون مرے دشمنوں کے سر ہوگا
میں دوستوں کی حراست ميں مارا جاؤں گا

یہاں کمان اٹھانا مری ضرورت ہے
وگرنہ میں بھی شرافت میں مارا جاؤں گا
...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, September 5, 2012 - 11:49
<!--[if gte mso 9]> Normal 0 false false false EN-US X-NONE AR-SA MicrosoftInternetExplorer4 <![endif]--><!--[if gte mso 9]> ...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, September 5, 2012 - 11:37
اسلامی تاریخ  پر لکھی گئی کوئی کتاب  جب کسی مسلمان قاری کے مطالعہ میں آتی ہے تو وہ  قرون اولی اورصحابہ کی زندگی  کے واقعات    کو اسی حسن ظن اور عقیدت کے ساتھ پڑھنا شروع کرتا ہے جو قرآن و حدیث میں  انکے واقعات اور تذکرے پڑھ کر اس کے ذہن میں  بیٹھی ہوتی ہے، لیکن   آہستہ آہستہ جب تاریخ اپنا رنگ دکھانا شروع کرتی ہے  اور وہ صحابہ کے کردار کو مجروح کرنے والی روایات پڑھتا ہے تو پریشان ہو جاتا کہ   یہ کیسے خیرالقرون کا تذکرہ ہے؟قرآن نے تو ہمیں حکم دیاکہ تم  ایمان لانا چاہتے ہو تو ان صحابہ جیسا ایمان لاؤ  تب تمہار ا ایمان قابل...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, September 5, 2012 - 01:31
مصنف: کوثر بیگ




السلام علیکم

میرے عزیز بھائیوں و پیاری بہنوں


بہت دنوں سے بلاگ پر لکھنا ہی نہیں ہورہا تھا وجہہ تھی
عید کی چھٹیوں کے ساتھ اور دس دن چھٹیوں کا اضافہ کرکے بیٹے بہو اور پوتا پوتی ہمارے گھر آئے ہوئے تھے۔ وہ لوگ کیا آئے ایسا لگا جیسےگھر میں نورآگیا ہو، زندگی آگئی ہو ۔ ہر وقت گھر میں خوب گہما گہمی رہتی ۔ رات میں میرے میاں کو دیر تک جاگنا بالکل بھی پسند نہیں اورنہ اب ہم میاں بیوی سے زیادہ دیر بیدار رہا جاتا ہے عادت جو...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, September 5, 2012 - 00:41

عرصہ ہو ا سُستی کے گہرئے سائے ہمارئے دل ودماغ پر چھائے ہوئے تھے۔کمپیوٹر آن کرکے صرف چوہے (ماؤس) سے ہی کام چلانے کی کوشش کرتا تھا ۔کلیدی تختہ کو دور رکھا تھا۔کوئی ایک آدھ بٹن دبانے کیلئے آن سکرین کی بورڈ استعمال کرتا تھا۔
اردو سیارہ پر آنے والے تحاریر کے پڑھنے پر ہی اکتفاء کرتا تھا۔سُستی کا یہ حال تھا کہ اردو سیارہ کے بلاگز پر کمنٹنے کو خواہش پیدا ہو جاتی لیکن نام اور برقی پتہ کا سلسلہ دیکھ کر ہی خواہش ختم ہوجاتی۔


پھر دل کے اندر کے بلاگر نے انگڑائی لی کہ چلو کچھ تو ہمت کرو ۔کب تک صرف پڑھتے رہو گے۔یہ سستی کہیں اکبر بادشاہ والے لَٹوں(سُست درباریوں) میں نام...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, September 4, 2012 - 21:11
مصنف: فراز بیگ

دنیا کا کوئی ملک ایسا نہیں جہاں کسی نہ کسی وقت کوئی پالیسی بحث نہ چل رہی ہو ۔لیکن پاکستان ان ملکوں میں سے ہے جہاں پالیسی بحث حل یا عمل کے لیے نہیں ٹائم پاس اور تفریح کے لیے ہوتی ہے۔ اس وقت بھی ایک بحث چھڑی ہے۔ یہ نہیں کہ ‘خط’ لکھنا ہے کہ نہیں۔ یہ بھی نہیں کہ پانی سے گاڑی چلانے کے لیے کتنے وزیر چاہییں۔ اور یہ تو بالکل نہیں کہ جمہوریت کے ذریعے عوام سے بہترین انتقام لینے کے بعد اگلے 5 سال کیا کرنا ہے۔ وہ بحث جس کا ہم تذکرہ کر رہے ہیں وہ یہ ہے کہ ‘فحاشی’ کیا ہے؟ جی ہاں۔ فحاشی۔ جسے ہم عریانیت یا جنسیت یا بے ہودگی بھی کہہ سکتے ہیں۔ یہ بحث عدالت عظمیٰ کے حکم پر...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, September 4, 2012 - 19:41
عرصہ ہو ا سُستی کے گہرئے سائے ہمارئے دل ودماغ پر چھائے ہوئے تھے۔کمپیوٹر آن کرکے صرف چوہے (ماؤس) سے ہی کام چلانے کی کوشش کرتا تھا ۔کلیدی تختہ کو دور رکھا تھا۔کوئی ایک آدھ بٹن دبانے کیلئے آن سکرین کی بورڈ استعمال کرتا تھا۔ اردو سیارہ پر آنے والے تحاریر کے پڑھنے پر ہی [...]
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, September 4, 2012 - 03:39

لنڈن  میں فرعون کی تلاش فرعون کے ساتھ ہمارا یارا نہ بہت پکا ہے اور پرانا بھی،  کوئی کل کی بات تھوڑی ہے، بلکہ کئی برس گئے جب لنڈن کو سدھارے تھے سنہ 2002 میں،  تو  بھی فرعو ن اور مایا کےلئے اپنی فلائیٹ مس کرنے کی کوشش کربیٹھے،  تب  ہمارا مقصد برٹش میوزیم میں توتن خام صاحب کے سونے کے ماسک کی زیارت کرنا تھا، مگر گورا صاحب نے اسے ہمارے جانے سے چند ماہ قبل ہی قاہرہ میوزیم  روانہ کردیا اور ہم ہاتھ ملتے رہ گئے، کہ خان صاحب اگر چند ماہ پہلے آجاتے ادھر تو کون سی موت پڑنی تھی۔ یہ توتن خامن...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, September 3, 2012 - 02:33
کچھ دنوں سے ادھر فیس بک پر دیکھ رہا ہوں کہ کسی بھی مصری ممی  کی تصویر پکڑ کر اسے فرعون قراد دے کر جاری کردیا جاتا ہے کہ" جی توبہ توبہ ، دیکھا فیر کیا حال ہوا اس ظالم کا"  ، ایک صاحب سے اس موضوع پر بات ہوئی تو انکا کہنا تھا کہ اچھا یہ فرعون نہیں ہے تو پھر کون ہے کہ اس کے منہہ پر بھی لعنت پڑی ہوئی ہے، کوئی پوچھے کہ میاں ہم ایک دن منہہ نہ دھوئیں تو یار لوگ کہہ دیتے ہیں کہ کیا پٹھکار پڑئی ہوئی ہے، یہ بچارہ جانے کون ہے اور کب سے اس کی لاش حنوط شدہ پڑی تھی کسی مقبرے میں، مصر میں لاشوں کو حنوط کرنا اتنا ہی عام ہے جس طرح ہمارے ملک میں زندوں کو ٹھکانے لگانا ، مگر وہ سارے ہی فرعون تو نہ تھے...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, September 2, 2012 - 04:04

پوک Poke آجکل فیس بک پر دائیں ہاتھ   دستیاب ہے،  ویسے تو اسکا کوئی خاص استعمال نہیں مگر فیس بک نے بندے کو بس "ایویں ہی انگل"  دینے کو رکھا ہوا،   کہ  "انگل ای"  ، اٹالیں لوگ اس کام کےلئے  دائیں ہاتھ کی  لمبی والی انگلی کھڑی کرکے باقی اپنی طرف بند کرلیتے ہیں۔ ویسے پرانے لوگ اسے کبیر درجہ کی گالی اور    "منڈے کھونڈے" مطلب "کالجیٹ"  اسے سلام دعا کے طور پر استعمالتے ہیں۔اٹلی کے سابق وزیراعظم  ...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, September 2, 2012 - 03:22
مصنف: محمد اسد

گزشتہ چند سالوں کے دوران ہمارے معاشرے کے تمام طبقات بالخصوص نوجوانوں کے مذہبی رجحانات میں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔ اگر آپ کے پاس موبائل فون ہے یا آپ نے سوشل میڈیا کی کسی معروف ویب سائٹ پر اکاؤنٹ بنایا ہوا ہے تو یقیناً اپنے دوست و احباب کے درمیان رہتے ہوئے قرآنی آیات، احادیث، اقوام زریں اور مختلف اسلامی معلومات کی شیئرنگ میں اضافہ محسوس کیا ہی ہوگا۔

ایک وقت ایسا بھی تھا کہ جب رمضان کے صرف ابتدائی دنوں ہی میں مساجد بھری ہوئی نظر آتی تھیں لیکن آج پورا مہینہ ہی رونق لگی رہتی ہے۔ پہلے معتکفین حضرات اور تراویح پڑھانے والے حافظ صاحبان کو لوگ ناموں سے جانتے تھے اور ان کی تعداد انگلیوں پر گن...

زمرہ: اردو بلاگ

جاؤں کہاں؟؟؟؟

تاریخ اشاعت: سنیچر, September 1, 2012 - 14:50
اے نوع بشر ، کیا تجھ کو خبر توآج یہاں، تو کل ہے کہاں تقدیر کے سارے کھیل ہیں یہ ہے تجھ سا کوئی نادان کہاں تو نے ہر سو نفرت بو دی ہے کانٹے ہیں یہیں، ہیں پھول کہاں تو  بدبو کا  سوداگر  ہے خوشبو کا تاجر گیا کہاں خود غرضی ہر سو پھیلی ہے بے غرضی کا ہے گزر کہاں قانون یہاں جنگل کا ہے انصاف کا ہے دستور کہاں منصف بھی اب کے ظالم ہیں میں لے جاؤں فریاد کہاں انصاف یہاں پر بکتامحمد عبداللہhttps://plus.google.com/102848413842402001777noreply@blogger.com0
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, September 1, 2012 - 00:00
The old man and the sea by Ernest Hemingway ارنسٹ ہمنگ وے کے مشہور ناول کا اردو ترجمہ “بوڑھا اور سمندر” کے نام سے ابن سلیم نے کیا ہے۔۔۔ یہ ناول مصنف کا بہترین ناول شمار کیا جاتا ہے جس … پڑھنا جاری رکھیں→
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, August 29, 2012 - 17:04
غزل

میرے ہونے میں کسی طور تو شامل ہو جاؤ
تم مسیحا نہیں ہوتے ہو تو قاتل ہو جاؤ

دشت سے دُور بھی کیا رنگ دکھاتا ہے جنوں
دیکھنا ہے تو کسی شہر میں داخل ہو جاؤ

جس پہ ہوتا ہی نہیں خونِ دو عالم ثابت
بڑھ کے اک دن اسی گردن میں حمائل ہو جاؤ

وہ ستم گر تمھیں تسخیر کیا چاہتا ہے
خاک بن جاؤ اور اس شخص کو حاصل ہو جاؤ

عشق کیا کارِ ہوس بھی کوئی آسان نہیں
خیر سے پہلے اسی کام کے قابل ہو جاؤ

ابھی پیکر ہی جلا ہے تو یہ عالم ہے میاں
آگ یہ روح میں لگ جائے تو کامل ہو جاؤ

میں ہوں یا موجِ فنا اور یہاں کوئی نہیں...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, August 29, 2012 - 03:57
مصنف: فراز بیگ

بل  اورائلی کا طریقہ بہت سیدھا ہے۔ جو بھی بات وہ منوانا چاہتا ہے وہ  ڈنکے کی چوٹ پر کہتا ہے اور اس کے لیے صحیح یا غلط کوئی بھی دلائل دیتا ہے۔ اس کے ان دلائل کو جو رد کرتا ہے اس کو موصوف سخت سست سناتے ہیں۔ اورائلی اپنے مخالفین کو جاہل اور بےوقوف ثابت کرنے کی پوری کوشش کرتا  نظر آتا ہے   اور مد مقابل کو دلائل کی بجائے آواز سے زیر کرنے کی کوشش کرتا ہے۔ اگر کہیں اس کو ہزیمت کا سامنا کرنا پڑتا ہے تو  فوراً پینترا بدل کر مخالف کے کسی نازک پہلو کو نشانہ بناتا ہے اوراس کو زیر کر لیتا ہے۔ ‘احمق اور محب وطن’ نامی کتاب کے مصنف کا فاکس نیوز پر چلنے والا  پروگرام  ‘او رائلی...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, August 28, 2012 - 12:49
لوجی گرمیاں ختم اور موسم خزاں کے پہلے جھونکے شروع،  کل پرسوں سے ہی ٹھنڈی ہوا چل رہی تھی ،  کل ہم نے پنکھے بند کردیے اور آج رات کو حسب معمول بغیر چادر کے سوئے، صبح جسم اکڑا ہوا تھا،  پس سحری کےوقت چادر لی تو دو تین گھنٹے بعد جسم تھوڑا گرم ہوا مگر ابھی تک  دکھ رہا ہے، گویا کسی نے خوب دھن دھنا دھن کرکے ہمارے دھنائی کی ہو۔ پاکستان فون کیا تو پھوپھو کہہ رہی تھیں پتر تیرا تو گلا خراب ہویا ہوا ہے،  بس کالی پتی کے قہوہ میں کالی مرچیں ڈال کے پی لینا  اور انڈا ابال کر کھا لینا۔ اب انکو کون بتائے کہ بزرگو انڈا ابال کر کھالیا تو یورک ایسڈ کے بڑھ جانے سے جو درد ہوگی وہ کون...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, August 28, 2012 - 10:13

کبھی کبھی دل چاہتا ہے اس دنیا سے کہیں بھاگ جاؤں یا کم از کم ایسی جگہ جہاں کوئی جاننے والا نہیں ہو کہ جاننے والے سب کچھ جان کر بھی کچھ نہیں جانتے۔ اجنبی اس لئے اچھے نہیں ہوتے کہ وہ اجنبی ہوتے ہیں بلکہ وہ صرف اس لئے اچھے ہوتے ہیں کہ اُنہیں آپ سے کوئی سروکار نہیں ہوتا۔ لیکن دل کا کیا کہیے صاحب، دل تو دل ہے اسے کون سمجھا سکتا ہے، اسے تڑپتے رہنے دینا چاہیے تاکہ اسے بھی کچھ سکون ملے اور آپ کو بھی۔
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, August 27, 2012 - 16:27

چھوتدار مرض ہے'بچنے کیلئے احتیاطی تدابیر اختیار کریں:کونسل آف ہربل فزیشنز پاکستانلاہور:وطن عزیزمیںبرسات 'لوڈ شیڈنگ'شدید گرمی'حبس اور پسینے کی زیادتی کی وجہ سے لاہور سمیت دیگرکئی شہر وںمیںبھی آشوب چشم کی وبا پھیل گئی ہے۔ متاثر ہونے والوں میں بچے' بڑے'مرد اور خواتین شامل ہیں۔اس سلسلے میں مرکزی سیکرٹری جنرل کونسل آف...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, August 27, 2012 - 03:52
ملک یونان سے ہماری واقفیت مرحلہ وار ہوئی تو اس کو اسی تربیت سے بیان کیا جاتا ہے 

حکیم محمد یوسف  (یونانی) یونا ن سے ہمارا واسطہ حکیم محمدیوسف  (یونانی)  آئمہ پٹھاناں والے کے مطب پر لکھی تختی سے ہی ہوتا تھا، ادھر بھی ہمارا جانا تب ہی ہوتا جب بھینسیں گم ہوجاتیں اور ہماری ڈیوٹی ادھر شمال کو ڈھونڈنے  کی ہوتی، گزرتے ہوئے اگر حکیم صاحب جو نہایت نیک صورت و سیرت بزرگ تھے  باہر سڑک پر دھوپ سینکتے نظر آجاتے ،   تو ان سے پوچھ لیتے کہ حکیم صاحب سلام، کہیں آپ نے ہماری مجھیں تو ادھر جاتی نہیں دیکھیں، باوجود اس کے کہ ہمیں انکا جواب معلوم ہوتا کہ...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, August 26, 2012 - 11:08
اردو بلاگنگ کے جتنے چاچے مامے ہیں ان سے آج ایک سوال ہے کہ اردو بلاگنگ کا مقصد کیا ہے...
کیا اردو بلاگنگ کا مقصد صرف ایک دوسرے کی بینڈ بجانا ہے یا پھر صرف دوسروں کی پیروڈی کرنا ہے..

اگر کسی انسان کو اللہ نے کوئی صلاحییت دی ہے تو اسکو مثبت راستے پر استعمال کریں اور خاص کر اس وقت جب آپ کو خود یہ پتہ ہو کہ ایک جم غفیر ہوتا ہے جو آپکی بلاگ پوسٹ کا شدد سے انتظار کررہا ہوتا ہے.. تو کیوں نہ اس بات کا فائدہ اٹھا کر کچھ ایسا تعمیری اور تربیتی لکھا جائے کہ اس سے پڑھنے والا اثر لے , قاری کی سوچ تبدیل ہو اگر وہ منفی زہن رکھتا ہو تو مثبت ہوجائے, اگر قاری آپکی تحریر صرف پڑھتا ہے اور اس پر...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, August 25, 2012 - 18:34
مصنف: جعفر

میں جب بھی ٹینشن کا شکار ہوتا ہوں۔ڈپریشن،  میرا میٹر گھمانےلگتا ہے۔ میرے دماغی پُرزے ورک فٹیگ  سے  ڈھیلے پڑنے لگتے ہیں۔ میری شوگر ہائی اور وائٹیلٹی لَو  ہونے لگتی ہے۔ تومیں سب کچھ چھوڑ چھاڑ کر بیرون ملک ٹور پر نکل جاتا ہوں۔ یہ نسخہ مجھے میرے مرشد نے عنایت کیا  تھا۔ یہ کہتے ہیں کہ جب بھی زندگی میں آپ ڈاؤن فِیل کرنے لگیں، آپ کی قُوت کم ہونے لگے، آپ کی صلاحتییں ،  سلاجیت مانگنے لگیں تو  فورا  بیوی اور کا م سے دور بھاگ جائیں۔...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, August 25, 2012 - 10:53
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, August 23, 2012 - 16:36

علی حسن  کا سوال: سلام بھائی جان ۔آپ سے دو باتیں پوچھنی تھیں،آپ پڑھے لکھے ہیں، کافی عرصہ سے یورپ میں رہ رہےہیں یہ بتائیں یہ خوراک میں حلال حرام کا کیسے خیال کیا جائے؟ چلو گوشت سے بچا جا سکتا لیکن لوگ تو کہتے ہیں دودھ تک حرام آ سکتا ہے، اب یہاں ایسٹونیا یا پولینڈ میں کیا کیا جائے اب زندہ تو رہنا ہے میں دودھ، ڈبل روٹی، میٹھے کیک وغیرہ میں بس سئور اور شراب کا دیکھ کر لے لیتا ہوں۔ میکڈونلڈ سے فش 
برگر مجبوری میں کھا لیتا ہوں لیکن ان کا تیل۔۔۔بس دل میں رہتا ہے کہ یار کیا کریں۔ کوئی مشورہ عنیایت کریں۔...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, August 21, 2012 - 15:23
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, August 20, 2012 - 21:52
السلام و علیکم! آج عید کا دن تھا۔ میری طرف سے آپ سب کو عید مبارک۔ اللہ سب کی رمضان کی عبادات قبول فرمائے اور جو میرے جیسے ہیں ان کو اپنی عبادت اور تزکیہ نفس کی توفیق دے۔آج میں نے دو نمازیں ادا کیں جو اذان کے بغیر ہوتی ہیں۔ ایک تو نمازِ عید اور دوسری نمازِ جنازہ۔ ساتھ والے گاؤں میں ایک بزرگ عین نمازِعید ادا کرنے کے وقت دل کا...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, August 19, 2012 - 23:13
مصنف: کوثر بیگ

السلام علیکم

میرے عزیز بھائیوں و پیاری بہنوں

میری طرف سےعید کی پر خلوص مبارک باد پیش ہے ۔

میں خود نہیں جانتی تھی کہ میں اپنی مصروفیت میں سے کسی نہ کسی طرح وقت نکل کر یہاں بلاگ پر آ سکوں گی مگر وہ سچ ہی کہتے ہیں جہاں چاہ ہوتی ہے وہاں رہ  ہوتی ہے میں یہ مبارک باد دینے سے پہلے سوچ رہی تھی کہ یہ رشتہ بھی کتنا عجب ہےجو انجانےان دیکھے اور شاید کئی حضرات کے تو نام بھی اصلی نہیں جانتی ہونگی مگر پھر بھی وہ  دل سے بہت قریب ہیں  جو میری دعاؤں میں شامل ہیں ۔ جنہیں نہ دیکھ کر بھی پہچانتی ہوں  نہ جان کر...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, August 19, 2012 - 06:40
پاکستان، مبارک، خوشی، رمضان، روزے، احساس، تہوار، عہد
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, August 16, 2012 - 21:51
مصنف: ابو شامل

جب سے اردو پر انگریزی زبان کا اثر و رسوخ بڑھا ہے، ایک مطالبہ بڑی شد و مد کے ساتھ کیا جاتا رہا ہے کہ اردو کا رسم الخط عربی سے بدل کر لاطینی یا رومن کر دیا جائے۔ مثالیں ترکی کی دی جاتی ہیں جس نے خلافت عثمانیہ کے خاتمے کے بعد مصطفیٰ کمال اتاترک کی حکومت کے دوران عربی رسم الخط کو موقوف کر کے نہ صرف ترکی زبان کو لاطینی رسم الخط کی جانب منتقل کیا بلکہ بڑے پیمانے پر زبان کی ‘تطہیر’ کا آغاز بھی کیا اور اس کو عربی و فارسی کی آمیزش سے “پاک” کردیا۔

...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, August 16, 2012 - 16:13
مصنف: فیصلیات
صاحبو اگر آپ بھی بندہ ناچیز کی طرح مفت خورے یا کنجوس ہیں تو یہ خبر آپکے اچھی ہے، گرچہ شائد نئی نہ ہو۔ ویسے تو کاپی رائٹ سے باہر کتابیں آپکو بہت سی سائیٹس پر مل جائیں گی لیکن عموماً یہ سب کتابیں نہایت پرانی ہوتی ہیں اور ان میں سے بہت سی شاید زمانہ […]
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, August 16, 2012 - 14:03
لو جی اقبال کی نظم شکوہ کا شعر حاضر ہے:۔روزِ حشر میں بے خوف گھس جاؤں گا جنت میںوہاں سے آئے تھے آدم وہ میرے باپ کا گھر ہے۔اور جوابِ شکوہ میں اس کا جواب یوں دیا گیا:۔ان اعمال کے ساتھ تو جنت کا طلب گار کیا ہے؟وہاں سے نکالے گئے تھے آدم تو تیری اوقات کیا ہے؟اجی حیران کیوں ہو رہے ہیں؟ کیوں آپ کو یہ شعر اقبال کا نہیں لگتا؟ مجھے بھی نہیں لگتا کیوں کہ بدقسمتی سے میں نے شکوہ اور جوابِ شکوہ پڑھ رکھی ہے۔ پہلے تو میں ذرا ٹھٹکا کہ ہو سکتا ہے کہ میری یادداشت کمزور پڑ گئی ہویا علامہ اقبال کا کوئی نادر ذخیرہ منظرِ عام پر آگیا ہو اور یہ شعر اقبال کا ہی ہو ۔مگر یہ اندازِتکلم اقبال کا تو نہیں !...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, August 16, 2012 - 13:14
غزل

مفقود جہاں تھے سبھی آثارِ فضیلت
واں ناز سے باندھی گئی دستارِ فضیلت

میں سادہ روش بات نہ سمجھا سکا اُن کو
حائل تھی کہیں بیچ میں دیوارِ فضیلت

کردار ہی جب اُس کے موافق نہ اگر ہو
کس کام کی ہے آپ کی گفتارِ فضیلت

آؤ کہ گلی کوچوں میں بیٹھیں، کریں باتیں
دربارِ فضیلت میں ہے آزارِ فضیلت

اب صوفی و مُلا بھی ہیں بازار کی رونق
اب سجنے لگے جا بجا بازارِ فضیلت

آیا ہے عجب زہد فروشی کا زمانہ
رائج ہوئے ہیں درہم و دینارِ فضیلت

آنکھوں میں ریا، ہونٹوں پہ مسکان سجائے
ملتے ہیں کئی ایک اداکارِ فضیلت...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, August 15, 2012 - 20:50
ہممم ۔۔۔ کہاں سے بات شروع کروں۔ ۔۔۔ حب الوطنی۔۔۔بے ترتیبی میرا طرۂ امتیاز ہے۔ سو یہ تحریر بے ترتیب اور بے ربط ہی سہی۔ ربط (رطب؟؟) تلاش کرنا قاری کے ذمے، دروغ برگردنِ راوی ہی سہی۔ملک کیا ہے؟ وطن کیا ہے؟ قوم کیا ہے؟ ملت کیا ہے؟ گھر کیا ہے؟ خاندان کیا ہے؟ میں کیا ہوں؟کئی برس بیت گئے مجھے یومِ آزادی منائے ہوئے۔ جس گھر کی خاطر اجداد نے گردنیں کٹوادیں اس گھر کی تشکیل کا جشن اور خوشیاں منائے ہوئے۔۔۔مگر۔۔۔ترانے اب بھی میری روح میں سرشاری گھول دیتے ہیں۔۔۔مگر۔۔۔اب بھی میری ریڑھ کی ہڈی میں سرد لہر دوڑ جاتی ہے، جب میں وطن کی محبت سے بھرپور نغمات، منظومات اور تقاریر سنتا ہوں۔۔کچھ ہے۔۔۔ جو خون میں...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, August 14, 2012 - 18:25

بہت عرصہ ہوا بلاگ پر کچھ لکھے ہوئے، ایک طویل غیر حاضری کے بعد واپس آنا عجیب لگ رہا ہے، الفاظ ساتھ نہیں دے رہے کہ کیا لکھوں، ایسا ہی معاملہ اس وقت ہوا تھا جب مجھے معلوم ہوا کہ اخبار میں کسی کےمتعلق لکھنا کوئی خالہ جی کا گھر نہیں‌ہے لینے کے دینے بھی پڑسکتے ہیں۔ پھر اخبار میں لکھنا میرے لیے ممکن نہ رہا، چند ماہ سے میں سیاست کے موضوع پر لکھنا چاہ رہا ہوں‌ لیکن مجھے معلوم ہے کہ ہمارے دوست اسے پسند نہ کریں گے اور بوریت کا اظہار کریں گے۔
یہ چند ماہ اسی مخمصے کی نذر ہوگئے اور غیر حاضری طویل ہوتی گئی۔
بہرحال آپ سب بھائیوں اور بہنوں کو جشن آزادی مبارک ہو، اس دعا کے ساتھ اجازت چاہوں گا کہ...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, August 14, 2012 - 15:56

جشنِ آزادی مبارک 
اُن تمام دوستوں کو جو پاکستان سے محبت کرتے ہیں اور محنت اور ترقی کی راہیں اپنا کر اس ملک کا وقار بلند کر رہے ہیں اور اُنہیں بھی جو پاکستان سے خائف ہیں اور اپنی ترقی کی راہ میں پاکستان کو رکاوٹ سمجھتے ہیں اور ہمیشہ شکایتیں ہی کرتے نظر آتے ہیں۔
ایسے لوگوں کو ہم کچھ نہیں کہیں گے کہ احمد فراز پہلے ہی کہہ چکے ہیں:
شکوہِ ظلمتِ شب سے تو کہیں بہتر تھااپنے حصے کی کوئی شمع جلاتے جاتے
ایک نغمہ آپ سب کی نذر

زمرہ: اردو بلاگ

مجرم میں ہوں

تاریخ اشاعت: منگل, August 14, 2012 - 15:27
پاکستان بنے ہوئے 65 برس بیت گئے۔ آج جب میں خود سے سوال کرتا ہوں کہ کیا یہ وہی پاکستان ہے جو 65 سال پہلے بنایا گیا تھا؟ جواب میں دل سے ایک درد بھری آہ نکلتی ہے کہ وہ پاکستان اب رہا  ہی کہاں۔ اسکی شکل ، ہیئت اور جغرافیہ تک بدل گیا ہے۔ محبتوں کی گرمی کی جگہ نفرت کی آگ نے لے لی ہے 65 سال پہلے والا جذبہ اب کہیں نظر نہیں آتا۔ اس پر ہماری نا اہلی کی انتہا یہ پاکستان اپنی تخلیق کے صرف 21 برس بعد محمد عبداللہhttps://plus.google.com/102848413842402001777noreply@blogger.com10
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, August 14, 2012 - 05:07

http://marajput.tk/files/Jashn-Azadi-Pakistan.jpg

بسم اللہ الرحمن الرحیم
السلام علیکم ورحمتہ اللہ
آج میں آپ کو کچھ یاد دلانا چاہونگااور کچھ دکھانا بھی چاہونگا ایک ملی نغمہ آپ دوستوں کے ساتھ شئیر کر رہا ہوں اس کی ویڈیو میں آپ بچوں کا جوش اور جذبہ دیکھیں اور پھر اپنے بچپن میں جائیں یقیناً یہی جوش، جذبہ اور ولولہ ہوتا تھا اسی طرح سے جھنڈا پکڑ کر گلیوں میں دوڑنا اور اپنے گھر اور گلیوں کو شوق سے سجاتے تھے خوشی سے ملی نغمے گاتےلیکن اب یہ سب کچھ کہاں کھو گیا؟
کیا یہ سب اس لئے ختم ہو...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, August 13, 2012 - 20:46

چودہ اگست 1947ء سے قبل بلاواسطہ ہم انگریز کے تسلط میں  تھے اور اب 14 اگست 2012ء کو ہم بزدل حکمرانوں کی بدولت بالواسطہ بیرونی آقاؤں کی غلامی میں ہیں کیونکہ ہم اپنی داخلہ ، خارجہ پالیسی میں کسی بھی طرح آزاد و خود مختار نہیں ۔۔۔۔۔۔۔۔ موجودہ غلامی براہ راست غلامی سے بھی...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, August 13, 2012 - 12:46
کوتوال:۔یہ لفظ فارسی کا ہے جس کے معنی ہیں “قلعہ کا محافظ”۔ لیکن یہ سنسکرت سے فارسی میں داخل ہوا ہے۔ سنسکرت میں اس کی اصل “کوٹَّ پال” ہے۔ “کوٹَّ” کے معنی قلعہ کے ہیں اور “پال” کے معنی ہیں “رکھوالا”۔ جیسے راجکوٹ، بالا کوٹ، عمر کوٹ اور سیالکوٹ وغیرہ۔یہ لفظ برِ صغیر کے باہر بھی پایا جاتا ہے۔ فلپین کے...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, August 13, 2012 - 06:32
پاکستان، یوم آژای، 14 اگست 1947، ترقی،کامرانی، قوم، خوشیاں، پائندہ باد
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, August 12, 2012 - 16:11
مصنف: وسیم بیگ

میں پاکستان جا کر مرنا چاہتا  ہوں یہ لفظ تھے بارسلونا سپین میں مقیم ایک پاکستانی نام ارشاد احمد چٹھہ جوپاکستان کے شہر گجرات سے ملحقہ گاوں (گورالی ) کا رہائشی تھا اور ایک سال قبل سیر کرنے سپین آیا اورسانس اور پھیپھڑوں کی بیماری میں مبتلا ہو گیا علاج کے باوجود بیماری بڑھتی گئی اور ایک دن ڈاکٹرز نے کہا کہ ہم اس سے زیادہ کچھ نہیں کر سکتے جواب سننے کے بعد ارشاد احمد چٹھہ نے پاکستان جانے کی کوششیں تیز کردیں ٹکٹ کروایا اور پی آئی اے کے...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, August 11, 2012 - 17:08

ماضی قریب میں تاریخی و تجارتی اعتبار سے انتہائی اہمیت کی حامل گریز وادی اپنے وجود کیلئے ارباب اختیار کے سامنے دامن پھیلائے ہوئے ہے۔ گریز جو آج کل کشن گنگا پن بجلی پروجیکٹ کی وجہ سے ہندوپاک میں ہی نہیں بلکہ ریاست کے سیاسی اور صحافتی حلقوں میں موضوعِ بحث بن چکاہے ،اپنی منفرد شناخت کے آخری پڑاؤ پر ہے ۔گریز کی گرد آلود سڑکوں پر اگر کچھ نظر...

زمرہ: اردو بلاگ

فورٹ ولیم کالج

تاریخ اشاعت: جمعہ, August 10, 2012 - 23:37
فورٹ ولیم کالج کا قیام اردو ادب کی تاریخ میں ایک اہم واقعہ ہے۔ اردو نثر کی تاریخ میں خصوصاً یہ کالج سنگ میل کی حیثیت رکھتا ہے۔ اگرچہ کالج انگریزوں کی سیاسی مصلحتوں کے تحت عمل میں آیا تھا ۔ تاہم اس کالج نے اردو زبان کے نثری ادب کی ترقی کے لئے نئی راہیں کھول دیں تھیں۔ سر زمین پاک و ہند میں فورٹ ولیم کالج مغربی طرز کا پہلا تعلیمی ادارہ تھا جو لارڈ ولزلی کے حکم پر 1800ءمیں قائم کیا گیاتھا۔ اس wahab ijazhttps://plus.google.com/108810020715170166715noreply@blogger.com1
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, August 10, 2012 - 07:34
تحریک انصاف، پاکستان، مسلم لیگ، نواز گروپ، نواز شریف، عمران خان، سیاست
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, August 10, 2012 - 00:00
بری عورت کی کتھا از کشور ناہید یہ حالیہ تازہ ترین کتاب ہے جو میں نے پڑھی ہے۔۔۔ یہ کشور ناہید کی اپنی آپ بیتی ہے لیکن اس کو انہوں نے کہانی سے زیادہ فلسفے کے انداز میں لکھا ہے … پڑھنا جاری رکھیں→
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, August 8, 2012 - 17:28

گریز ایک حسین وادی ہے جو اپنے قدرتی حسن کے باعث انتہائی اہمیت کی حامل ہے۔ یہ وادی ریاست جموں وکشمیر کے شمالی ضلع بانڈی پورہ کی ایک تحصیل ہے۔ دریائے کشن گنگا اس وادی کے قلب میں بہتا ہے۔ یہ وادی ریاست کی گرمائی راجدھانی سرینگر سے 123کلومیٹر دوراور سطح سمندر سے 8ہزار فٹ کی بلندی پر اونچے ہمالیائی سلسلے میں واقع ہے ۔ یہاں کی آبادی کشمیری...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, August 8, 2012 - 10:15
پاکستان کا مطلب کیا؟
لا الہ الا اللہ
شب ظلمت میں گزاری ہے
اٹھ وقت بیداری ہے
جنگ شجاعت جاری ہے
آتش و آہن سے لڑ جا
پاکستان کا مطلب کیا
لا الہ الا اللہ
ہادی و رہبر سرور دیں
صاحب علم و عزم و یقیں
قرآن کی مانند حسیں
احمد مرسل صلی علی
مکمل تحریر پڑھیے
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, August 7, 2012 - 21:56
مصنف: وسیم بیگ

بسم اللہ الرحمن الرحیم
السلام علیکم!
دکھ پردیساں دے آج ایک ایسے پردیسی بھائی سے ملاقات ہوئی جس کا دکھ سن کر میں یہ پوسٹ لکھنے پر مجبور ہوا
پاکستان میں لوگ سمجھتے ہیں کہ پردیس جا کر کام کرنے والوں کی زندگی بہت حسین ہوتی ہے
ایسا کچھ بھی نہیں ہے. اکثر وہ بیچارے خود اکیلے اور دکھی رہے کر اپنے گھر والوں کی زندگی آسان کرنا چاہتے ہے
کبھی ان کی جگہ اپنے آپ کو رکھ کر دیکھئے تو اس قید تنہائی کا اندازہ ہو گا آپ کو
خدارا ان کو...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, August 7, 2012 - 16:51

 

گریز وادی کو وسطی ایشیاء سے کم وبیش 6شاہراہیں ملاتی تھیں ۔1947ء کے بعد وہ سب راستے بند کئے گئے اورگریزکا وسطی ایشیاء تو دور وادی کشمیر سے بھی 6ماہ ہی سڑک رابطہ رہتا ہے۔شمالی کشمیر کے بانڈی پورہ ضلع صدر مقام سے86اور سرینگرسے123کلومیٹر کی دوری اورسطح سمندر سے8ہزار فٹ کی بلندی پر اونچے ہمالیائی سلسلے میں واقع یہ وادی چاروں...

زمرہ: اردو بلاگ

Pages

Subscribe to بلاگستان فیڈز