بلاگستان

تاریخ اشاعت: اتوار, January 20, 2019 - 09:41

زلزلے کے نتیجے میں زمین کی اندرونی پرت (ٹیکٹونک پلیٹس) کے ٹوٹنے اور اس عمل سے جڑی سرگرمیوں کے نتیجے میں سمندر کا پانی بھاری مقدار میں کرۂ ارض میں 20؍ میل تک گہرائی میں جا رہا ہے۔ اور، حیران کن بات یہ ہے کہ سائنسدانوں کو معلوم نہیں کہ یہ سلسلہ کب رکے گا اور اس کا نتیجہ کیا ہوگا۔ سائنس میگزین اور لائیو سائنس کی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ دنیا بھر کے سمندروں کے گہرے ترین مقام ماریانہ ٹرینچ (Mariana Trench) میں زلزلہ پیما ماہرین کی ٹیم نے ایک نئی تحقیق کے بعد بتایا ہے کہ زمین کے اندرونی حصے (Subduction Zones) گزشتہ اندازوں کے مقابلے میں پانی کی تین گنا زیادہ مقدار اپنی جانب کھینچ رہے ہیں۔...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, January 20, 2019 - 03:12

آج ایک عزیز دوست کی یہ پوسٹ دیکھی تو دلی صدمہ ہوا۔ کچھ عرصے سے ریاست مدینہ کی اصطلاح کی تضحیک کا ایک رجحان نظر آرہا ہے تو سوچا اسکی طرف توجہ مبذول کراتا چلوں۔

نارملائزیشن سے مراد کسی طور طریقے،...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, January 20, 2019 - 01:25
مصنف: اس طرف سے


احمد رضا قصوری اپنی کتاب "ادھر ہم ادھر تم" جو اسی کی دہائی میں شائع ہوئی تھی میں لکھتے ہیں کہ پنجاب پولیس ایسی ہے کہ اگر اس کو کہا جائے کہ اپنے والد کو گرفتار کرو تو یہ ہتھکڑی لیے والد کے پاس...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, January 19, 2019 - 18:54

غزل

حوصلے دیدہ ٴ بیدار کے سو جاتے ہیںنیند کب آتی ہے تھک ہار کے سو جاتے ہیں
چاہتے ہیں رہیں بیدار غمِ یار کے ساتھ
اور پہلو میں غمِ یار کے سو جاتے ہیں

روز کا قصہ ہے یہ معرکہ ٴ یاس و اُمید
جیت کر ہارتے ہیں، ہار کے سو جاتے ہیں

ڈھیرہوجاتی ہے وحشت کسی آغوش کے پاس
سلسلے سب رم و رفتار کے سو جاتے ہیں

سونے دیتے ہیں کہاں شہر کے حالات مگر
ہم بھی سفاک ہیں جی مار کے سو جاتے ہیں

لیاقت علی عاصمؔ
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, January 19, 2019 - 11:18


رحیم گل..
منفرد لہجے اوراپنی.نوعیت کا اکلوتا ادیب.....

تن تارہ را، جنت کی تلاش ، وادی گمان سے، داستاں چھوڑآئے، زہر کا دریا،پوٹریٹ، وہ اجنبی اپنا اور ایسی ہی کچھ اور منفرد کتابوں کے مصنف رحیم گل۔
موضوعات کی جس قدر انفردایت اور فراوانی رحیم گل کی کتابوں میں ہمیں ملتی ہے شائد ہی کسی مصنف کے حصے میں اتنی فیاضی آتی ہو۔۔۔
زبان کی قید سے آزاد محبت کے جذبے کو بیان کرنے کیلئے جس طرح تن تارارہ میں نثریہ شاعری کی ہے اس کی مثال مجھے نہیں ملتی۔ایک قبائلی لڑکی اور ایک مہذب معاشرے کے فرد کے درمیان زبان کی قید سے آزاد داستان جس کے بارے میں مصنف کا دعوی ہے کہ یہ اس کی...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, January 18, 2019 - 12:43
نمکین غزل

اُڑاتے روز تھے انڈے پراٹھے
پر اب کھاتے ہیں ہر سنڈے پراٹھے

یہاں ہم کھا رہے ہیں چائے روٹی
وہاں کھاتے ہیں مسٹنڈے پراٹھے

ترستے لقمہ ٴ تر کو ہیں اب تو
وہ کیا دن تھے کہ تھے فن ڈے، پراٹھے

کہا بیگم رعایت ایک دن کی
پکا لیجے گا اِس منڈے پراٹھے

کہا بیگم نے ہے پرہیز بہتر
بہت کھاتے ہو مُسٹنڈے پراٹھے

زمانہ یاد ہے اسکول والا
کہ جب کھاتے تھے تم ڈنڈے، پراٹھے

کئی فرمائشیں مانی ہیں میں نے
بنے بیگم کے ہتھکنڈے، پراٹھے

چلو احمد ؔ منگائیں گرم چائے
ہوئے جاتے ہیں سب ٹھنڈے پراٹھے...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, January 18, 2019 - 10:15


ایک ایسی شکائیت جس کے بارے میں ہر ماں بہت متفکر نظر آتی ہے وہ یہ ہے کہ میرا بچہ کچھ کھاتا پیتا نہیں ہے۔۔۔۔۔اب ایک طرف تو وہ بچے ہوتے ہیں جن کا وزن عمر کے لحاظ سے ٹھیک ہوتا ہے لیکن ماؤں کی خواہش ہوتی ہے کہ وہ ہر وقت کھاتا پیتا نظر آئے۔ جبکہ دوسری طرف وہ بچے ہوتے ہیں جن کو حقیقت میں خوارک کی ضرورت ہوتی ہے لیکن وہ کھانا پینا پسند نہیں کرتے۔پہلی قسم کے بارے میں تو کہوں گا کہ ایک بچہ جو صرف ماں کے دودھ پر ہے اور چھ ماہ کا ہوگیا ہے۔اور صحت میں اچھا ہے تو ایسے بچے کی ٹھوس غذا کو ایک دو ماہ مزید لیٹ کیا جاسکتا ہے۔اسی طرح ایک بچہ اپنے عمر کے مطابق اپنا وزن پورا کررھا ہے اور اسکے مائل...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, January 18, 2019 - 09:28
کیا وہ آسمانوں اور زمین کی بادشاہی سمیت اللہ  تعالی کی تمام مخلوقات میں غور و فکر نہیں کرتےـ سورۃ الاعراف آیت 185چار ماہ قبل کائنات کے سربستہ راز کے نام سے میں نے جس موضوع کا آغاز کیا تھا۔ اس کے اندر چھپا راز  جس طرح مجھ پر آشکار ہوا  ،میرے لئے حیرانگی کا سبب نہیں تھا کیونکہ میرا اس بات پر مکمل اور کامل یقین ہے کہ اس کائنات میں پیدا ہوئی ہر شے اللہ تعالی کی قدرت کا مظہر ہے اور میرا یہی یقین جستجو اور تلاش کے سفر پر گامزن رہا، جو بالآخر اپنے منطقی نتیجہ کی طرف  مجھے لے گیا۔ اللہ تبارک تعالی کی رضا و رحمت سے جو مجھ پر منکشف ہوا، وہ ناقابل یقین، حیرت انگیز، عقل دنگ کردینے...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, January 16, 2019 - 18:20
مصنف: شعیب صفدر

Shoiab Safdar posted a photo:

یادگار

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, January 16, 2019 - 17:04

یہ آٹھ دسمبر اور بدھ کے دن کی ایک سرد صبح  ہے لیکن نکھڑے ہوئے سورج کی روشنی نے سردی کو اپنی آغوش میں لے کر اس کے احساس کو کچھ گھنٹوں کیلئے کم کردیا ہے ۔ریلوے سٹیشن سے بسوں کے اڈوں کو نکال کر بادامی باغ منتقل ہوئے ابھی چند دن ہوئے ہیں۔ میں ایک دوست کو بہاولپور جانے والی بس میں سوار کروانے آیا ہوں لیکن میرا ارادہ واپسی کا نہیں ۔میں کچھ گھنٹے بادشاہی مسجد اور شاہی قلعے میں گزارنا چاہتا ہوں  ۔جب آپ کسی تاریخی جگہ پر کھڑے ہوتے ہیں تو   تہذیبیں آپ کے ساتھ چلنا شروع ہوجاتی ہیں ۔اور میں تہذیبوں کے اس سفر میں کچھ وقت گزارنا چاہتا ہوں   ۔ اقبال پارک کے گرد...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, January 15, 2019 - 18:55
مصنف: شعیب صفدر

Shoiab Safdar posted a photo:

classical Building

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, January 15, 2019 - 09:48

والد صاحب نے کہا ” انسان کو کسی کی عدم موجودگی میں وہی بات کرنا چاہیئے جو وہ اس کے منہ پر بھی دہرا سکے“۔
بات معمولی سی تھی مگر میں نے اس پر عمل بڑا مشکل پایا ہے۔ ہاں جب کبھی اس پر عمل پیرا ہونے کی توفیق ملی ہے اس وقت زندگی بڑی ہلکی اور آسان محسوس ہوئی ہے

قدرت الله شہاب

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, January 14, 2019 - 18:53
فریاد کی لے​از محمد احمدؔ​
وہ اِس وقت ذہنی اور جسمانی طور پر بالکل مستعد تھا۔ بس انتظار تھا کہ مولوی صاحب سلام پھیریں اور وہ نماز ختم کرکے اپنا کام شروع کر دے۔ اُس نے اپنے ذہن میں اُن لفظوں کو بھی ترتیب دے لیا تھا جو اُس نے حاضرینِ مسجد سے مخاطب ہو کر کہنا تھے۔ جیسے ہی مولوی صاحب نے سلام پھیر ااُس نے بھی تقریباً ساتھ ساتھ ہی سلام پھیرا اور ایک جھٹکے سے اُٹھا لیکن عین اُس وقت کہ جب اُس کو کھڑا ہو کر اپنی فریاد لوگوں تک پہنچانی تھی اُس کی قمیص کا دامن اُسی کے پاؤں تلے آ گیا اور ایک دم سے اُٹھنے کی کوشش کے باعث دامن چاک سے لے کر کافی اُوپر تک پھٹ گیا۔ ابھی وہ قمیص کا جائزہ ہی لے رہا تھا کہ...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, January 11, 2019 - 16:53

کنفیوشس نے اپنے پیروکاروں سے کہا تھا ” انسان ناسازگار حالات حتیٰ کہ موت کے آس پاس بھی گزارنے کو ترجیح دیتا ہے بشرطیکہ اسے وہاں ایک مکمل اور آسان انصاف حاصل ہو“۔
مجبوری میں اس ایک لفظ انصاف کا تعاقب کرنے پر آخری سرے پر ناانصافی ہی ہمارا منہ چڑا رہی ہوتی ہے۔ یہی وہ آتش فشاں ہے جس سے مجبوریوں کے لاوے پھوٹتے اور ہماری زندگیوں کو بھسم کر دیتے ہیں۔ ناانصافی کا یہ لاوا پہلے ہماری اخلاقیات کو نگلتا، اُسے کمزور کرتا اور پھر اپنا راستہ بناتا سماجی زندگی سے لے کر اداروں تک کو اپنی لپیٹ میں لیتا چلا جاتا ہے

یہ پون صدی کا نہیں، صدیوں کا قصہ ہے جب سو سال پہلے کا امریکہ ایک ایسی عجیب و...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, January 7, 2019 - 18:08
یوں توں جب ہم سست نہیں ہوتے تو تب ہم صرف سست ہوتے ہیں۔ لیکن کیا کیجیے، کہ جب ہم اپنے تئیں آلکسی کی کئی سیڑھیاں دیکھ کر وہیں پر ہمت ہار جاتے ہیں کہ اب اس رتبے پر کون جائے۔ وہیں ہمیں احمد بھائی کی کوئی ایسی حرکت نظر آتی ہے کہ ہم سوچتے رہ جاتے ہیں میاں۔۔۔ جس رتبہ پر یہ حضرت ہیں، بخدا میں زندگی بھر صرف سویا رہوں تو تب بھی نہیں پہنچ سکتا۔ "ایں آلکسی بزور بازو نیست"۔ احمد بھائی کی کوچہ آلکساں سے والہانہ محبت تو دیکھیے۔ کہ شاعری میں بھی گردوپیش سے بےخبر نہیں۔ فرماتے ہیں۔ فسانہ پڑھتے پڑھتے اپنے آپ سے اُلجھ گیا عجیب کشمکش تھی میں کتاب رکھ کے سو گیا 
اے ساکنانِ کوچہ! اے منتظمین...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, January 6, 2019 - 08:35

الله کا نام بہت زیادہ لیا جائے یا کم، اپنا اثر ضرور رکھتا ہے
دنیا میں بعض اشیاء ایسی ہیں کہ ان کا نام لینے سے ہی منہ میں پانی بھر آتا ہے
پھر یہ کیسے ہو سکتا ہے اُس خالقِ کائنات کا نام ” الله “ لیا جائے اور اس میں اثر نہ ہو
خود خالی نام میں بھی برکت ہے

قدرت الله شہاب

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, January 4, 2019 - 11:57

ماضی کے کچھ نقوش تخیل کے تاروں کو جب چھیڑتے ہیں تو یادیں کسی مون سون کی بارش کی طرح آپ کے پورے وجود کو اپنی لپیٹ میں لےلیتی ہیں۔ ماضی کے تار جب بجنے لگتے ہیں تو یادوں کے ساز قطار اندر قطار نکلتے اوربکھرتے جاتے ہیں ۔کچھ ایسا ہی ہوا جب کمالیہ سے جڑی یادوں پر مشتمل ایک تحریر پڑھنے کو ملی۔جب پہلی بار چیچہ وطنی کمالیہ روڈ از سر نو تعمیر ہوئی تو ارد گرد کی عمارتیں کافی نیچی رہ گئی تھیں اور سڑک کے کنارے ابھی زیادہ مضبوط نہیں تھے اس لیئے آئے دن گاڑیوں کے الٹنے کی خبریں سننے کو ملتی تھیں ۔ ایک دن ایک بس  ہائی سکول نمبر ایک کے سامنے الٹ گئی۔اگرچہ کوئی جانی نقصان تو نہیں ہوا۔لیکنامدادی...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, January 2, 2019 - 20:40
کچھ آگہی کی سبیلیں بھی، ہیں انتشار میںعمر رسیدہ اور جہاندیدہ لوگوں کی باتیں سن کر میں ہمیشہ سوچتا تھا کہ ان سب کو مصنف ہونا چاہیے۔ کتنا اچھا بولتے ہیں۔ دنیا کو کس نظر سے دیکھتے ہیں۔ ان کے پاس خیالات و الفاظ کی کتنی فراوانی ہے۔ کتنی سہولت سے یہ واقعات بیان کرتے چلے جاتے ہیں۔ میں ایسا کیوں نہیں کر سکتا۔ مجھے تو جو دو چار لفظ آتے ہیں، فوراً سے پیشتر نوک قلم کے حوالے کر دیتا ہوں۔ دنیا چیختی رہتی ہے کہ یہ زبان و بیان درست نہیں۔ میاں لکھنے کا یہ انداز درست نہیں۔ تم کب لکھنا سیکھو گے؟ لیکن میں سب سے بےپروا جو الٹا سیدھا دل میں آتا ہے لکھتا ہوں اور خوش ہوتا ہوں۔لیکن ہر گزرتا دن مجھے چپ رہنا سکھانے...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, January 2, 2019 - 19:48
مصنف: بلاگ اے
مشین پور کو میں صرف ایک ویڈیو نہیں کہوں گا، یہ اک دل کا دوسرے دلوں کو ایک پیغام پہنچانے کا ایک ذریعہ ہے۔ لیکن ہاں اگر کہانی کی طرح دیکھا جائے تو ایک مشینی دنیا کا ایک روبوٹ جو پھر روبوٹ نہیں رہتا اور نکل پڑتا ہے اپنے اندر کی تلاش میں۔ مشین پور …

جاری رکھئیے پڑھنا مشین پور – اپنا دل ڈھونڈتے اک روبوٹ کی داستان

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, January 2, 2019 - 08:21
 اپنے اپنے ماحول میں،اپنے اپنے انداز سے  عمر کے ابتدائی سال طے کرنے والے مرد اور عورت معاہدۂ نکاح کے ذریعے  شادی کی شاہراہ پر قدم رکھتے ہیں۔جذبوں اور خواہشوں کے درِیار پرپلکوں سےدستک دیتے جب آنکھ کھلتی ہے تو  آگہی کا اُجالا ہر احساس کی قلعی  کھول دیتا ہے۔باہمی محبت سمجھوتے کا لباس پہنتے دیر نہیں لگاتی تو  کہیں سمجھوتے کے گلیشئیر محبت کی  تپش سے دھیرے دھیرے پگھلنے لگتے ہیں۔شادی   ہردو افراد کے لیے "زندگی" کا ایسا "ٹرننگ پوائنٹ " ہے جو  نہ صرف جسمانی کیمسٹری یکسر تبدیل  کر دیتا ہے  بلکہ انسان ذہنی اعتبار سے بھی کئی منازل پھلانگ جاتا ہے...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, December 31, 2018 - 09:39

سورة 4 النِّسَاء آیت 36
وَاعۡبُدُوا اللّٰهَ وَلَا تُشۡرِكُوۡا بِهٖ شَيۡــًٔـا‌ ؕ وَّبِالۡوَالِدَيۡنِ اِحۡسَانًا وَّبِذِى الۡقُرۡبٰى وَالۡيَتٰمٰى وَ الۡمَسٰكِيۡنِ وَالۡجَـارِ ذِى الۡقُرۡبٰى وَالۡجَـارِ الۡجُـنُبِ وَالصَّاحِبِ بِالۡجَـنۡۢبِ وَابۡنِ السَّبِيۡلِ ۙ وَمَا مَلَـكَتۡ اَيۡمَانُكُمۡ‌ ؕ اِنَّ اللّٰهَ لَا يُحِبُّ مَنۡ كَانَ مُخۡتَالًا فَخُوۡرَا ۙ‏

اور تم سب اللہ کی بندگی کرو، اُس کے ساتھ کسی کو شریک نہ بناؤ، ماں باپ کے ساتھ نیک برتاؤ کرو، قرابت داروں اور یتیموں اور مسکینوں کے ساتھ حسن سلوک سے پیش آؤ، اور پڑوسی رشتہ دار سے، اجنبی ہمسایہ سے، پہلو کے ساتھی اور مسافر سے، اور...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, December 29, 2018 - 00:21
مصنف: بلاگ اے
ویسے تو کہا جاتا ہے کہ انسان کو ماضی میں نہیں رہنا چاہیے لیکن ناسٹلجیا میری زندگی کا ایک بڑا مزےدار حصہ ہے، یہ آج کے لمحوں میں گزرے کل کی ایک کھڑکی کھول کر ٹھنڈی ہوا کا ایک جھونکا دے جاتا ہے، خیر ضروری نہیں کہ جھونکا ٹھنڈی ہوا کا ہی ہو۔ مجھے ہمیشہ …

جاری رکھئیے پڑھنا تعلق بھری جگہیں

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, December 27, 2018 - 14:59

یہ ابھی کچھ دیر پہلے کی بات کی ہے۔سرددر اور کمزوری کی شکائیت سے آنے والی مریضہ کو جب میں نے ٹینشن کم لینے اور خود کو مصروف رکھنے کا کہا تو مسکرا کرجواب دیا۔ کوشش تو کرتی ہوں لیکن کیا کروں؟ کبھی کبھی سوچ خود ہی آجاتی ہے ۔ اللہ نے تین بیٹے اور ایک بیٹی عطا کی تھی۔ ایک بیٹا قتل ہوگیا ، دوسرا ایکسیڈنٹ میں چلا گیا اور تیسرے کو بیماری کے بہانے اللہ نے واپس بلا لیا ۔ ایک بیٹی ادھر بیاہی ہوئی ہے۔ اس سے ملنے آئی تھی۔ کسی نے آپ کا بتایا تو چیک اپ کروانے ادھر آگئی۔ایک دوست کے والد کہا کرتے تھے ۔کچھ باتیں ہم کتابوں سے سیکھتے ہیں کچھ تجربے سے اور کچھ لوگوں سے ۔اور جو صبر کا سبق مجھے آج تک کوئی کتاب...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, December 26, 2018 - 15:08
...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, December 26, 2018 - 12:27


بدھا کے دیس میں
سفر نامہ از راعنہ نقی سید

بدھا کےدیس میں
سفر نامہ پی ڈی ایف میں ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے اس لنک پر کلک کریں یا سائٹ پر پڑھنے کے لیے نیچے اسکرول کریں۔
updatedبدھا کےدیس میں

سفر نامہ...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, December 26, 2018 - 12:23
مصنف: کچھ دل سے

ادب کی ضرورت اور اہمیت۔ خطبہ جمعہ مسجد نبوی (اقتباس)امام و خطیب: جسٹس صلاح بن محمد البدیر حفظہ اللہ14 ربیع الثانی 1440 بمطابق 21 دسمبر 2018ترجمہ: شفقت الرحمٰن مغلبشکریہ:...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, December 26, 2018 - 12:17


تحریر : ڈاکٹر محمد عقیل

"علم کے کتنے درجات ہوتے ہیں؟”
حضرت نے مجھ سے پوچھا۔ سوال بڑا اچانک تھا اور ادب بھی ملحوظ خاطر تھا اس لیے یہی جواب بن پڑا۔

"حضرت ہی بہتر جانتے ہیں؟”
"علم کے کتنے درجات ہوتے ہیں؟”
دوبارہ ذرا سخت لہجے میں پوچھا گیا۔ اب میں سمجھ گیا کہ جواب دینا ہی پڑے گا۔ تو میں نے عرض کیا:
” حضرت، علم کے تین درجات ہوتے ہیں، ایک علم الیقین ، ایک عین الیقین اور ایک حق الیقین۔”
"یہ علم کے درجات نہیں بلکہ کیفیات ہیں۔” وہاں سے جواب ملا ۔ اب میں خاموش ہوگیا تاکہ حضرت کا...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, December 25, 2018 - 12:45

آج برِّ صغير ہندوپاکستان کے مُسلمانوں کے عظيم رہنما قائداعظم محمد علی جناح کا يومِ ولادت ہے
قائداعظم کو الله سُبحانُهُ و تعالٰی نے شعور ۔ مَنطق اور اِستقلال سے نوازا تھا جِن کے بھرپُور اِستعمال سے اُنہوں نے ہميں الله کی نعمتوں سے مالا مال مُلک لے کر ديا مگر ہماری قوم نے اُس عظيم رہنما کے عمَل اور قَول کو بھُلا ديا جس کے باعث ہماری قوم اقوامِ عالَم ميں بہت پيچھے رہ گئی ہے
قائداعظم کا ايک پيغام ہے ” کام ۔ کام ۔ کام اورکام ”
مگر قوم نے کام سے دِل چُرانے کی عادت اپنا لی اور اپنی نا اہلی سے نظریں ہٹانے کی کوشش میں دوسرون پر الزام تراشی شروع کر دی

قائداعظم...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, December 25, 2018 - 11:39
مصنف: کچھ دل سے
اکتاہٹ سے بچیے۔ خطبہ مسجد حرام (اقتباس) امام وخطیب: فضیلۃ الشیخ ڈاکٹر فیصل بن جمیل غزاوی حفظہ اللہجمعۃ المبارک 7 ربیع الآخر 1440ھ بمطابق 14 دسمبر 2018ءترجمہ: محمد عاطف الیاسبشکریہ: عمر وزیر
ہر طرح کی حمد وثنا اللہ تعالیٰ ہی کے لیے ہے۔ وہی کائنات کو پیدا کرنے والا ، دنیا کی ہر چیز کو تخلیق کرنے والا ہے۔ وہی رزق بانٹنے والا ، وہی عطائیں دینے والا اور نوازشیں کرنے والا ہے۔ میں گواہی دیتا ہوں کہ اللہ کے سوا...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, December 23, 2018 - 15:37
"سامان سو برس کا "۔  100 کا ہندسہ زندگی کے کلینڈر میں جس موڑ پر بھی آئے  اپنے اندر  ایک عجیب سی کشش  اور خوشی رکھتا ہے جیسے ایک سنگِ میل چھو لیا ہو۔۔۔یوں کہ جیسے  بہت کچھ مکمل ہو گیا ہو۔انسانی عمر میں 100 برس اگر ناممکنات میں سے ہیں تو  ذہنی وجسمانی قوا کی مجبور ی اور لاچاری کی علامت بھی ہیں۔۔رب کی بنائی انسانی جان کی مشینری کا سو برس تک  پہنچنا محال ہے۔اس میں شک نہیں کہ   سو تو بہت دور کی بات ہےہم انسان تو اسی سے  نوے برس بھی اپنے مکمل ہوش وحواس ،جسمانی اور ذہنی  طاقت کے ساتھ زندہ نہیں رہ سکتے۔پچاس کا ہندسہ پھلانگتے ہی انسانی عمر میں...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, December 23, 2018 - 11:20
نوجوان نے سر اٹھایا تو اس کے چہرے پر ایک فاتحانہ مسکراہٹ تھی، “تم ہمیں کبھی بھی شکست نہ دے سکو گے”۔ نوجوان کا مخاطب ایک درمیانہ قامت کا انسان تھا ، جس کے لباس سے اس کے پیشے یا معاشرتی حیثیت کی...

طفل مکتب کی تحریر کا یہ اقتباس آپ مکمل شکل میں وہیں ملاحظہ فرما سکتے ہیں۔ ...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, December 22, 2018 - 12:18
چار دن کی زندگی میں دو ٹوک رویے جانے والوں کے دل میں گرہ باندھ دیتے ہیں۔جنہیں کھولنے کی کوشش کریں تو اور سختی میں کس جاتے ہیں۔ مذہب و عبادت ، تعلیم و تربیت اور مشورہ و نصیحت جب اپنا اثر دکھانا بند کر دیں تو عقل کے بند دروازوں پر دستک بیجا مداخلت تصور کی جاتی ہے۔دیواروں سے سر ٹکرانے میں دروازے نہیں کھلا کرتے۔بولنے ،لکھنے اور سننے ، پڑھنے میں سُر جیسا تال میل ہوتا ہے۔ بولنے اور لکھنے والے دو طرح سے اپنے اظہار کو پیش کرتے ہیں ۔ اپنی کہہ کر خاموش رہنے والے اور دوسروں کو دیکھ کر کہنے والے۔آج کامیاب وہ کہلاتے ہیں جو کسی سے اسی کی بات کہہ دیتے ہیں۔زندگی ایک ایسی عمارت ہے جس کی آخری منزل پر کھڑے ہو...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, December 21, 2018 - 17:11
مصنف: ابو شامل

میں فلموں کو ادب کی ایک جدید شکل سمجھتا ہوں، گو کہ یہ ادب کی ذرا بے ادب قسم ہے لیکن آنکھوں دیکھی پر یقین بھی زیادہ آتا ہے اس لیے فلم کی اثر انگیزی بہت زیادہ ہے۔ کچھ ایسا ہی اثر مشہور ڈائریکٹر مارٹن اسکورسیز کی فلم "Silence" دیکھ کر ہوا تھا۔ یہ فلم جاپان میں عیسائیت کی تبلیغ کے لیے جانے والے چند مبلغین کی کہانی ہے۔ اس فلم کی کہانی کے کئی پہلو ہیں جیسا کہ فلم مذہب کے حوالے سے مختلف انسانوں کے مختلف رویّوں کو اچھی طرح عکاسی کرتی ہے۔ بہرحال، سخت اداسی طاری کر دینے والی فلم ہے لیکن اس کو دیکھتے ہی ذہن میں ایک خیال کوندا، ایک منظر اُبھرا، زمان و مکان تبدیل ہوئے اور پہنچ گیا سولہویں صدی کے...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, December 21, 2018 - 16:47
مصنف: کچھ دل سے

«« آج کی بات »»
ہر بات کہہ دینے کی نہیں ہوتی، کچھ سننے کی بھی ہوتی ہیں ،کچھ سمجھنے کی ، کچھ جذب کر لینے کی اور کچھ سہہ جانے کی .....!!!!...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, December 21, 2018 - 09:38
مصنف: محمد وارث
ہر کجا ویراں بوَد آنجا اُمیدِ گنج ہستگنجِ حق را می نجوئی در دلِ ویراں چرا؟
جہاں کہیں بھی ویرانہ ہو وہاں سے خزانہ ملنے کی امید ہوتی ہے، تو پھر تُو ویران اور ٹوٹے ہوئے دلوں میں حق کے خزانے کی تلاش کیوں نہیں کرتا؟
----------

تو گُل و من خار کہ پیوستہ ایم
بے گُل و بے خار نباشد چمن

تُو پھول ہے اور میں کانٹا ہوں کہ دونوں باہم پیوستہ ہیں، پھول اور کانٹوں کے بغیر چمن نہیں ہوتا (دونوں باہم موجود ہوں تو چمن کا بھی وجود ہوتا ہے)۔----------
دل و جاں شہیدِ عشقت، بہ درونِ گورِ قالبسوئے گورِ ایں شہیداں، بگذر زیارتے کن
(میرے) جسم کی قبر میں دل اور جان تیرے عشق...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, December 21, 2018 - 00:34
مصنف: شعیب صفدر

ابے آج کل کیا کر رہا ہے
"کچھ نہیں بس فارغ ہو وقت برباد کر رہا ہوں"
اچھا! ایسا کر پھر یو ٹیوب پر ڈاکومینٹر...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, December 20, 2018 - 15:16
غزل 
تو اور ترے ارادے
چل چھوڑ مسکرا دے

دل کون دیکھتا ہے
پھولوں سے گھر سجا دے

میں خود کو ڈھونڈتا ہوں
مجھ سے مجھے چھپا دے

سُن اے فریبِ منزل
رستہ نیا سُجھا دے

سوچوں نہ  پھر وفا کا
ایسی کڑی سزا دے

مرتا ہوں پیاس سے میں
تو زہر ہی پلا دے

منظر یہ ہو گیا بس
پردے کو اب گر ادے

نامہ فراق کا ہے
لا! وصل کا پتہ دے

پھر مائلِ یقیں ہوں
پھر سے مجھے دغا دے

احمدؔ غزل کہی ہے
جا بزم میں سنا دے
محمد احمدؔ

...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, December 20, 2018 - 12:43

خودی کی موت سے مغرب کا اندرون بے نور
خودی کی موت سے مشرق ہے مبتلائے جذّام
خودی کی موت سے روح عرب ہے بے تب و تاب
بدن عراق و عجم کا ہے بے عرق و عظّام
خودی کی موت سے ہندی شکستہ بالوں پر
قفس ہوا ہے حلال اور آشیانہ حرام
خودی کی موت سے پیر حرم ہوا مجبور
کہ بیچ کھائے مسلمانون کا جامہء احرام

جس بندہء حق بیں کی خودی ہو گئ بیدار
شمشیر کی مانند ہے برّندہ و برّاق
اس کی نگہ شوق پہ ہوتی ہے نمودار
ہر ذرّے میں پوشیدہ ہے جو قوّت اشراق
اس مرد خدا سے کوئی نسبت نہیں تجھ کو
تو بندہء آفاق ہے ۔ وہ صاحب آفاق
تجھ میں ابھی پیدا...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, December 19, 2018 - 15:51
مصنف: کچھ دل سے

~√~ أج کی بات ~√~
اِیمان داری چار عادتوں کا پیکج ہے ۔1 - وعدے کی...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, December 18, 2018 - 22:58

سنانے کو ایک سادہ نظم چاہتا ہوںتنہائی میں ایک رویدِ بزم چاہتا ہوں
مقرر مقرر کا نہیں میں نقشِ بیمارسینوں پر لکھتا تراشا قلم چاہتا ہوں
زمینِ کاغذ پہ نہیں بچھاتا ردا کے پھولبادِ معطر کو اطہرِ انعم چاہتا ہوں


خندہ جبین / محمودالحق
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, December 17, 2018 - 20:13
مصنف: محمد اویس

جو بھی نیا کام کرنا ہے،یا خود میں کوئی تبدیلی لانی ہے تواسے ابھی سے ہی شروع کیجئے،کیونکہ اگر
مناسب وقت کا انتظار کرنا ہے،تو وہ کبھی نہ آنے والا ہے۔
کیونکہ ہر دفعہ کچھ وجوہا ت ایسے سامنے آجائیں گے،جب آپ سمجھیں گے کہ جب یہ ختم ہو جائیں،تو پھر شروع کروں گا۔اوریقین مانئے آپ کبھی بھی وہ کام شروع نہ کر سکیں گے۔۔
سو جو بھی کرنا ہے۔۔۔۔ابھی کر۔۔۔۔۔۔

...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, December 15, 2018 - 14:51
غزل

سڑکوں پہ گھومنے کو نکلتے ہیں شام سے
آسیب اپنے کام سے، ہم اپنے کام سے

نشّے میں ڈگمگا کے نہ چل، سیٹیاں بجا
شاید کوئی چراغ اُتر آئے بام سے

غصّے میں دوڑتے ہیں ٹرک بھی لدے ہوئے
میں بھی بھرا ہُوا ہوں بہت انتقام سے

دشمن ہے ایک شخص بہت، ایک شخص کا
ہاں عشق ایک نام کو ہے ایک نام سے

میرے تمام عکس مرے کرّ و فر کے ساتھ
میں نے بھی سب کو دفن کیا دھوم دھام سے

مجھ بے عمل سے ربط بڑھانے کو آئے ہو
یہ بات ہے اگر، تو گئے تم بھی کام سے

ڈر تو یہ ہے ہوئی جو کبھی دن کی روشنی
اُس روشنی میں تم بھی لگو گے...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, December 15, 2018 - 10:05

ایک خاتون کی عادت تھی کہ وہ روزانہ رات کو سونے سے پہلے اپنی دن بھر کی خوشیوں کو ایک کاغذ پر لکھ لیا کرتی تھی

ایک شب اس نے لکھا کہ
میں خوش ہوں کہ میرا شوہر تمام رات زور دار خراٹے لیتا ہےکیونکہ وہ زندہ ہے اور میرے پاس ہے
یہ اللّٰه کا شکر ہے
میں خوش ہوں کہ میرا بیٹا صبح سویرے اس بات پر جھگڑا کرتا ہے کہ رات بھر مچھر،کھٹمل سونے نہیں دیتے یعنی وہ رات گھر پہ ہی گزارتا ہے آوارہ گردی نہیں کرتا
اس پر بھی اللّٰه کا شکر ہے۔
میں خوش ہوں کہ ہر مہینہ بجلی، گیس، پانی،پٹرول وغیرہ کا اچھا خاصا ٹیکس ادا کرنا پڑتا ہے یعنی یہ سب چیزیں میرے پاس میرے استعمال میں ہیں اگر یہ نہ...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, December 12, 2018 - 17:46
مصنف: کچھ دل سے
↩ آج کی بات ↪
انسان تین حالتوں میں سچائی کی انتہا پر ہوتا ہے ،◀ شدید غصے میں◀ شدید دکھ میں اور◀ انتہائی خوشی کے وقت
تعجب کی بات ہے ان تین حالتوں ہی میں انسان زندگی کی اصل لذت سے لطف اندوز ہوسکتا ہے...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, December 11, 2018 - 12:32
مصنف: کچھ دل سے
No automatic alt text available.صاف دل؛ ایک عظیم نعمت اور ضرورت - خطبہ جمعہ مسجد نبوی (اقتباس)29 ربیع الاول1440 بمطابق 07 دسمبر 2018امام و خطیب:  ڈاکٹر جسٹس حسین بن عبد العزیز آل شیخترجمہ: شفقت الرحمٰن مغلبشکریہ: دلیل ویب
فضیلۃ الشیخ ڈاکٹر جسٹس حسین بن عبد العزیز آل شیخ حفظہ اللہ نے 29...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, December 11, 2018 - 12:07
فلاحی ریاست اپنے شہریوں کو ہاتھ پھیلانے سے باز رکھنے کے لئے بلا امتیاز مدد فراہم کرتی ہے۔ بچوں کی تعلیم اور صحت کا خصوصی بندوبست کرتی ہےتو بوڑھوں کے علاج معالجہ و خوراک کا خیال رکھتی ہے۔قابل اور ذہین نوجوان سفارش کی سیڑھی کے بغیر بلندیاں چھونے کے قابل بنائے جاتے ہیں۔رٹے لگانے سے رٹے رٹائے نتائج حاصل نہیں کئے جاتے بلکہ خودانحصاری کی تعلیم دی جاتی ہے۔ خودکفالت کے سبق میں عزت و احترام آدمیت کا مقام پیدا کیا جاتا ہے۔کھیل کے میدان آباد رکھے جاتے ہیں۔آگے بڑھنے کے لئے تنگ گلیوں سے گزرا جاتا ہے۔راستہ دینے پر شکریہ ادا کیا جاتا ہے۔پیدل چلنے والوں کو روندا نہیں جاتا۔پاؤں سے چلنے والے پاؤں سے تیز رفتاری...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, December 11, 2018 - 03:03
عدلیہ کا کردار بہت کلیدی ہوتا ہے۔ یہ ایسا ادارے ہے جو عدل کی فراہمی کا ضامن  ہے۔ اور عدل کرنے والے عادل کہلاتے ہیں۔ جن کو منصف یا جج بھی کہا جاتا ہے۔ مختلف زبانوں میں۔  اگر ہم دیکھیں تو یہ ایسا محکمہ یا ادارہ ہے جس کے ساتھ زندگی کے ہرشعبے  کا تعلق  ہوتا ہے تفصیل میں جانے سے پہلے ایک نظر انصاف پر ڈالی جاوے تو عین مناسب ہوگا۔ انصاف کی تعریف تو کوئی وکیل یا جج صاحب ہی بہتر طور پر کرسکتے ہیں۔ لیکن میں بطور لے مین یہ کہہ سکتا ہوں کہ انصاف کا متضاد بے انصافی ہے۔   گویا بے انصافی کو ختم کرنے کےلے انصاف کی ضرورت ہے۔ جیسے اندھیرے کا متضاد روشنی ہے۔ اور روشنی سے ہی...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, December 10, 2018 - 17:21
مصنف: کچھ دل سے

سفید کپڑے پر انار کے دانے کے چند چھینٹے گر جائیں تو ساری عمر دھو دھو کر بھی وہ کپڑا واپس پہلے سا سفید نہیں ہوتا۔ یہ سفید کپڑا آپ کا کردار ہے۔ اسے سنبھال سنبھال رکھیے۔
 از...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, December 10, 2018 - 11:04

پختہ افکار کہاں ڈھونڈنے جائے کوئی
اس زمانے کی ہوا رکھتی ہے ہر چیز کو خام
مدرسہ عقل کو آزاد تو کرتا ہے مگر
چھوڑ جاتا ہے خیالات کو بے ربط و نظام
مردہ ۔ لادینی افکار سے افرنگ میں عشق
عقل بے ربطیء افکار سے مشرق میں غلام

کلام ۔ علامہ محمد اقبال

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, December 9, 2018 - 18:44
مصنف: عامر منیر
مجھے علامہ اقبال کو ٹھیٹھ اکیڈمک معنوں میں فلاسفر ثابت کرنے میں کوئی دلچسپی نہیں، بلکہ وہ خود بھی اپنی شاعری میں فلسفے پر جیسی تنقید کرتے ہیں، اس کے پیش نظر مجھے یقین ہے کہ خود کو فلسفی کہلانا ہرگز نہ پسند کرتے۔ وہ ایک مفکر اور مصلح تھے، بدلتے ہوئے زمانے کی الجھنوں اور سوالات سے نبردآزما ایک عبقری تھے۔
مکمل تحریر کے لئے یہاں کلک کریں »
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, December 8, 2018 - 06:46

ٹوائلاٹ زون ٹی وی سیریل کی ایک قسط ‘کک دا کین‘ دیکھ کر بڑھاپے کی اصل کا خیال آیا. اس قسط میں ایک سن رسیدہ شخص جو اولڈ ہوم میں اپنے پرانے دوستوں کے ساتھ رہتا ہے اس نتیجے پر پہنچتا ہے کہ ان کے بوڑھے ہونے کی وجہ یہ ہے کہ انہوں نے بچوں جیسے کھیل چھوڑ دیے ہیں اور اپنا بچپنا کھو دیا ہے۔

میری دانست میں بوڑھا ہونے کا مطلب یہ ہے کہ دنیا اجنبی ہوتی جائے، جن حقیقتوں کے ساتھ آپ پلے بڑے ہوں، وہ تبدیل ہوتی...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, December 5, 2018 - 18:39
مصنف: عامر منیر
اورنگزیب کے ہاتھوں سرمد کے قتل کا واقعہ جس طرح بیان کیا جاتا ہے، اس سے تاثر ملتا ہے کہ وہ وحدت ادیان کے قائل اور صوفیاء کے اس نوفلاطونی مکتب فکر سے تعلق رکھتے تھے جو نیک و بد کے روایتی مذہبی تصور کو درخور اعتناء نہیں سمجھتا۔ لیکن امشب رباعیات سرمد کی ورق گردانی سے یہ خوشگوار حیرت ہوئی کہ اپنی رباعیات میں سرمد ٹھیٹھ اسلامی روایت کے پیرو ایک صوفی ملتے ہیں جو زاہد پر اس کی ریاکاری اور منافقت کے سبب تنقید ضرور کرتے ہیں، لیکن ان کی یہ تنقید کہیں بھی دینی روایات و شعائر کے تمسخر میں نہیں ڈھلتی۔
مکمل تحریر کے لئے یہاں کلک کریں »...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, December 5, 2018 - 11:55
سوشل میدیا اسٹیٹس یا دُکھوں کے اشتہاراز : محمد احمدؔ
پہلے دنیا میں عمومی طور پر دو طرح کے لوگ ہوتے تھے۔ یعنی لوگ دوطرح کے رویّے رکھتے تھے۔ کچھ لوگ ایکسٹروورٹ (باہر کی دُنیا میں جینے والے) ہوتے تھے اور چاہتے تھے کہ جو کچھ اُن پر بیت رہی ہے وہ گا گا کر سب کو بتا دیں ۔ وہ ایک ایک کو پکڑتے اور اپنا غم خوشی اُس کے گوش و گزار کر دیتے اور اس طرح اُنہیں صبر آ جاتا تھا۔

دوسری قسم کے لوگ وہ ہوتے جو انٹروورٹ (اپنے دل کی دنیا میں بسنے والے) ہوتے اور جو اپنے دل کی بات اپنے دل میں ہی رکھتے تھے ۔ کسی کو نہ بتاتے کہ اُن پر کیا بیت رہی ہے یا وہ کیا سوچ رہے ہیں۔ دوست احباب اُن کی اُداسی کا...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, December 5, 2018 - 10:43

سورة 2 البَقَرَة آیت 42 ۔ وَلَا تَلۡبِسُوا الۡحَـقَّ بِالۡبَاطِلِ وَتَكۡتُمُوا الۡحَـقَّ وَاَنۡتُمۡ تَعۡلَمُوۡنَ

باطل کا رنگ چڑھا کر حق کو مشتبہ نہ بناؤ اور نہ جانتے بوجھتے حق کو چھپانے کی کوشش کرو

سورة 5 المَائدة آیت 8 ۔ ييٰۤـاَيُّهَا الَّذِيۡنَ اٰمَنُوۡا كُوۡنُوۡا قَوَّا امِيۡنَ لِلّٰهِ شُهَدَآءَ بِالۡقِسۡطِ‌ وَلَا يَجۡرِمَنَّكُمۡ شَنَاٰنُ قَوۡمٍ عَلٰٓى اَ لَّا تَعۡدِلُوۡا‌ ؕ اِعۡدِلُوۡا هُوَ اَقۡرَبُ لِلتَّقۡوٰى‌ وَاتَّقُوا اللّٰهَ‌ ط اِنَّ اللّٰهَ خَبِيۡرٌۢ بِمَا تَعۡمَلُوۡنَ‏

اے لوگو جو ایمان لائے ہو ۔ اللہ کی خاطر راستی پر قائم رہنے والے اور انصاف کی گواہی...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, December 4, 2018 - 15:51
مصنف: کچھ دل سے
⇉ آج کی بات ⇇
کبھی کسی کے اچھے مقدر کو حسرت سے تکتے ہوئے اپنی تقدیر بننے کی دعا نہ کرنا ورنہ اُس کے مقدر کے سارے کانٹے بھی اپنی پلکوں سے چننے پڑ جائیں گے....
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, December 4, 2018 - 12:23
مصنف: کچھ دل سے
 sky and outdoor
اسلام میں مسلمان کے سماجی حقوقخطبہ جمعہ مسجد نبوی ( اقتباس)22 ربیع الاول 1440 بمطابق 30 نومبر 2018امام و خطیب:  ڈاکٹر عبد الباری بن عواض ثبیتیترجمہ: شفقت الرحمٰن مغلبشکریہ: اردو مجلس فورم
فضیلۃ الشیخ ڈاکٹر عبد الباری بن عواض ثبیتی حفظہ اللہ نے مسجد نبوی میں 22 ربیع...
زمرہ: اردو بلاگ

Pages

Subscribe to بلاگستان فیڈز