بلاگستان

تاریخ اشاعت: منگل, May 1, 2012 - 13:14
جی میل اور بلاگر میں اپنی دستخط کیسے شامل کریں۔
جی میل اور بلاگر میں اپنی دستخط شامل کرنا ایک انتہائی سہل بات ہے ! یہ سیٹنگس پہلے سے وہاں موجود ہوتی ہے لیکن ہم میں سے اکثر افراد اس سے لا علم ہوتے ہیں۔اس سے پہلے کہ ہم آپ کو اس کا طریقہ کار بتائے آپ کو یہ فیصلہ کرنا ہوگا کہ آیا آپ کو اپنی تحریر میں دستخط شامل کرنا ہے یا کسی Online signature creator  کی مدد حاصل کرنی ہے۔ اگر آپ  کو اپنی تحریر میں دستخط شامل کرنا ہے تو ہمیں ایک scanner  کی مدد درکار ہوگی۔ کسی کاغذ پر اپنی دستخط کیجیے اور اب اسے scanner کی مدد سے اپنے کمپیوتر میں محفوظ کیجیے۔ اگر ضرورت محسوس ہو تو کسی فوٹو...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, May 1, 2012 - 06:03
 یکم مئی  یومِ مہاراشٹر از  محمّد اسد اللہ      Muhammad     Asadullah یکم مئی مہاراشٹر میں اس ریاست کے قیام کی یاد میں منایا جا تا ہے ۔یکم مئی 1960 کو سابق بامبے اسٹیٹ کو مہاراشٹر اور گجرات ان  دو صوبوں میں تقسیم کیا گیا تھا ۔  تقسیمِ ہند کے بعد لسانی بنیاد پر ریاستوں کی تقسیم عمل میں آ ائی تھی ۔ یہ تقسیم Bombay    re-organization  Act  کے تحت عمل میں آ ئی تھی ۔ ہندوستان جب آ زاد ...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, April 29, 2012 - 15:57
مصنف: عمرانیات
سن 2005ء میں نے ایک اچھی سی نوٹ بک خریدی اور اسے بہ طور ڈائری استعمال کرنا شروع کیا۔زیادہ تر پسندیدہ شعر و شاعری لکھیخیال آیا ہےکہ کیوں نہ ریٹائرڈ ڈائری کو آن لائن کر دیا جاۓ۔تو اسی خیال کو عمل کا جامہ پہناتے ہوئے پہلی قسط میں حارث خلیق کی خوبصورت نظم حاضر ہے۔

ہاں مگر کیا واقعی بے آسرا ہوتے ہیں وہ؟قلب میں جن کے ہوں آزادی کے خواب!شہر کے یہ پا پیادہ لشکریان کے خوابوں اور عمل نے کتنی ہی صدیوں بعدپھر سے دھارا ہے ابابیلوکا روپمیں نے دیکھی ہے افق پر دور جو لمبی قطارآ گ میں پکی ہوئ مٹی کی چھوٹی گولیاںاپنی منقاروں میں تھامے آ رہی ہیں بے شمارابرہا اور اس کے ساتھییہ مہاوت اور سارے لشکری...
زمرہ: اردو بلاگ

مرزا سودا

تاریخ اشاعت: اتوار, April 29, 2012 - 14:22
wahab ijazhttps://plus.google.com/108810020715170166715noreply@blogger.com0
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, April 29, 2012 - 12:51


بلوگر کے لیے Do you like this post ? و جیٹ
قارئین آپ نے بہت ساری ویب سائٹس پر  یہ وجیٹ دیکھی ہوگی ۔ جب ہم نے پہلی مرتبہ یہ وجیٹ دیکھی تھی تو کافی appealing محسوس ہوئی تھی اور کچھ دنوں پہلے یونہی انٹرنیٹ پر "مٹر گشتی "کرتے ہوئے ہمیں اس widget کا کوڈ حاصل ہوا اور چونکہ آج ذرا فرصت بھی ہے تو ہم نے سوچا شاید کیوں نہ اس وجٹ کو آپ لوگوں کی نذر کیا جائے؟۔
...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, April 27, 2012 - 18:36
مصنف: آہنگ ادب
تھل دیس کو جانا ہے بچھڑے ہوئے ساتھی کو خود ڈھونڈ کے لانا ہے کانٹوں سے بھرا رستہ کچھ بات نہیں بنتی جب بخت ہو برگشتہ تھالی میں دانے دو راتوں کے اندھیرے میں ملتے ہیں دوانے دو بگلوں کی قطاریں ہیں گوری ترے ہاتھوں میں گجروں کی بہاریں ہیں آنگن میں اگی بیری پتھراؤمیں [...]
زمرہ: اردو بلاگ

حضرت امیر خسرو

تاریخ اشاعت: جمعہ, April 27, 2012 - 14:35
wahab ijazhttps://plus.google.com/108810020715170166715noreply@blogger.com0
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, April 27, 2012 - 13:09
مصنف: دریچہ
نہیں نہ تو میرا وفاقی یا صوبائی کابینہ میں اعلیٰ عہدے پر تقرر ہو گیا ہے کہ دوروں پر روانہ ہو جاؤں اور نہ ہی کسی سیاسی پارٹی میں شمولیت اختیار کر کے جلسے جلوسوں والے 'طوفانی' دورے شروع کئے ہیں۔ بس گزشتہ روز چکوال جانے کا اتفاق ہوا جسے میں نے دورۂ چکوال کا نام دے دیا۔ دورانِ سفر بہت سے دلچسپ چیزیں مشاہدے میں آئیں۔
پہلی یہ کہ جی۔ٹی۔روڈ سے چکوال کے لئے لنک روڈ پر مڑتے ہی عمارتوں کی دیواروں پر جلی حروف میں 'ہم راجہ پرویز اشرف تو اہم وفاقی وزارت ملنے پر دلی مبارکباد پیش کرتے ہیں' کے پیغامات لکھے نظر آئے۔ اور اگر میں یہ کہوں کہ دونوں اطراف پر ہر دوسری دیوار پر یہ پیغام لکھا ہوا ہے تو اس میں ہر...
زمرہ: اردو بلاگ

پہلی ڈیٹ

تاریخ اشاعت: جمعرات, April 26, 2012 - 19:05
وہ کافی دیر سے آئینے کے سامنے کھڑا اپنے بے ڈھنگے بالوں کو سیدھا کرنے کی کوشش کر رہا تھا اور بے ڈھنگی آواز میں گنگنا رہا تھا پی لوں تیرے نیلے نیلے ہونٹوں سے شبنم پی لوں تیرے گیلے گیلے ہونٹوں سے سرگم کبھی تم جو آئے زندگی میں بات بن گئی عشق مذھب عشق میری ذات بن گئی میں نے اسکی خوشی کی وجہ پوچھی تو اس نے تمسخر سے میری طرف دیکھا اور پھر اپنی بیہودہ اواز میں گنگنانے لگا پریتو محمد عبداللہhttps://plus.google.com/102848413842402001777noreply@blogger.com6
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, April 26, 2012 - 09:53


قمقموں سے بھرا ،چاروں اطراف روشنی پھیلاتا،قربتوں میں جگمگاتایہ شہر میرے پاک پروردگار کا بنایا ایک شاہکار ہے۔ روشنی کے سامنے رہوں تو میرا عکس مجھے روشن کر دے۔پلٹ جاؤں تو ایک جہاں روشن ہو جائے۔وہ ٹمٹماتے تاروں کے نظارے روشن کر دیتی ہے۔گھنٹوں انہیں دیکھنے سے جی نہ بھرے۔آنکھیں چکاچوند روشنیوں کے جلوے سے منور ہو جائیں۔بینائی کا سفر روشنی کی رفتار سے تیز ہے۔جو پلک جھپکنے میں کروڑوں میل کی مسافت طے کر لیتی ہے۔اگر جنت کا منظر آنکھوں میں بسا لے تو تسکین ایسی کہ نشہ ہونے لگتا ہے۔
ایک یہ بدن پل پل اکتاہٹ و بیزاری کی لت کا شکار رہتا ہے۔قدم اُٹھانے کی غلطی کریں تو گنتی پر اتر آتا ہے۔ہزار...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, April 26, 2012 - 02:47
انسان مجموعہ تضادات ہے یہ ہم سب جانتے ہیں ۔ ہمارے قول اور فعل میں کہیں نا کہیں تضاد ضرور ہوتا ہے ۔ غالبا یہ انسان کا کوئی موروثی نقص ہے ۔ بہت کم لوگ ہوتے ہیں جن میں یہ تضادات نہیں پائے جاتے  ان لوگوں پر مجھے ہمیشہ رشک آتا ہے۔ کیونکہ یہ تضادات […]
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, April 25, 2012 - 23:08

کوئی عام شخص جج کے سامنے گریبان کھول کر چلا جائے تو اسے عدالت کی توہین تصور کیا جاتا ہے اور اُدھر اعلیٰ ترین حکومتی شخصیات نے ججوں کے گریبانوں پر ہاتھ ڈالا ہوا ہے لیکن کوئی پوچھنے والا نہیں۔ ملک کی سب سے بڑی عدالت ایک کے بعد ایک حکم دیے جارہی ہے اور حکومت ان احکامات کو صرف ردی کی ٹوکری میں نہیں پھینکتی، پہلے انہیں جوتوں تلے خوب رگڑتی بھی ہے۔ غریب کا بچہ انڈا چرالے تو اسے اندھیری کوٹھڑیوں میں بند کردیا جاتا ہے لیکن وزیراعظم کا بیٹا کروڑوں روپے ڈکارنے کا الزام لگنے کے باوجوگلچھرے اڑاتاپھررہا ہے۔ موجودہ حکمرانوں نے ایک نیا رواج متعارف کرایا ہے، جو جتنی زیادہ لوٹ مار کرتا...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, April 25, 2012 - 00:00
''کیا آپ مجھے اپنا نمبر دے سکتی ہیں،اصل میں ،میں چاہتا ہوں کے فیس بک کے علاوہ بھی آپ سے رابطے میں رہوں''
یہ جملہ مجھے اپنی ڈیڑہ سالہ فیس بکی زندگی میں سینکڑوں بار پڑھنے کو ملا(اس وقت میرا دل کرتا تھا یہ شخص اپنی چشم تصور میں مجھے نتھنے پھلاۓ دیکھ لیتا تو اسکی براستہ ترا جان بھی نکل سکتی تھی)۔ مجھے اپنا اسٹیٹس معلوم ہے اس لۓ میں نے نہیں دیا لیکن پھر خیال آیا جن لڑکیوں نے دیا ہے نمبر انکا حشر معلوم کر لوں:)۔۔۔
جب میری  سی آئ ڈی حرکت میں آئ تو لڑکیوں کے تجربات سن کے ہنسی آگئ،اور ان کی بےوقوفی پے دکھ بھی ہوا،''فیس بک پر ''یہ جس قدر تمیز سے بات کرتا ہے فون پر یہ اُتنا ہی گھٹیا ہے،...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, April 24, 2012 - 17:59
اسلام کا پہلا دور وحی کا تھا اور لوگوں نے اللہ کے آخری نبی صلی اللہ علیہ وسلم  کو اپنی آنکھوں سے دیکھا تھا،  ان کے سامنے دن رات قرآن نازل ہوتا تھا  اس لیے وہ  لوگ عقلی  دلائل و براہین کا مطالبہ کے بغیر حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کے ارشادات کو  بغیر چوں و چراں  کیے  پورے یقین سے قبول کرلیتے تھے، دوسرا  دور  تبلیغ کا آیا پوری دنیا میں اسلام پہنچا ، تیسرا دور قرآن و حدیث سے مسائل فقہ اخذ کرنے کا آیا، حدیث اور فقہ پر نا صرف مکمل تحقیق کی گئی بلکہ ان کی  تدوین بھی کی گئی،  چوتھا دور تقریبا ہارون رشید کے زمانے میں شروع ہوا جب یونانی...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, April 24, 2012 - 11:27


بلوگر کے لیے اڑتا ہوا ٹوٹر برڈ
قارئین ہمارے بلوگ پر اس پیارے سے  اڑتے ہوئے ٹوٹر برڈ نے آپ کی توجہ اپنی  طرف ضرور مرکوز کی ہوگی ؟کیا آپ بھی اپنے بلوگ  پر اس پرندے کو اڑتے ہوئے دیکھنا چاہتے ہیں؟ہمیں یہ کوڈ  محمد مصطفیٰ کے بلاگ www.mybloggertricks.com سے حاصل ہوا۔ہم آپ کا زیادہ وقت برباد نا کرتے ہوئے آپ کو کوڈ دیتے ہیں۔
اپنے بلوگر دیش بورڈ میں جا کر ٹیمپلیٹ پر کلک کریں۔اپنی ٹیمپلیٹ میں درج ذیل کوڈ  کنٹرول اور ایف دبا کر  تلاش کریں۔

</body>اب اس کے تھیک اوپر درج ذیل کوڈ  چسپاں کر دیں۔

<script
src='...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, April 23, 2012 - 19:46


اپنے آرٹیکلس چوری ہونے سے کیسے بچائیں؟
آج کی پوسٹ میں ہم آپ کے ساتھ ایک زبردست trick  شیئر کرنے جا رہے ہیں۔  کافی مرتبہ ایسا ہوتا ہے کہ آپ کسی موضوع پر بری عرق ریزی سے کوئی آرٹیکل تیا ر کرتے ہے لیکن بعض اوقات  کسی نیک انسان  کو آپ کا وہ کام ایسا پسند آ جاتا ہیکہ وہ copy rights  پرواہ نا کرتے ہوئے مفاد عامہ کی خاطر انتہائی نیک نیتی سے  اپنے بلوگ یا ویب پر اپنے نام کے ساتھ شائع کر دیتا ہے۔ اسی نیک نیتی کو روکنے کے لیے ہم آپ  کے ساتھ ایک کوڈ شیئر کر رہے ہیں۔اس کوڈ کی خاصیت یہ ہیکہ جب بھی کوئی آپ کا آرٹیکل کہیں  paste  کرنا چاہے گا آپ...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, April 23, 2012 - 16:52

   نوازشریف کی سیاچن کو یکطرفہ خالی کرنے کی بات بھی انتہائی مضحکہ خیز ہے.اس بات میں کوئی شک نہیں کہ سیاچن کی جنگ پاکستان اور بھارت پر بوجھ بن چکی ہے، ماہانہ کروڑوں روپے اس میں پھونکے جارہے ہیں، اگر یہی رقم فلاح وبہبود کے کاموں پر خرچ کی جائے تو بہت سے مسائل حل کیے جاسکتے ہیں، لیکن معاملہ اتنا سادہ نہیں ہے جتنا میاں صاحب نے بیان کیا ہے۔ وہ پوچھتے ہیں فوج سیاچن میں کیا کررہی ہے؟ میاں صاحب! فوج وہاں پر پاکستان کے دفاع کی جنگ لڑرہی ہے، سجیلے جوانوں نے بھارت کی پیش قدمی کو روکا ہوا ہے۔ نئی دہلی کی نظریں برف پوش پہاڑوں پر نہیں گلگت بلتستان اور شاہراہ قراقرم پر ہے۔ اگر پاک فوج جانوں کا...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, April 23, 2012 - 11:53
نامور قلمکار اشفاق احمد مرحوم کی کتاب "صبحانے فسانے" کا ایک اقتباس ہے :
اماں کو میری بات ٹھیک سے سمجھ آگئی. اس نے اپنا چہرہ میری طرف کئے بغیر نئی روٹی بیلتے ہوئے پوچھا
" تو اپنی کتابوں میں کیا پیش کرے گا؟"
میں نے تڑپ کر کہا : " میں سچ لکھوں گا اماں اور سچ کا پرچار کروں گا. لوگ سچ کہنے سے ڈرتے ہیں اور سچ سننے سے گھبراتے ہیں. میں انھیں سچ سناؤں گا اور سچ کی تلقین کروں گا."
میری ماں فکر مند سی ہو گئی. اس نے بڑی دردمندی سے مجھے غور سے دیکھا اور کوئیلوں پر پڑی ہوئی روٹی کی پرواہ...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, April 23, 2012 - 04:30

آج کل پولیو کے قطروں کے بارئے میں انتہائی گہما گہمی نظر آرہی ہے ۔صوبہ خیبر پختون خواہ کے چیف جسٹس کا حکم ہے کہ جو بھی بندہ کیس لے کر عدالت آئے گا تو اسکے پاس اپنے بچوں کو پولیو قطرئے پلانے کا سرٹیفیکیٹ بھی پیش کرنا ضروری ہے۔


اسکے ساتھ ڈی سی اوز کو یہ حکم...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, April 23, 2012 - 03:55

پھول کھلتے ہیں گلستان میں جلتا ہے بیاباں
رحمتوں کی ہر دم نوازش شکرِ کلمہ پر ہے زباں

گلِ نام میں کیا رکھا ہے خوشبو تو خود نامہ بریں
آندھی کے آم چنتے جاؤ بے پرواہ ہے باغباں

آنکھ سے گر لہو ٹپکے گوہر فشاں بن بھڑکے
نظر کرم ہو اس کی آگ بھی ہو جائے روحِ پاسباں

گھر یہ گر میرا ہے مکیں نظر میں کیوں جچتے نہیں
تن پوشاکِ مالابار قلب کیفیت غریباں

جواب پڑھ کر بھی جو سوال سے ہٹتے نہیں
اندھیروں میں بھٹکتے ڈھونڈتے پھر کیوں نیاباں

آفتاب کو دھکایا کس نے مہتاب کو چمکایا کس نے
زروں سے جو پہاڑ گرا دے وہی تو ہے نگہباں
...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, April 23, 2012 - 03:43

بہت مشکل میں ڈال دیا میرے کلامِ انتخاب کو
زمین کو ہے پردہ کھلا ہے سب آفتاب کو

چلو آج ایسے ہی میزان میں بات کرتے ہیں
روکو شاخِ شجر کو پھیلے جو گلِ بیتاب کو

جذباتِ قلب کو میری عقلِ گرہ سے نہ باندھو
قید میں رکھو ارمان جانے دو وصلِ سحاب کو

میرا گھر مجھے اچھا رہو اپنے محلِ پوشیدہ میں
چراغ تو جلتا نہیں روکو ہوا یا حباب کو

کھلی آنکھ سے جو دیکھتے وہ منظر میرا نہیں
قلب کو چیر دے قلم میرا انجمن احباب کو

ساز ردھم رنگ دھنک نہیں موم اشک بار میں
کاغذی پھولوں سے بھرتے کس خوشنما کتاب کو

۔۔۔٭۔۔۔

بر...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, April 23, 2012 - 02:42



گندم کی کھڑی پکی فصل کے قریب چنگاریوں کو ہوا نہیں دی جاتی۔محنت کی محبت کا جنازہ سیاہ خاک سے اُٹھایا نہیں جاتا۔بچپن کا بھولپن جوانی کی دلنشینی سے تھپتھپایا نہیں جاتا۔بڑھاپا جوانی کے در پہ دستک سے رکوایا نہیں جاتا۔کہیں تو کچھ ایسا ہے جو مزے سے نیند نہیں دیتا۔چین سے جاگنے نہیں دیتا۔ادھوری خواہشوں سے جینا لولی لنگڑی زندگی جینے سے پھر بھی بڑھ کر رہتا ہے۔مگر شخصیت کا ادھورا پن کبھی پہلی سے چودھویں کے چاند تو کبھی پندرھویں سے تیسویں کے چاند جیسا ہوتا رہتا ہے۔جس کا مقصد صرف دن گننے رہ جاتے ہیں۔
خیالوں میں پھول کھلانا نہایت آسان ہے مگر خوشبو صرف سونگھنے سے موجودگی کا احساس دلاتی...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, April 22, 2012 - 23:30
آج کل پولیو کے قطروں کے بارئے میں انتہائی گہما گہمی نظر آرہی ہے ۔صوبہ خیبر پختون خواہ کے چیف جسٹس کا حکم ہے کہ جو بھی بندہ کیس لے کر عدالت آئے گا تو اسکے پاس اپنے بچوں کو پولیو قطرئے پلانے کا سرٹیفیکیٹ بھی پیش کرنا ضروری ہے۔ اسکے ساتھ ڈی سی اوز [...]
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, April 21, 2012 - 16:28
انسان اگر صرف اپنے تخلیق ہونے کے مراحل کو ہی صرف یاد رکھ لے تو ساری زندگی بغیر کسی پریشانی کے گذار سکتا ہے........

مسئلہ شروع ہی وہاں سے ہوتا ہے جب انسان خالق کو چھوڑ کے مخلوق سے امیدیں لگا لیتا ہے.........

اس بار جب میں آخری مرتبہ مکہ مکرمۃ گیا تو میں نے وہاں بہت سی دعائیں مانگی مگر ایک دعا جو بکثرت مانگی وہ یہ تھی کہ "یا اللہ میرا دل اپنی جانب موڑ دے" اور اپنے سوا کوئی دوسرا دکھا ہی نہیں کہ جس سے دل لگاوں یا پھر کوئی امید لگاوں تیرے علاوہ کسی سے بھی........

اور اس بار ان شاءاللہ یہی امید ہے کہ اللہ میری یہ دعا ضرور قبول کرے گا آمین....

یہ بہت ہی...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, April 21, 2012 - 15:38
مصنف: عمرانیات
بسم اللہ الرحمن الرحیم

یہ میری پہلی پوسٹ ہے۔ اردو سے تعارف کیمپوٹر پر اردو لکھنے کے لئے ان پیج موجود تو تھا لیکن مجھے یہ سافٹ ویئر مشکل لگتا ہے۔ پھر گلوبل سائنس پر پاک اردو انسٹالر کے بارے میں مضمون پڑھا۔ اور فورا ڈاون لوڈ بھی کرلیا۔ یہ ایک بہترین پیکج ہے جس کے ڈاؤن لوڈ کرنےکا آپ کو اردولکھنے میں کوئی مشکل پیش نہیں آئی گی۔
بلاگ سے تعارفاردو بلاگنگ سے میرا تعارف اردو محفل اور اردو سیارہ سے ہوا۔ اردو سیارہ میں تو میلا لگا ہوا تھا بلاگرز کا۔ کچھ بلاگرز کو پڑھنا شروع کیا ۔ بلاگنگ کی تھوڑی سمجھ آئی تو اپنا بلاگ بنانے کا شوق چرایا۔میرا بلاگ - عمرانیات بلاگر پر بلاگ بنانا بہت...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, April 20, 2012 - 18:45
یہ مقام دراصل ایدریاتیکو گیسٹ ہاوس تھا جو کہ آئی سی ٹی پی کا حصہ ہے مگر مرکزی کیمپس سے ہٹ کر ہے۔ یہاں پرمعمول کی کاروائی کے بعدہمیں بتایا گیا کہ ہماراکمرہ تیسری منزل پر ہے اورہمیں پہلے سے موجود ایک صاحب کے ساتھ کمرہ بانٹنا ہو گا۔ ہم لفٹ سے تیسری منزل پر پہنچے اور صاحبِ کمرہ کو نیند سے جگایا۔یہ نائیجیریا سے تھے اور خاصے معقول آدمی تھے، آنکھیں ملتے ہوئے ہمیں خوش آمدید کہا اور ہم سے سفر کا حال ایم۔اے۔امینhttp://www.blogger.com/profile/04425754577499948453noreply@blogger.com1http://bayaadesydney....
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, April 18, 2012 - 14:50
مصنف: دن رت

منہ دھو کر جب اس نے مڑکر میری جانب دیکھا
مجھ کو یہ محسوس ہوا جیسے کوئی بجلی چمکی ہے
یا جنگل کے اندھیرے میں جادو کی انگوٹھی دمکی ہے

صابن کی بھینی خوشبو سے مہک گیا سارا دالان
اُف ۔۔۔ ان بھیگی بھیگی آنکھوں میں دل کے ارمان
موتیوں جیسے دانتوں میں وہ گہری سرخ زبان
دیکھ کر گال پہ ناخن کا مدھم سا لال نشان
کوئی بھی ہوتا میری جگہ پر ، ہوجاتا حیران

( منیر نیازی )


...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, April 17, 2012 - 23:01
 آسٹریلیا سے واپسی پر ہم نےسوچا تو یہ تھا کہ اب بیرونِ ملک جانا آسان نہیں ہوگا، مگر انسان کی سوچ مالک کی کرنی کے آگے بے بس ٹھہری سو ہم گذشتہ ہفتہ سامانِ سفر سمیت جناح انٹرنیشنل کی بین الاقوامی انتظار گاہ میں امارات کی ہوائی کمپنی کے تین عدد بورڈنگ کارڈ لیےبراجمان تھے اور کافی کے کش لے رہے تھے۔ہماری پرواز کا وقت دوپہر کے سوا بارہ بجے تھا اور منزل تھی اطالیہ کا ایک چھوٹا سا شہر ۔ اس سے پہلے جدّہ ایم۔اے۔امینhttp://www.blogger.com/profile/04425754577499948453noreply@blogger.com14http://bayaadesydney....
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, April 17, 2012 - 17:00
مصنف: فراز بیگ

کسی بھی قوم یا ملک کے لئے دو میں سے کوئی ایک ہی صورت ہوتی ہے . یا تو وہ حالت امن کی  ہوتی ہے یا جنگ کی . اسی طرح  ملکوں کی  جو  قسمیں معروف ہیں وہ  دار الاسلام اور دار الکفر،  اور  دار الحرب اور دار الامن ہیں. ان سب حالتوں اور قسموں کے لئے احکام اور فرائض اور واجبات کی تفصیلات میں فرق ہے اور کسی بھی مسلمان کے لئے یہ جاننا انتہائی ضروری ہے کہ وہ ان میں سے کس قسم کے احکامات کے ذیل میں آتا ہے اور اسی حساب سے اس کو اپنے اعمال کو ترتیب دینا چاہیے. یہ اتنا اہم سوال ہے جس کا جواب حاصل کرنا میرے نزدیک  ہرشخص کے لئے ضروری ہے. اسی لئے اس کے صحیح جواب کے حصول کے لئے میں اس خط...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, April 17, 2012 - 07:01
زندگی انسان کو ہمیشہ سے ہی پیاری رہی ہے۔موت کے سائے گر پھیل جائیں تو ویرانی ڈیرے ڈال لیتی ہیں۔ہونٹوں پہ مسکراہٹ ،آنکھوں میں تیرتے قطرہ نم سے خشک زمین پر بارش کی پہلی پھوار کی طرح بھینی بھینی خوشبو کے اُٹھنے تک محدود ہوتی ہے۔
جان جتنی پیاری ہوتی ہے غم جان اس سے بڑھ جاتی ہے۔دعاؤں کے لئے ہاتھ پھیلائے جاتے ہیں تو بد دعاؤں کے لئے جھولیاں۔توبہ کا دروازہ گناہوں کی آمدورفت کے لئے کھلا رکھا جاتا ہے۔گھر کے مکین مالک ہوتے ہے ،گلیاںمسافروں کی راہگزر بنی رہتی ہیں۔ مکین شک و شبہ میں  رہتے ہیں۔مسافر پلکوں پہ بٹھائے جاتے ہیں۔مکینوں سے محبت کا دعوی ،مسافروں سے پینگیں بڑھائی جاتی ہیں۔
جو قسمت...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, April 16, 2012 - 16:35
میں پشاور صرف ایک بار گیا ہوں لیکن پشاوری آئسکریم سے برسوں کا یارانہ۔ یہاں کراچی میں ہر دو گلیوں کے بعد نکڑ پر ایک پشاوی آئسکریم کی دوکان موجود ہے۔ بچپن میں ملنے والا جیب خرچ جب دو روپے کی رقم کو پہنچ جاتا تو ہم گھر کے قریب واقع خان صاحب کی دوکان...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, April 16, 2012 - 10:59
تاریخ کے ٹیچر کے کمرے میں داخل ہوتے ہی مانیٹر کہتاکلاس سٹینڈ۔ تمام طالب علم مؤدب کھڑے ہو جاتے۔ ٹیچر ہاتھ کے اشارے سے انہیں بیٹھنے کے لئے کہتا۔طالب علم روزانہ کی طرح اپنے اپنے بستوں سے کتابیں اور نوٹ بکس نکالتے۔ انہیں ہر روز ایک نئے سبق کو پڑھنے کی عادت سالہاسال سے تھی۔ ہر اگلی جماعت میں ایک کے بعد ایک نئی سبق آموز کہانی ان میں اخلاقی ، مذہبی اور نفسیاتی تربیت کے پہلوؤں کو اجاگر کرتی۔ انہیں ہمیشہ تاریخ کا آئینہ دکھا کر سمجھانے کی کوشش کی جاتی رہی۔کیسےٹیپو سلطان نے اپنے دشمن کو میدان جنگ میں گھوڑا پیش کیا۔ وہ زمانہ ٹیکنالوجی کا نہیں تھا۔قلعوں پر پتھر برساتی منجنیق ہی جدید ترقی کا شاخسانہ تھی۔...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, April 15, 2012 - 23:56
ماں  ایک رشتہ ، ایک جذبہ ، قربانی کی مثال ، محبتوں کا گہوارہ ، خوشیوں کا پہناوہ ، غموں   کے بادل سے اوپر  صبر کے پہاڑ کی چوٹی ۔
 گود اپنی میں سر  سہلاتی ،پیار سے تھپتھپاتی ، آنکھوں سے جھولا جھولاتی ۔ راتوں  میں تیری دھڑکنوں کا  پہرہ  ،  انگلی ہی تیری   میرا سہارا ،  قدموں کا  راستہ ،سانسوں سے جڑا میرا کنارہ ۔
تیرا ہی وجود تھا تجھ میں سمایا رہا ۔ اپنےقلب محبت کو مجھ سے زیادہ تم نے بھی نہ سنا ہو گا۔ میرے قلب نے پہلی دھڑکن تیرے قلب سے  سیکھی۔وجود سے سینچ کر اپنی محبت کا پہلا گھونٹ تم نے مجھے پلایا۔ لفظ زمانے نے...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, April 13, 2012 - 08:49
راستے میں جو کٹا وہ زادِ سفر میرا نہ تھا
ہوش میں نہ تھا جو کھویا وہ صبر میرا نہ تھا

پروازمیں کوتاہِ نگاہی نے یوں شرمسار کیا
نشانہ پر جو نہ لگا وہ دعائے اثر میرا نہ تھا

یہ ہاتھ خود چھوٹ کر ہاتھ سے جدا ہو گیا
گلستان جلا جس سے وہ شرر میرا نہ تھا

آس نے یاس سے ہٹ کر خود کو پاس کر لیا
بارانِ رحمت میں پھیلتا ہر ابر میرا نہ تھا

مجھے میری تلاش ہے تو اپنے انتظار میں
نسیمِ جاں میں جو رہ گیا وہ ثمر میرا نہ تھا

اتنا بھی کیا کم ملا پھر انتظار میں بیٹھ گیا
یہ فلکِ جہاں اس کا کوئی امبر میرا نہ تھا

جب لوٹنا ہی لکھا...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, April 13, 2012 - 08:25

جب آسمان نے خود ہی چن لیا تو کوئی کیا کہے
دل نے جب خود ہی سن لیا تو کوئی کیا کہے

لہر بے کس کو طلاطمِ طوفاں میں ساحل ہی سہارا
شاہ زور جوانی نے ڈھل کر بچپن لیا تو کوئی کیا کہے

قطا در قطار یہ پرزے بیکار اُٹھاتے بدن و بار ہیں
روحِ کلام سے طریقت نے جو لہن لیا تو کوئی کیا کہے

انصافِ ترازو کے حدِ تجاوز سے جو جھول گیا
جلتے گلستان میں اپنا چمن لیا تو کوئی کیا کہے

سمجھاتے مجھ کو کہ ہوسِ نصرت کا انساں ہو جاؤں
گل نے مِٹ کر خار سے َامن لیا تو کوئی کیا کہے

تاریک راستوں میں جلتی روشن یہ کیسی بہزاد ہے
آب ہی آب میں سراب...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, April 12, 2012 - 15:37
مصنف: دن رت
محبت کرنے والے دل

محبت کرنے والے دل
بس انکا ایک ہی محور
بس انکا ایک ہی مرکز
بس انکی ایک ہی منزل
بس انکی جستجو کا اور تڑپ کا
ایک ہی حاصل
انہیں بس ایک ہی دھن ہے
خدا محبوب کو ان کے
ہمیشہ شادماں رکھے
نا اسکا دل کبھی ٹوٹے
نا کوئی سانحہ گزرے
کوئی غم چھو نہیں پائے
...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, April 11, 2012 - 12:50
مصنف: دن رت

                                              یہاں ”عنایت سویٹس” بہت مشہور دکان ہے،جہاں سب پاکستانی چٹ پٹی اور مزےدار چیزیں کھانے کو ملتی ہیں۔پکوڑے، سموسے، دہی بھلے، فروٹ چاٹ، فالودہ، ہر قسم کی مٹھائی ۔ بحرین میں اور بھی سویٹس کی دکانیں ہیں پر عنایت سویٹس کا کوئی ثانی نہیں۔ جناب کم و بیش تیس سال سے یہاں مقیم ہیں، اور ماشاءاللہ بہت اچھا بزنس کر رہے ہیں۔

میرا دل کچھ چٹ پٹا کھانے کو کر رہا تھا، اپنے کولیگ سے ذکر کیا تو اس کا بھی دل للچایا۔ دونوں گپیں مارتے، بازار سے ہوتے عنایت کی دکان پر پہنچے۔ رستے میں میں زکریا صاحب کا ذکر کر رہا تھا جو...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, April 10, 2012 - 15:50
مصنف: دن رت

کل ایک مارننگ شو کی رپیٹ ٹیلی کاسٹ دیکھی۔ جس کا موضوع یہ سوال تھا

” کیا انعم کو عزیر کو معاف کر دینا چاہئے؟”

ہوسٹ رو رہی تھی۔ عزیر رو رہا تھا۔ انعم رہ رہی تھی۔ اُن دونوں کی  پیاری معصوم سی تین چار سال کی بیٹی باپ کو دو ماہ بعد دیکھ کر اُس سے لپٹ گئی، اور رونے لگی۔ اُس بچی کو دیکھ کر میرا دل بھی بھر آیا۔ جو نہیں جانتی تھی کہ وہ اس پروگرام میں کیوں آئی ہے، اُس کا باپ اتنے دن بعد اُس سے کیوں ملا ہے، اُس کی ماں اپنے خاوند سے الگ کیوں رہ رہی ہے۔

میزبان کے کہنے پر جب بچی نے...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, April 10, 2012 - 12:12
آج کل ملکی اور بین الااقوامی حالات ایسے ہیں آپ   ٹیلی ویژن  دیکھ لیں، ریڈیو پر خبریں سن لیں یا اخبار پڑھ لیں آپ کو ہر طرف مایوسی ہی مایوسی اور  ٹینشن ہی ٹینشن نظر آئے گی ، مسلمانانِ عالم پوری  دنیا میں ذلت و رسوائی اور مسکنت سے دوچار ہیں،    ہر طرف مار دھاڑ، شور شرابہ، ہنگامے ، فتنہ و فسادہے’ ظلم و زیادتی ، افراط و تفریط ،  خودکشیاں ، لوٹ کھسوٹ ، استحصال و استیصال ہے ۔ جس کی لاٹھی اس کی بھینس  کا قانون نافد ہے۔ راعی و رعایا’ آجر واجیر اور میاں بیوی میں سے ہر کوئی بے سکونی و بے مروتی کا شکار ہے۔ دنیا میں مسلمانوں کی  روتی عورتیں...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, April 9, 2012 - 20:34

السلام علیکم ورحمتہ اللہ
وولٹ، ایمپئیر اور واٹ کے درمیان تعلق کو اس اینیمیشن  کے ذریعے سمجھیں امید ہے  کہ آپ لوگوں کو ذیادہ بہتر طریقے سے سمجھ آجائے گا ۔
اس اینیمیشن کو سمجھنے سے پہلے درج ذیل لنک پر کلک کرکے برقی اکائیاں- یعنی وولٹ ایمپئیر اور واٹ کے بارے میں مختصراً پڑھ لیں تاکہ آپ کو اس اینیمیشن کو سمجھنے میں آسانی ہو۔۔
برقی اکائیاں- وولٹ، ایمپئیر، واٹ

 

اس سرکٹ میں ایک وولٹ برقی دباؤ پر ایک ایمپئیر کرنٹ فراہم کیا گیا ہے جس سے ایک واٹ کام انجام پذیر ہوا۔ یعنی اس سرکٹ پر ایک واٹ توانائی صَرف ہوئی۔

...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, April 9, 2012 - 12:55
مصنف: دن رت

میں لکھنا نہیں چاہ رہا جو میں لکھنا چاہتا ہوں پر۔۔۔۔ ہنسی آتی ہے لوگوں کی باتیں پڑھ کر، سُن کر جب وہ آپ کو نصیحت کرتے ہیں حقائق جانے بغیر۔ایسے لوگوں کا میں تو کیا کوئی کچھ نہیں کر سکتا ۔بہتر یہی ہے کہ انہیں اُن کے حال پر چھوڑ دیا جائے ۔سوال کرنے کا وہ حق رکھتے ہیں ، جواب دینے نہ دینے کا حق میرے اختیار میں ہے۔

اچھے لوگ ہی اچھی نصیحت کرتے ہیں، اور اُن کی نصیحت پر عمل بھی ہونا چاہیے۔ کسی کے بارے میں جانے بغیر آپ کوئی رائے نہیں دے سکتے، یہ بات مجھ سمیت سب پر لاگو ہوتی ہے۔

سمجھدار کے لیے اشارہ ہی کافی ہے۔ اِس...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, April 9, 2012 - 10:12
وہ سچ کی تلاش میں تھا۔ اس نے آنکھ ایسے ماحول میں کھولی جس کی تمنا دوسرے کئی برس سپنوں کی طرح کھلی آنکھوں میں بساتے ہیں۔مگرجن میں مایوسی لوڈ شیڈنگ کے اندھیروں سے بھی زیادہ تاریک ہوتی ہے۔معاشرہ سے کٹ کر ضرورت صرف معاش رہ جاتی ہے ۔ پھر انسان بھی انس آن نہیں رہتا ۔ رشتوں کے ٹوٹنے کی آواز سوکھی لکڑی کے تنے سے الگ ہونے جیسی ہوتی ہے مگر سنائی نہیں دیتی ۔ اپنے پن سے جدا ہونے کا درد محسوسات سے خالی کبھی نہیں ہوتا ۔
اس کا یہی درد پیشانی پہ پڑی سلوٹوں سے عیاں تھا ۔ہر سوال کے آخر میں کیوں اور پھر ایک نئے سوال کی ابتدا ء ، یوں نہ تو وہ سوال سے اپنے آپ کو روک پایا اور نہ ہی جواب سے تسلی ۔" کیوں "نے اس...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, April 8, 2012 - 23:30
مصنف: عادل بھیا
میں اِک کثیر عرصہ سے کسی ایسے انسانی آئینہ کی تلاش میں ہوں جس میں مُجھے اپنا عکس نظر آئے۔ یہی وجہ ہے کہ جس انسان سے بھی ملتا ہوں، اُس میں اپنا آپ ڈھونڈنے لگتا ہوں۔ کچھ انسان جو دِل کو بھا جاتے ہیں، جن کی کچھ ادائیں دِل میں گھر کر لیتی ہیں، میں اپنی جان، مال اور وقت کی پروا کئے بناء اُنکے قریب ہونے کی کوشش کرتا ہوں اور گر چند لمحوں کیلئے اُنکا ساتھ نصیب ہو جائے تو اُن میں اِک عادل تلاش کرنے لگتا ہوں۔ ہاں اُنکی چھوٹی چھوٹی عادات میرے مشاہدے سے گزرنے لگتی ہیں کہ شائید کوئی عادت مجھ سے مشابہ ہو۔ میں اِس سفر میں بہت سے افراد سے ملا جن میں بچوں سے لے کر جوان اور ضعیف العمر مردوخواتین شامل ہیں۔ کچھ...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, April 8, 2012 - 10:16
مصنف: دن رت

میرے ایک بھائی نے بلاگ پر یہ تبصرہ کیا ہے کہ میں بہت زیادہ پوسٹس کرتا ہوں اور اُن کا خیال ہے کہ کاپی پیسٹ کا اچھا استعمال کرتا ہوں۔ :)

 

اُن کا کامنٹ تو میں نے منظور نہیں کیا، البتہ اُن کو جواب ضرور دینا چاہوں گا۔

 

تو میرے بھائی پہلے تو آپ کو یہ مسئلہ نہیں ہونا چاہئے کہ میں کتنی پوسٹ کرتا ہوں۔ ایک پوسٹ کروں، دس کروں یا سو۔ آپ کو اگر اچھا...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, April 7, 2012 - 11:46

World Health Day 2012
پاکستان سمیت دنیا بھر میں آج عالمی یوم صحت منایا جا رہا ہے
دنیا میں بوڑھوں کی تعداد 65کروڑ ہے
طب یونانی’ بڑھاپے کے مسائل صحت کا بہترین حل ہے:حکیم قاضی ایم اے خالد
اسلامی و مشرقی روایات پر عمل کرکے بڑھاپے کو قابل رشک بنایا جا سکتا ہے:کونسل آف ہربل فزیشنز


لاہور...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, April 5, 2012 - 11:47
مصنف: دن رت

ایک تبلیغی جماعت کے امیر نے سفر پر روانہ ہونے سے پہلے اپنے ساتھیوں کو ہدایت کی کہ جب بھی وہ کسی عورت کو دیکھیں تو ‘استغفراللہ‘ پڑھیں۔

سفر شروع ہوا پر کوئی عورت نظر نہیں آئی۔

اچانک ایک ساتھی نے کہا “ استغفراللہ“۔

 باقی ساتھی بولے۔“ کدھر ہے؟؟ کدھر ہے؟؟؟“۔


...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, April 4, 2012 - 21:37
مکئی، مکئی کا بھٹہ، پاکستان، پیداوار، بی،پودا، جھنگ، دریا، زمین، کھاد، نیلم، چارہ، بوائی، تیار
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, April 2, 2012 - 14:14
شہر کراچی ویسے تو شہر قائد کہلاتا ہے اور مزار قائد اس کی پہچان ہے لیکن وقت کے ساتھ ساتھ قائدین اور پہچان میں تبدیلی آتی جارہی ہے۔ زیادہ دن نہیں گزرے کے شہر کی کمان مبین ٹنٹا، جاوید لنگڑا اور فاروق دادا کے ہاتھوں میں تھی اور اب لوگ مزار قائد کو بھول کر...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, April 2, 2012 - 11:13

بلوگر کے لئے ڈائری نوٹ بک اردو سانچہ

اس سے پہلے بھی ہم آپ کی خدمت میں اردو سانچے پیش کر چکے ہے لیکن آج ہم ایک ایسا سانچہ پیش کر رہے ہیں جسے آپ اپنی پرسنل ڈائری کے طرز پر بھی استعمال کر سکتے ہیں اور پبلک بلاگنگ کے لیے بھی۔ ۔۔۔فی الحال ہم یہ سانچہ اپنے بلاگ اردو شاعری کے لیے استعمال کر رہے...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, April 2, 2012 - 10:39



ٹی وی اینکرز


وہ مرے دوست تھے یا دشمن تھے
میری بے چارگی پہ روتے تھے
غم غلط ہو گیا مرا آخر


محمد احمدؔ



زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, March 31, 2012 - 20:30
میرے ساتھ بڑا عجیب مسئلہ ہے کہ جب کوئی بات مل جائے اس کی کھال اتارنے کو تیار ہو جاتی ہوں ، اور جب تک اسکی کھال نا اتر جائے مجھے چین نہیں آتا، مختصر الفاظ میں یہ کہ جب تک اپنے اندر کا اُبال باہر نا نکا ل لوںٕ مجھے وہ سوچ تنگ کرتی ہی رہتی ہے۔ میں نے سوچا تھا کہ جب تک امتحان نہیں ہو جاتے میں کچھ نہیں لکھوں گی ، نا کچھ سوچوں گی ،
مزے کی بات یہ ہو ئی کہ رات کو خواب میں بھی میں یہ کہتی رہی ہوں کہ
Excess of everything is bad.
اب اسکی بھی وضاحت کرتی چلوں ، دراصل ہر چیز کی زیاتی بُری ہو تی ہے اس کا تعلق بھی میرے موضوع سے ہے،!


اب یہ معاملہ ہی...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, March 31, 2012 - 20:16
مصنف: فراز بیگ

Nothing divides like religion!

That’s actually just another way of saying nothing connects like it but that’s beside the point. This write up is about the effect Facebook – which is the embodiment of an almost perfect social networking website- is having on the sectarian differences amongst Muslims. My thesis is that, whether by design or by accident, it’s causing the rift between different religious sects to aggravate. How can I say that? Well, part from personal experience and rest from empirical inference. I don’t have any statistical data to substantiate my claim as to how many...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, March 27, 2012 - 22:09
غم سے بہل رہے ہیں آپ، آپ بہت عجیب ہیںدرد میں ڈھل رہے ہیں آپ، آپ بہت عجیب ہیں
سایۂ وصل کب سے ہے آپ کا منتظر مگرہجر میں جل رہے ہیں آپ، آپ بہت عجیب ہیں
اپنے خلاف فیصلہ خود ہی لکھا ہے آپ نےہاتھ بھی مَل رہے ہیں آپ، آپ بہت عجیب ہیں
وقت نے، آرزو کی لَو، دیر ہوئی، بجھا بھی دیاب بھی پگھل رہے ہیں آپ، آپ بہت عجیب ہیں
زحمتِ ضربتِ دِگر دوست کو دیجئے نہیںگر کے سنبھل رہے ہیں آپ، آپ بہت عجیب ہیں
دائرہ وار ہی تو ہیں عشق کے راستے تمامراہ بدل رہے ہیں آپ، آپ بہت عجیب ہیں
دشت کی ساری رونقیں، خیر سے گھر میں ہیں، تو کیوںگھر سے نکل رہے ہیں آپ، آپ بہت عجیب ہیں
اپنی تلاش کا سفر ختم...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, March 23, 2012 - 10:54

جب بھی کوئی موقع ایسا آتا ہے کہ پاکستان کی بات کی جائے ، پاکستانیوں کی بات کی جائے ، پاکستان کی سیاست کی بات کی جائے ، پاکستان کے حالات کی بات کی جائے تو بس ایک لمحے کو دل کرتا ہے کہ بندہ کہے ، "نو کمنٹس"مگر نہیں یہ بھی اختیار میں نہیں ہے ، ہم یہاں رہتے ہیں ، ہمیں پاکستان ایسے ہیعزیز ہے جیسے کہ ہمارا اپنا گھر ، جیسے ہم روز اپنا گھر صاف کرتے ہیں ، ایسے ہی دل کرتا ہے کہ ہمارا ملک بھی صاف ہو ، جیسے ہم اپنے خاندان کے لوگوں کے ساتھ رہتے ہیں ایسے ہی دل کرتا ہے پاکستان کے لوگ مل جل کر رہیں ، پر افسوس ہوتا ہے جب ہم ملکی سیاست پر کیچر...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, March 22, 2012 - 13:02
دینی تعلیم اور پھر اس کے لیے مدارس کا قیام ،معاشرے کے لیے کتنی اہمیت رکھتے ہیں ؟ اس سے ہر باشعور انسان آگاہ ہے ۔حقیقت میں مدرسہ ہی  وہ سب سے بڑی کار گاہ ہے،جہاں آدم گری اور مردم سازی کا کام ہوتا ہے ،جہاں دین کے داعی اور اسلام کے سپاہی تیار ہوتےہیں ،مدرسہ عالم اسلام کا بجلی گھر(پاؤر ہاؤس)ہے،جہاں سے اسلامی آبادی بلکہ انسانی آبادی میں ایمانی بجلی تقسیم ہوتی ہے، یہ بات یقین کے ساتھ کہی جاسکتی ہےکہ اگر یہ مدرسے نہ رہے تو ہماری نسلوں کا دین بدل جائے گا، ان اداروں نے کام چھوڑ دیا  تو ہماری آنے والی نسلوں کا دین کیا ہوگا وہ کس مذہب سے وابستہ ہونگی اس بارے میں کچھ نہیں  کہا جاسکتا،...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, March 20, 2012 - 19:00
بسم اللہ الرحمن الرحیم
کہنے میں تو پچیس سال بہت زیادہ نہیں لگتے۔ اگر کوئی پچیس سال کا ہوجائے تب بھی اس کو سن رسیدہ یا بڑا نہیں گنا جاتا۔ گویا پچیس سال کوئی خاص عمر نہیں۔ لیکن اگر ہم اسی پچیس سال کی عمر کو کسی اور پہلو سے دیکھیں تو اندازہ ہو گا کہ یہ بہت لمبا دورانیہ ہوتا ہے۔جب آپ کسی کی پچیسویں سالگرہ میں شریک ہوں تو اس کو اس طرح مبارکباد دے کر اس کے تاثرات تو دیکھیں۔ جناب آپ کو سوا صدی پوری کرنے کی مبارکباد دیتا ہوں، بقول انگریزوں کے آپ کو سلور جوبلی مبارک ہو۔ اگر وہ شخص اس بات کو سمجھ جائے تو شاید اسے دھچکا لگے۔آجکل کسی کو جناب نوح جتنی عمر پانے کی امید تو ہوتی نہیں۔ اگر کوئی بہت زیادہ...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, March 19, 2012 - 20:40


آج شام میرا گزر ایک گروہِ مفکرین کے پاس سے ہوا جو ایک جوہڑ کے کنارے آلتی پالتی مار کر سوگوار بیٹھے ہوئے تھے اور کسی اہم موضوع پر گفت و شنید کر رہے تھے۔ مجھے تجسس ہوا اور جیسے ہی میں ان کے قریب ہوا انھوں نے مجھے اپنے پاس بیٹھنے کی دعوت دی۔ میں تشکرانہ انداز میں مودب ہو کر ان کے پاس بیٹھ گیا اور ان کی باتیں سننے لگا۔ موضوعِ بحث کرکٹ تھا اور وہ لوگ انڈیا کے ہاتھوں پاکستان کی شکست کا ماتم کر رہے تھے۔ ان کی آوازوں...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, March 19, 2012 - 10:13

میں نے بہت کم لوگ ایسے دیکھے ہیں جو اعلیٰ ظرف ہو ں او ر اس قدر اعلی ٰطرف ہوں کہ وہ دوسروں کو کسی بھی معاملے میں شاباش دینے کا حوصلہ رکھتے ہیں ، بڑا مشکل ہو تا ہے شاید کسی کے لئے بھی کہ وہ کسی کو اپنے سے اوپر کا مقام دے ، اپنے سے اونچا بیٹھا دے ، اپنے سے زیادہ کامیاب ہونے دے ، لیکن مسئلے کا حل صرف اسی بات میں چھپا ہے کہ جب تک آپ کسی کو کسی چھوٹے سے کام پر شاباشے نہیں دیتے ، اس کی حوصلہ افزائی نہیں کرتے اس میں کسی بھی بڑے کام کو کرنے کو حوصلہ پیدا نہیں ہوتا، اگر اک ٹیچر کسی سٹوڈنٹ کی پریزنٹیشن پر اس کی حوصلہ افزائی نہیں کرے...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, March 19, 2012 - 02:06


World Tuberculosis Awareness Campaign 2012
دنیا کی ایک تہائی آبادی ٹی بی کا شکار ہے’ہرآدھے منٹ بعد ایک انسان ٹی بی سے موت کے منہ میں چلا جاتا ہے
آلودہ خوراک ‘تنگ وتاریک مکانات’ غلاظت کے ڈھیر اس بیماری کو پھیلانے میں اہم کردار ادا کرتے ہیں
حکومتی سطح پر غربت اور آلودگی کا خاتمہ ٹی بی سے نجات کیلئے انتہائی...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, March 17, 2012 - 09:52
ابھی حال ہی میں الیکشن کمیشن نے ایک خاتون پریزائیڈنگ آفیسر کے تھپڑ کی قیمت چکائی ہے ۔ اب ایک نیا ٹیسٹ پھر عدالت کے دروازے پر دستک دینے پہنچ چکا ہے ۔ سرگودھا کے ستر سالہ ٹیچر پر بد ترین تشدد کر کے دونوں ٹانگوں سے معزور کر دیا گیا ہے ۔ جسے اگر میڈیا ہائی لائٹ نہ کرتا تو شائد ایک دو احتجاجی جلسہ کے بعد سیای مفاہمت کی نظر ہو جاتا ۔ مگر آج صورتحال یکسر بدل چکی ہے ۔ طاقت کا استعمال لاٹھی ، گولی کا وہی پرانا رنگ رکھتا ہے ۔ مگر دیکھنے والی آنکھ بدل چکی ہے ۔ کیمرے کی آنکھ سے وہ ان پڑھ لوگ بھی اسے دیکھ لیتے ہیں جو اس سے پہلے اپنی ناخواندگی کی وجہ سے اخبار میں خبر پڑھنے سے محروم رہ جاتے تھے۔
...
زمرہ: اردو بلاگ

Pages

Subscribe to بلاگستان فیڈز