بلاگستان

تاریخ اشاعت: بدھ, December 20, 2017 - 23:19
لو آج کی شب بھی سو چکے ہم
شہر اقتدار سے دانہ پانی اٹھنے کے بعد ہم نے زندہ دلوں کے شہر کا رخ کیا۔ جس دوست کو بھی یہ خبر سنائی، اس نے قہقہہ لگا کر ایک ہی بات کی۔ “جتھے دی کھوتی اوتھے آن کھلوتی”۔ ان دنوں دو باتوں پر ہماری زبان سے ہر وقت شکر ادا ہوتا تھا۔ ایک کہ یہ محاورہ مذکر نہیں۔ دوسرا اہلِ زبان اس میں مذکر کے لیے کچھ مناسب ترامیم کا ارادہ نہیں رکھتے۔ نئی ملازمت میں آتے ہی پتا چلا کہ شام کو آنا ہے۔ اور صبح سویرے منہ اندھیرے جانا ہے۔ چند دن گزارے...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, December 20, 2017 - 22:22
مصنف: شعیب صفدر

یہ ابتدائی وکالت بلکہ وکالت کے پہلے چھ ماہ کے دور کی بات ہے ہمارے ایک دوست ایک فوجداری کیس میں پھنس گ...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, December 20, 2017 - 16:34
مصنف: نوک جوک

...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, December 20, 2017 - 16:31
مصنف: کچھ دل سے
~!~ آج کی بات ~!~
ایک کونے میں زبان کٹے، گونگے اور بہرے کی طرح بیٹھ جانا...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, December 19, 2017 - 17:50
مصنف: کچھ دل سے
~!~آج کی بات ~!~
جس روز مجھے یہ یقین ہو گیا کہ در کھولنا مخلوق کی قدرت سکت...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, December 19, 2017 - 16:31
مصنف: بلاگ اے
ہمارے یا کسی بھی ترقی پذیر معاشرے میں آرٹ یا فنون لطیفہ کو لوگوں کی بڑی تعداد کی طرف سے سراہا نہیں جاتا، عوام کا زیادہ دھیان زندہ رہنے میں ہی لگا رہتا ہے۔
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, December 19, 2017 - 15:41
مصنف: کچھ دل سے

یہ مکہ کی فضا ہے
میری قسمت مجھے اللہ نے دکھلا دیا کعبہمیری قسمت مجھے اللہ نے دکھلا دیا کعبہ
یہ مکہ کی فضا اور میں ہوںیہاں دار العطا ہے اور میں ہوں
...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, December 19, 2017 - 11:34

میں آج 2007ء کی تحریر دہرانے پر مجبور ہوا ہوں

اِسے جہالت کہا جائے ہَڈدھرمی کہا جائے یا معاندانہ پروپیگینڈا ؟ میں پچھلے 15 یا 16 سال سے دیکھ رہا ہوں کہ ہمارے ملکی اخباروں میں جب بھی قبلۂِ اوّل یعنی مسجدالاقصٰی کی خبر کے ساتھ تصویر چھاپی جاتی ہے تو وہ مسجد الاقصٰی کی نہیں ہوتی بلکہ قبة الصخراء کی ہوتی ہے ۔ قبة الصخراء کیاہمیت اپنی جگہ لیکن مسلمانوں بیت المقدس یا القدس سے اصل لگاؤ مسجدالاقصٰی کی وجہ سے ہے جو کہ قبله اوّل تھا اور تو اور جماعتِ اِسلامی جو دین اِسلام کی علَم بردار ہے اور جس میں پڑھے لکھے لوگوں کی کافی تعداد شامِل ہے نے پچھلے دِنوں بیت المقدس کے سلسہ میں احتجاج کیا...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, December 19, 2017 - 07:20
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, December 18, 2017 - 23:37

ہر برس ہی گراں گزرتے ہیں
خواہشوں کے نگار خانے میں
کیسے کیسے گماں گزرتے ہیں

رفتگاں کےبکھرتے سالوں کی
ایک محفل سی دل میں سجتی ہے

فون کی ڈائری کے صفحوں سے
کتنے نمبر پکارتے ہیں مجھے
جن سے مربوط بے نوا گھنٹی
اب فقط میرے دل میں بجتی ہے

کس قدر پیارے پیارے ناموں پر
رینگتی بدنما لکیریں سی
میری آنکھوں میں پھیل جاتی ہیں
دوریاں دائرے بناتی ہیں

دھیان کی سیڑھیوں میں کیا کیا عکس
مشعلیں درد کی جلاتے ہیں
ایسے کاغذ پہ پھیل جاتے ہیں

حادثے کے مقام پر جیسے
خون کے سوکھے نشانوں پر
چاک کی لائنیں لگاتے...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, December 18, 2017 - 15:43

میں کیوں لکھتا ہوں ؟ محمد علم اللہ جامعہ ملیہ، دہلیتقریبا ایک سال پہلے کی بات ہے۔ معروف پاکستانی ادیب نعیم بیگ صاحب نے اردو پروگریسیو رائٹنگ فیس بک پیج پرتمام لکھنے والوں سے ایک سوال کیا تھا، کہ وہ کیوں لکھتے ہیں؟ایک بڑے لکھاری یا ادیب کے پاس تو اس سوال کا جواب دینے کے لیے بہت کچھ مواد ہوتا ہے کہ ان کے پاس علم بھی ہوتا ہے اور تجربات بھی اور انھوں نے دنیا دیکھی ہوتی ہے، ایسے جہاں دیدہ افراد اس سوال کے جواب میں اگر کچھ لکھیں تو وہ یقینا ایک کارآمد چیز ہوتی ہے۔ نوآموز قلم کاروں کو ان سے بہت کچھ سیکھنے کو بھی ملتا ہے اور ان کی تحریروں کے آئنے میں خود کو جانچنے پرکھنے کا موقع بھی...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, December 17, 2017 - 12:48

سقوطِ ڈھاکہ پر لکھی گئی۔۔۔امجد اسلام امجد کی نظم
اے زمینِ وطن ہم گنہگار ہیں
ہم نے نظموں میں تیرے چمکتے ہوئے بام و در کے بیتاب قصے لکھےپھول چہروں پہ شبنم سی غزلیں کہیں، خواب آنکھوں کے خوشبو قصیدے لکھےتیرے کھیتوں کی فصلوں کو سونا گنا، تیری گلیوں میں دل کے جریدے لکھےجن کو خود اپنی آنکھوں سے دیکھا نہیں، ہم نے تیری جبیں پر وہ لمحے لکھے
جو تصور کے لشکر میں لڑتے رہے، ہم وہ سالار ہیںہم گنہگار ہیں
اے زمینِ وطن ۔۔۔ ہم گنہگار ہیں
ہم تیرے دکھ سمندر سے غافل رہےتیرے چہرے کی رونق دھواں ہو گئی اور ہم رہینِ غمِ دل رہےظلم کے روبرو لب کشائی نہ کی، اس طرح ظالموں میں بھی شامل...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, December 17, 2017 - 12:10

تحریر  :  اسریٰ غوری

میدان کے عین درمیان میں لکڑی کی سادہ سی میز رکھی ھے جسکے دونوں طرف بھارتی فوج اور سپاہی الگ الگ قطار میں کھڑے ھیں ، میز کے گرد پہلے جنرل اروڑا بیٹھتے ھیں ا

ان کے برابر جنرل نیازی بیٹھ جاتے ھیں ۔ ۔

یہ ان کی زندگی کا سب سے زیادہ ذلّت آمیز لمحہ ھے ، مسّودہ میز پر رکھا ھے ، جنرل نیازی کا ہاتھ آگے بڑھتا ھے اور ان کا قلم مسودے پر اپنے دستخط ثبت کر دیتا ھے ۔۔۔ پاکستان کا پرچم سر زمین ڈھاکہ میں سرنگوں ھو گیا ۔۔ جنرل نیازی اپنا ریوالور کھولتے ھیں اور گولیوں سے خالی کر کے جنرل اروڑا کے ہاتھ میں تھما دیتے ھیں ۔۔ جنرل نیازی کے تمغے اور رینک سر عام اتارے...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, December 16, 2017 - 18:28

میدان کے عین درمیان میں لکڑی کی سادہ سی میز رکھی ہے جس کے دونوں طرف بھارتی فوج اور سپاہی الگ الگ قطار میں کھڑے ہیں، میز کے گرد پہلے جنرل اروڑا بیٹھتے ہیں، ان کے برابر جنرل نیازی بیٹھ جاتے ہیں۔ یہ ان کی زندگی کا سب سے زیادہ ذلّت آمیز لمحہ ہے، مسّودہ میز پر رکھا ہے، جنرل نیازی کا ہاتھ آگے بڑھتا ہے اور ان کا قلم مسودے پر اپنے دستخط ثبت کر دیتا ہے۔ پاکستان کا پرچم سر زمین ڈھاکہ میں سرنگوں ہوگیا۔ جنرل نیازی اپنا ریوالور کھولتے ہیں اور گولیوں سے خالی کر کے جنرل اروڑا کے ہاتھ میں تھما دیتے ہیں۔ جنرل نیازی کے تمغے اور رینک سر عام اتارے جاتے ہیں۔ ہجوم کی طرف سے گالیوں کی بوچھاڑ شروع ہوتی ہے۔ جنرل...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, December 16, 2017 - 17:13
مصنف: کچھ دل سے
~!~ آج کی بات ~!~
" عزت وقتی طور پر ایک “غیر مستحق” کو بھی مل جاتی ہے ،...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, December 16, 2017 - 14:22
. آج سے دو سو برس پیشتر ایک آدمی اچھا مسلمان ہو سکتا تھا اور رہ سکتا تھا خواہ اس نے کبھی امام غزالی اور ابن عربی کا نام بھی نہ سنا ہوتا۔ اس وقت نرا ایمان کافی تھا کیونکہ اس کی حفاظت ہوتی رہتی تھی۔ آج کا مسلمان اگر ان عقائد کے بارے میں…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, December 16, 2017 - 13:37
مصنف: کچھ دل سے
بیت المقدس کی فضیلت اور مسئلے کا حل - خطبہ جمعہ مسجد نبویترجمہ: شفقت الرحمان مغل
فضیلۃ  الشیخ ڈاکٹر جسٹس حسین بن عبد العزیز آل شیخ حفظہ اللہ نے 27-ربیع الاول- 1439 کا خطبہ جمعہ مسجد نبوی میں بعنوان " بیت المقدس کی فضیلت اور مسئلے کا حل " ارشاد فرمایا ، جس میں انہوں نے کہا کہ مسئلہ فلسطین ہر مسلمان کا مسئلہ ہے کوئی بھی اسلامی ملک یا  معاشرہ اس مسئلے کو ایک...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, December 16, 2017 - 12:16
عالم اسلام میں آئیں تو سب کشمکش آج اس پر ہے، اور ہوگی، کہ ہم اپنی اُسی ملت پر اصرار کریں جو چودہ سو سال سے ہماری نظریاتی تشکیل کرتی آئی؛ اور اُن کے دیے ہوئے اِس نئے تصورِ ملت کو اپنے لیے قبول نہ کریں۔ ’اپنی ملت کو قیاس اقوامِ مغرب سے نہ کرنے‘…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, December 16, 2017 - 12:06
اسلام جہاں ایک اصولی دستورِ حیات ہے وہاں فطرت کے مقاصد کا بہترین نگہبان بھی ہے۔ اپنے کنبے قبیلے سے عام انسانوں کی نسبت آدمی کو زیادہ محبت ہونا، خاص اپنی زبان اور پھر زبان میں بھی خاص اپنا لہجہ بولا جا رہا ہو تو آدمی کا اس پر پھڑک اٹھنا، اپنے خون کےلیے آدمی…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, December 16, 2017 - 11:32

ہمارے مُلک کے ایک بڑے حصے کو علیحدہ ہوئے 46 سال بِیت گئے لیکن مجھے وہ خوبصورت نوجوان Assistant Works Manager محبوب نہیں بھولتا ۔ سُرخ و سفید چہرہ ۔ دراز قد ۔ چوڑا سینہ ۔ ذہین ۔ محنتی ۔ کم گو ۔ بہترین اخلاق ۔ اُردو باقی بنگالیوں کی بجائے نئی دہلی کے رہنے والوں کی طرح بولتا تھا ۔ مشرقی پاکستان میں نئی مکمل ہونے والی فیکٹری میں اُسے اوائل 1970ء میں بھیج دیا گیا کہ وہ بنگالی تھا (سِلہٹ کا رہائشی)

یکم جولائی 1969ء کو مجھے ترقی دے کر Production Manager Weaponsتعینات کر کے فیکٹری کے 8 میں سے 4 محکموں کی سربراہی کے ساتھ نئے اسِسٹنٹ ورکس منیجر صاحبان کی تربیت بھی ذمہ داریاں دے دی گئیں ۔...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, December 16, 2017 - 11:25
کس معصومیت اور تجاہل عارفانہ سے سوال اٹھایا جاتا ہے کہ کیا سیکولرزم لادینیت کا نام ہے؟اور پھر سارا زور یہ ثابت کرنے میں لگا دیا جاتا ہے کہ سیکولرزم تو محض انسان دوستی اور اعلی اخلاقیات کا نام ہے اسے لادینیت نہیں کہا جا سکتا۔ پاکستانی معاشرے کی اپنی نفسیات ہیں۔مذہبی تعلیمات پر عمل…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, December 16, 2017 - 11:25
برادر سید متین نے پروفیسر امجد علی شاکر صاحب کے ایک اقتباس کی روشنی میں سوال اٹھایا ہے کہ سیکولر ریاست کا معنی کیا ہوتا ہے؟ پروفیسر صاحب فرماتے ہیں کہ مولانا مودودی نے سیکولرازم کا ترجمہ “لادینی” کیا ہے تو یہ درست نہیں بلکہ سیکولرازم کا معنی “ہمہ دینی یا کثیر مذہبی” ہوتا ہے۔…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, December 16, 2017 - 11:06
موجودہ تہذیب آزادی کے نام پر یہ جھانسہ دیتی ھے کہ فرد یہاں ”جو” چاھنا چاھے چاھنے اور اسے حاصل کرسکنے کیلئے آزاد ھے”۔ مگر فی الحقیقت یہ ایک لغو دعوی ھے، عملا اس نظام میں فرد صرف وہی چاہ سکتا اور چاھتا ھے جس کے نتیجے میں سرمائے میں اضافہ ھو کیونکہ آزادی کا…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, December 16, 2017 - 10:29
1. کون سا اِسلام جناب، کیونکہ مولویوں کا اسلامی احکامات کی تشریح میں اختلاف ہے، لٰہذا جب تک یہ اختلاف ختم نہیں ہوجاتے،اسلام کو اجتماعی نظم سے باہر رکھو۔ 2. ٹھیک ہے اختلافات ہمارے درمیان بھی ہیں،مگر ہم لڑتے تو نہیں نا، مولوی تو لڑتے ہیں،ایک دوسرے کو کافر وگمراہ کہتے ہیں۔ 3. عقل پر…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, December 16, 2017 - 10:20
سیکولرز کا پیش کردہ اشکال: کونسی شریعت شریعت شریعت تو سب کرتے ہیں۔ مگر اِن داعیانِ شریعت میں سے آج تک کوئی یہ نہیں بتا سکا کہ کونسی شریعت؟ کوئی ایک شریعت ہو تو بات کریں۔ یہاں خمینی کی شریعت ہے۔ نمیری کی شریعت ہے۔ ضیاءالحق کی شریعت ہے۔ قذافی کی شریعت الگ ہے۔ سعودیہ…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, December 16, 2017 - 10:12
 ٭عقل پر مبنی اجتماعی نظم ڈاگمیٹک نہیں ہوتا جب ان باتوں کا جواب نہیں بنتا تو عقل پرست و سیکولر لوگ ایک نئے قسم کا داؤ پیچ کھیلتے ہیں اور وہ یہ کہ ‘مذہبی عقیدہ چونکہ معین،غیر متبدل وآفاقی ہونے کا مدعی ہوتا ہے لٰہذا یہ اپنے ماننے والوں میں ڈاگمیٹک (متشدد) رویے کو فروغ…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, December 16, 2017 - 09:50
گزشتہ بحث کےبعد یہ غلط فہمی خودبخود صاف ہوجانی چاہیئے کیونکہ اپنے دائرہ عمل میں سیکولر ریاست صرف انہی تصورات خیر اور حقوق کو برداشت کرتی ہے جو اسکے اپنے تصور خیر (ہیومن رائٹس،یعنی ہیومن کی آزادی) سے متصادم نہ ہوں، اور ایسے تصورات خیر جو ہیومن رائٹس سے متصادم ہوں انکی بذریعہ قوت بیخ…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, December 16, 2017 - 09:35
اس ضمن میں سیکولر لوگ بڑے طمطراق سے یہ بھی کہتے ہیں کہ سیکولر ریاست مذہبی اختلافات (مثلاً شیعہ،سنی،دیوبندی،بریلوی) کو ختم کرکے انکے پرامن بقائے باہمی کوممکن بناتی ہے، اور ہمارے چند دینی لوگ بھی اس جھانسے کاشکار ہوکر اسے سیکولر ریاست کی کوئی ‘خوبی’ اور اہل مذہب پر اس کا کوئی’احسان’ تصور کرنے لگتےہیں۔…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, December 15, 2017 - 20:35
سیکولر لوگوں کی پھیلائی ھوئی بہت سی مغالطہ انگیزیوں میں سے ایک یہ بھی ھے کہ ”سیکولر ریاست مذہبی ریاست کی طرح فرد کی ذاتی زندگی میں مداخلت نہیں کرتی، لہذا یہ مذہبی ریاست کی طرح جابرانہ (coercive) نہیں ھوتی۔ پس ریاست کو مذہبی نہیں بلکہ سیکولر بنیاد پر قائم ھونا چاھئے”۔ مگر حقیقت یہ…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, December 15, 2017 - 20:30
لبرل ریاستوں کا موجودہ پالیسی فریم ورک علم معاشیات کے مباحث سے ماخوذ ہے۔ معاشیات کی کتب لکھنے والے مصنفین بظاہر اپنے قاری کو یہ تاثر دیتے ہیں کہ ’’ریاست کو کیوں نجی سیکٹر کے معاملات میں مداخلت نہیں کرنا چاہیے‘‘ ۔ معاشیات میں گریجویشن کرنے والے عام طالب علم اور لبرل سیاسی فکر کا…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, December 15, 2017 - 17:49
مصنف: کچھ دل سے

جاہ و جلال, دام و درم اور کتنی دیر
ریگِ رواں پہ نقش قدم اور کتنی دیر

اب اور کتنی دیر یہ دہشت، یہ ڈر، یہ خوف
گرد و غبار عہدِ ستم اور کتنی دیر

حلقہ بگوشوں، عرض گزاروں کے...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, December 15, 2017 - 15:14

...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, December 15, 2017 - 08:00

اس امر میں کوئی شبہ نہیں کہ اس وقت دنیا کو عسکری طاقت نہیں بلکہ میڈیا کی طاقت کے ذریعے کنٹرول کیا جارہا ہے ۔۔۔۔۔ دنیا کی حکمران ایلیٹ یعنی اصل اور بڑا سرمایہ دار طبقہ جیسے چاہے عوام کی رائے تبدیل کرنے پر قادر ہے ۔۔۔۔ اگر کوئی یہ سمجھتا ہے کہ میڈیا دنیا کی خبریں بلا کم و کاست پہنچا دیتا ہے تو اس کی شدید غلط فہمی ہے ۔۔۔۔ دنیا بھر کے میڈیا پر ترقی یافتہ ممالک کے سرمایہ داروں کا مکمل کنٹرول ہے اور ترقی پذیر ممالک کا میڈیا ان مغربی اداروں کا دست نگر ہے جو سرمایہ دارانہ نظام کے محافظ کا کردار ادا کر رہے ہیں۔
معروف مفکر نوم چومسکی اور ایڈورڈ ہرمن نے 1988 میں شائع ہونے والی اپنی کتاب The...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, December 14, 2017 - 16:02
گذشتہ ایک تحریر میں راقم نے مولانا حمید الدین فراہی اور مولانا امین احسن اصلاحی کی فکر میں موجود تصورِ خلافت پر اپنی طالب علمانہ گزارشات پیش کی تھیں۔اس تحریر میں زیادہ فوکس ان بزرگوں کی قرآنی فکر اور تفسیری آرا پر رہا اور اپنے تفسیری افکار کے ضمن میں انھوں نے جہاں اسلامی روایت…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, December 14, 2017 - 15:44
12اپریل 2017ء کے ایک کالم میں جناب خورشید احمد ندیم نے محترم جاوید احمد غامدی صاحب کے جوابی بیانیے کے الفاظ کو نکات کی شکل میں ملخص کر کے پیش فرمایا ہے۔ بات پرانی ہے، اس پر لکھا بھی بہت کچھ جا چکا ہے۔ ان سطور میں پہلے سوال پر گفتگو کرنے کی کوشش کی…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, December 14, 2017 - 09:03
آج کا سب سے زیادہ فیشن ایبل سیاسی نظریہ سیکولر جمہوریت ہے، اس وقت دنیا میں یہ کہا اور سمجھا جارہا ہے کہ دنیا کے مختلف نظاموں کے تجربات کرنے کے بعد آخر میں میں سیکولر جمہوریت ہی سب سے بہتر نظام حکومت ہے۔ یہاں تک کہا جارہا ہے کہ اب اس سے بہتر نظام…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, December 14, 2017 - 08:48
تھیوکریسی(Theocracy): تھیوکریسی کا لفظ یونانی اصلیت رکھتا ہے۔ یونانی زبان میں Theo خدا کو کہتے ہیں، ( اور اسی سے تھیولوجی بنا ہے لوجی کہتے ہیں علم کو۔ توتھیولوجی کے معنی عالم الٰہیات ہیں)، Cracy کے معنی ہیں حاکمیت۔ اس طرح Theoracyکے معنی ہوئے خدا کی حاکمیت۔ اس نظام کا اصل تصور تو بڑا مبارک…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, December 14, 2017 - 08:32
خلافت کی ناگزیریت: فطری تقاضوں اور استطاعت کا مغالطہ ہماری تحریر “خلافت ناگزیر ہے” کے جواب میں احباب نے دلائل کی جو عمارت قائم کی ہے اس کا ایک ستون یہ ہے: “فطری تقاضوں (بشمول اجتماعی نظام کے قیام) کو فطرت تک ہی رکھنا چاھئے۔ فطری اور عقلی تقاضے بدیہات ہوتے ہیں۔ ان پر انسانوں…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, December 13, 2017 - 17:07
مصنف: کچھ دل سے

~!~ آج کی بات ~!~
’اگر آپ کے جذبات آپ کے قابو میں نہیں، اگر آپ کو...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, December 13, 2017 - 16:00
یہ سوال پوچھتے پھرنا کہ “بتاؤ کس آیت میں لکھا ہے کہ خلافت قائم کرنا ضروری ہے” ظاہر کرتا ہے کہ سائل کو معاملے کی نوعیت کی خبر ہی نہیں۔ یہ سوال ہی باطل ہے۔ متعلقہ سوال یہ ہے کہ کیا اللہ تعالی نے جن حقوق و فرائض کو متعین کیا ہے ان کی ادائیگی…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, December 13, 2017 - 15:54
نفاذ اسلام کی دستوری جدوجہد کے سلسلے میں 1951ء میں تمام مسالک کے نمائندہ علماء نے متفقہ طور پر 22 دستوری نکات مرتب کیے۔ یہ علماء جملہ اسلامی فرقوں کے نمائندہ علماء اور ملک کے عوام کی دینی اور روحانی وابستگی کا مرکز ہیں جنہیں پاکستانی عوام کے جذبات کا نشان قرار دیا جاتا ہے۔…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, December 13, 2017 - 15:50
سیاست کے بارے میں اسلام نے بے شک بہت سے احکام عطا فرمائے ہیں، لیکن حکومت کا کوئی تفصیلی نقشہ اسلام نے متعین نہیں فرمایا۔ اصول اور قواعد عطا فرمائے ہیں، لیکن ان اصولوں کو کس طرح نافذ کیا جائے؟ اور عملا ان کی صورت کیا ہو؟ اس کی تفصیلی جزئیات اسلام نے متعین نہیں…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, December 13, 2017 - 15:35
امیر کی صفات اہلیت: موجودہ دور کے جمہوری نظاموں میں سربراہ حکومت یا ارکان پارلیمنٹ کیلئے عموماً اہلیت کی کوئی شرائط مقرر نہیں ہوتیں عام طور سے دساتیر میں یہ درج ہوتا ہے کہ وہ ملک کا شہری ہو اور ووٹر لسٹ میں اس کانام درج ہو۔ ووٹر لسٹ میں نام درج ہونے کیلئے عموماً…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, December 13, 2017 - 15:22
آج کل کے ماحول میں انتخابات کا طریقہ کیا ہوگا؟ اس سوال کا جواب دینے سے پہلے یہ سمجھتا چاہئے کہ جب کوئی طریقہ عالمگیر طور پر اختیار کرلیا جاتا ہے تو عام طور پر اس کے خلاف کسی اور طریقے پر غور کرنے کے لئے لوگ تیار نہیں ہوتے اور اس کے خلاف ہر…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, December 13, 2017 - 15:14
کیا ایک سے زیادہ خلیفہ ہو سکتے ہیں؟ شریعت یہ کہتی ہے کہ مسلمانوں کا ایک ہی خلیفہ ہو جبکہ موجودہ دور میں جب مسلمان مختلف ملکوں میں بٹے ہوئے ہیں ، ایک خلیفہ کا انتخاب کیسے ممکن ہے ؟ یہ بات درست ہے کہ جمہور علماء کا موقف یہ ہے کہ پوری دنیا میں…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, December 13, 2017 - 15:08
مصنف: کچھ دل سے
Image result for diamond peopleڈائلاگ (تعارف)از عمر الیاس
“آپ کیا کرتے ہیں؟”
“ہیرے چُنتا ہوں۔”
“کیسے چُن لیتے ہیں ہیرے؟”
“نظر آ جاتے ہیں۔ مِل جاتے ہیں، دِکھا دیے جاتے ہیں۔”
“پر پہچانتے کیسے ہیں آپ اُنھیں؟”
ہیرا پہچاننا نہیں پڑتا۔ اُسکی چمک، دمک سب بتا دیتی ہے۔ اور، محض اُسکی موجودگی ہی سب کُچھ...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, December 13, 2017 - 10:56
۔ الحاد ڈاٹ کام ‘ کے پلیٹ فارم پر آپ کو خوش آمدید کہتے ہیں۔  یہ سائیٹ جدید فکری چیلینجز  خصوصاالحادی فتنے کے  علمی محاکمے کے لیے بنائی گئی ہے۔ اسوقت اسلام سمیت ہر مذہب کو الحادی چیلنج کا سامنا ہے، آج سے دو سو برس پیشتر ایک آدمی اچھا مسلمان ہو سکتا تھا اور…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, December 12, 2017 - 18:00
مصنف: کچھ دل سے
~!~ آج کی بات~!~ 
بے تکلفی کے لمحات ہوں یا کمزوروں کے ساتھ تمھارے...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, December 12, 2017 - 14:32
بعض مغربی مصنّفین نے یہ خیال ظاہر کیا ہے کہ اسلام میں جب ایک حکومت قائم ہوجائے تو اس کو ہٹانے کا کوئی راستہ نہیں ہے۔ یہ خیال شاید ان احکام کودیکھ کر پیدا ہوا ہے کہ جن میں کسی حاکم وقت کے خلاف بغاوت سے منع کیا گیا ہے لیکن یہ خیال قطعی طور…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, December 12, 2017 - 14:27
مصنف: کچھ دل سے
Image result for holy kaaba and masjid aqsaموسمیاتی تبدیلیاں اور بیت المقدس - خطبہ جمعہ مسجد نبویترجمہ: شفقت الرحمان مغل
فضیلۃ  الشیخ ڈاکٹرعبد اللہ بن عبد الرحمن بعیجان حفظہ اللہ نے 20 ربیع الاول 1439 کا خطبہ جمعہ مسجد نبوی میں بعنوان " موسمیاتی تبدیلیاں اور بیت المقدس" ارشاد فرمایا انہوں نے کہا کہ موسمیاتی...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, December 12, 2017 - 11:32

اپریل 2016ء میں کراچی کے ایک صاحب نے سوال پوچھا ”کیا یہ شعر بولنا صحیح ہے ؟؟“
کی محمداﷺ سے وفا تُو نے تَو ہم تیرے ہیں
یہ جہاں چیز ہے کیا ۔ لوح و قلم تیرے ہیں

اُس زمانہ سے لے کر جب میں گیارہویں جماعت میں تھا (1955ء) اُس زمانہ تک جب حکومتِ وقت نے علامہ اقبال کو ریڈیو ۔ ٹی وی اور سکول و کالج کی نصابی کُتب سے نکال کر اُن کی جگہ فیض احمد فیض کو قومی شاعر بنا دیا تھا (1974ء) یہ سوال کئی بار سُننے میں آیا اور اِس پر تکرار ہوتے بھی دیکھی

اِس سوال کا اٹَک کے ایک صاحب جو مولوی سمجھے جاتے ہیں نے خوبصورت جواب دیا ۔ سو خیال آیا کہ اِسے قارئین کی نظر کیا جائے

جواب ۔...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, December 12, 2017 - 11:20
خلافت کا قیام اور مسلم مکاتب فکر: نفاذ اسلام تو دنیا بھر کے اکثر مسلمانوں کی دلی خواہش ہے اور اس کے لیے بیسیوں ممالک میں کسی نہ کسی درجے میں محنت بھی ہو رہی ہے، لیکن بعض بنیادی امور پر ذہن واضح نہ ہونے کی وجہ سے اکثر مقامات پر یہ محنت اور جدوجہد…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, December 12, 2017 - 11:05
مندرجہ ذیل اقتباس ایک ایسی شخصیت کا ہے جو مغرب کے لبرل ڈیموکریٹک نظام کی وکالت کے لیے معروف ہیں: ” لبرل ڈیموکریٹک سسٹم جو ابھی مسلمانوں کو سمجھ نہیں آ سکتا۔ اگر پاکستان میں جمہوریت تسلسل کے ساتھ رہے تو آہستہ آہستہ چیزیں بہتر ہو تی جائیں گی۔ اگرچہ مغرب کو اس نظام تک…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, December 11, 2017 - 20:38
مصنف: شعیب صفدر
یہ قریب بیس سال قبل کی بات ہے میرے رہائشی علاقے ماڈل کالونی کی ایک نہایت مصروف سڑک ماڈل کالونی روڈ مکمل طور پر تباہ تھی۔ ہم یار دوست اکثر مذاق میں کہتے کہ جس نے جھولے لینے ہیں وہ بائیک لے کر اُس طرف چلا جائے۔ مگر پھر ایک دن صبح صبح اس سڑک پر کارپیٹنگ ہوئی ہوئی تھی مکمل سڑک نئی نئی سی معلوم ہوتی تھی دیکھ کر حیرت اس لئے ہوئِی کہ ایک دن قبل جب وہاں سے گزر ہوا تھا تو "جھولے" لے کر آئے تھے مطلب سڑک خستہ حالت میں تھی۔ معلومات لینے پر معلوم ہوا کراچی کی مشہور زمانہ پارٹی کے لیڈران نے ایک جلسہ کی سلسلے میں تشریف لانا تھا س لئے ایک ہی رات میں انتظامیہ نے "فرض شناسی" کا ثبوت دیا جو اہل...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, December 11, 2017 - 11:31
اسلام اور سیاست كے تعلّق كے بارے میں آج كل دو ایسے نظریات پھیل گئے ہیں جو افراط و تفریط كی دو انتہاؤں پر ہیں۔ ایك نظریہ سیكولرزم كا ہے جس كے نزدیك اسلام بھی دوسرے مذاہب كی طرح انسان كا ذاتی اور انفرادی معاملہ ہے جس كا تعلق بس اُس كی اپنی ذاتی زندگی…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, December 11, 2017 - 10:41
پاکستان میں کرپشن کی حالیہ صورتحال کے حوالے سے ہونے والی ایک بحث میں، کسی ٹی وی چینل پر، اینکر کاشف عباسی کے ایک پریشان کر دینے والے سوال پر کہیں سے جواب آیا: معاشرے کو اوپر سے ٹھیک تھوڑی کیا جا سکتا ہے؛ یہ تو نیچے سے ٹھیک کیا جائے تو ہو گا۔ جس…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, December 11, 2017 - 09:58
’’فرد‘‘ میں آ جانے والا بگاڑ اور ’ذاتی اصلاح‘ کے زیرعنوان ہونے والی تلبیسات: ’’ذاتی اصلاح‘‘…. !اس سے خوبصورت شعار کیا آپ کہیں سے لا کر دے سکتے ہیں؟! ’’ذاتی اصلاح‘‘ ایسی اعلیٰ و ارفع بات کیا کبھی بھی اور کہیں بھی رد ہوسکتی ہے؟ تو پھر…. یہ ہوا صحیح منہج: اپنے من میں ڈوب…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, December 11, 2017 - 09:30
جن لوگوں کا یہ خیال ہے کہ ہمیں نظام کو پرابلماٹائز کرنے کی ضرورت نہیں (کہ شاید وہ خود بخود ٹھیک ھوجاۓ گا یا وہ کمتر اہمیت کا حامل ھے یا فی الحال اسے موخر کرکے کسی اور کام پر توجہ دینی چاھئے) یا یہ کہ ایک پیچیدہ نظام کا مقابلہ اکیلا فرد یا کوئ…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, December 11, 2017 - 09:03
سید مودودی ہوں یا شبیر احمد عثمانی، ان کو ہمارے(سیکولر) دوست قبضہ گروپ کا طعنہ دیتے ہیں کہ ملک بنایا کسی اور نے اور اس پر قبضہ کسی اور نے کر لیا۔ جب یہ احباب قبضہ کی بات کرتے ہیں تو ان کا اشارہ قرارداد مقاصد کی طرف ہوتا ہے۔ قراردادِ مقاصد کا شمار پاکستان…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, December 11, 2017 - 08:39
یہ بیانیہ بیانیہ کی تکرار کچھ زیادہ ہی ہوگئی ہے سو، سوچا کہ اس میں جو پاکستان کا اصل بیانیہ ہے اور جعلی طورپرجن نان ایشوز کو اس کے بیانئیے کے نتائج کے طور پر پیش کیا جارہا، اس سب کا ذکر بھی کردیا جائے۔ ہمارے مڈل کلاس کے زیادہ تردانشوروں کو تمام گفتگوکے بعد،…
زمرہ: اردو بلاگ

Pages

Subscribe to بلاگستان فیڈز