بلاگستان

تاریخ اشاعت: سوموار, January 15, 2018 - 07:29

زندگی وہ پتنگ ہے جو ہوا تیز ہونے پر بلندیاں چھونے لگتی ہے ، کم ہوا میں جب زمین پر گرنے لگتی ہے تو اسے سنبھال کر رکھ لیا جاتا ہے تا وقتکہ اتنی ہوا موجود ہو کہ وہ اپنا آپ سنبھال پائے۔ بے صبری کا مظاہرہ کریں تو زمین اور دیواروں سے ٹکرا کر پھٹ جانے کی نوبت آ پہنچتی ہے۔ بعض اوقات زندگی میں اپنے ہی کھیلے گئے کھیل بہت بڑا سبق چھوڑ جاتے ہیں۔زندگی بسنت کا ایک ایسا تہوار ہے جہاں پورے شہر کی پتنگیں ایک ساتھ اڑان نہیں بھرتیں۔ بلکہ اپنی چھت پہ صرف اپنے لئے ہی ہوا کا زور چلتا ہے۔گڑیا کی شادی ، تتلیوں کے پیچھے بھاگنے اور بارش کے پانی میں کاغذ کی کشتی بہانے سے ایک ایک منزل بڑھتے خوشیوں اور خواہشوں کی...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, January 14, 2018 - 09:08

نبوت کا معاملہ ایک بڑا ہی نازک معاملہ ہے ۔ قرآن مجید کی رُو سے یہ اسلام کے ان بنیادی عقائد میں سے ہے جن کے ماننے یا نہ ماننے پر آدمی کے کفر و ایمان کا انحصار ہے
سورت 2 البقرۃ آیت 285 ۔ اٰمَنَ الرَّسُوْلُ بِمَآ اُنْزِلَ اِلَيْهِ مِنْ رَّبِّهٖ وَالْمُؤْمِنُوْنَ ۭ كُلٌّ اٰمَنَ بِاللّٰهِ وَمَلٰۗىِٕكَتِهٖ وَكُتُبِهٖ وَرُسُلِهٖ ۣلَا نُفَرِّقُ بَيْنَ اَحَدٍ مِّنْ رُّسُلِهٖ ۣ وَقَالُوْا سَمِعْنَا وَاَطَعْنَا ڭ غُفْرَانَكَ رَبَّنَا وَاِلَيْكَ الْمَصِيْرُ
ترجمہ ۔ رسول ﷺ اس ہدایت پر ایمان لایا ہے جو اس کے رب کی طرف سے اس پر نازل ہوئی ہے اور جو لوگ اس رسول ﷺ کے ماننے والے ہیں انہوں نے...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, January 14, 2018 - 07:16
JehanPakistan ePaper |

جہاں پاکستان اخبار


میری غلطی قانون کی حکمرانی پر اصرار۔۔۔۔۔۔تحریر صفی الدین اعوان
انیس سو باسٹھ   کا ایوبی دستور نیانیا نافذ ہوا تھا  ہرطرف قبرستان کی خاموشی تھی بنیادی حقوق  منسوخ کیئے جاچکے تھے عدالت کا رٹ کا حق   بھی ختم کردیا گیا تھا جس پر چیف جسٹس ایم آر کیانی مرحوم کراچی بارایسوسی ایشن کی تاریخی تقریر میں  آمریت کے خلاف بھرپور آواز بلندکرنے کی...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, January 14, 2018 - 07:16
JehanPakistan ePaper |

جہاں پاکستان اخبار


میری غلطی قانون کی حکمرانی پر اصرار۔۔۔۔۔۔تحریر صفی الدین اعوان
انیس سو باسٹھ   کا ایوبی دستور نیانیا نافذ ہوا تھا  ہرطرف قبرستان کی خاموشی تھی بنیادی حقوق  منسوخ کیئے جاچکے تھے عدالت کا رٹ کا حق   بھی ختم کردیا گیا تھا جس پر چیف جسٹس ایم آر کیانی مرحوم کراچی بارایسوسی ایشن کی تاریخی تقریر میں  آمریت کے خلاف بھرپور آواز بلندکرنے کی...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, January 12, 2018 - 18:18

نیلی آنکھوں والی وہ ننھی سی شہزادی مسکراتی سی تصویر جب سامنے آتی جیسے سوال کرتی 

” بائ ذنب قتلت ”

کہاں سے جواب لائیں کہ اس سوال کا جواب تو روز محشر رب اعلیٰ خود لیں ان سفاک مجرموں سے جن کے جسموں میں آگ کے شعلے بھرے ہوتے انہی شعلوں میں رب تعالی’ انکو جلائے گا جن کی آنکھوں میں شیطان ناچتا ہے اور ساتھ انکو بھی نچاتا ہے مگر آخر کب تک ۔۔۔۔ 

اور جن کے سینوں میں دل نہیں انگارے ہوتے ہیں یاد رکھنا اللہ روز قیامت ان انگاروں کو کبھی ٹھنڈا نہیں ہونے دے گا وہ انکو اور بھڑکائے گا ۔۔۔

مگر آج انصاف کون کرے گا ؟؟؟

آج زینب کے ماں باپ کیساتھ ہر...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, January 12, 2018 - 16:08
مصنف: کچھ دل سے
 ~!~آج کی بات~!~ 
جو جوانی میں بڑھاپے کی فکر رکھتا ہے وہ بڑھاپے میں حسرتوں کا شکار نہیں ہوتا۔
اور جو دنیا میں فکرِ آخرت رکھتا ہے، وہ عالمِ آخرت میں حسرتوں کا شکار نہیں ہوگا ان شاء اللہ۔
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, January 12, 2018 - 12:34


بسم اللہ الرحمٰن الرحیم
سیکس ایجوکیشن اور ہم
ڈاکٹر محمد عقیل
تعارف
سیکس ایجوکیشن ہمارے معاشرے میں اتنا حسا س مسئلہ ہے کہ اس پر بڑے بڑے اہل علم بھی قلم اٹھاتے ہوئے ڈرتے ہیں۔ اس کے علاوہ ماں باپ اپنے بچوں کو وہ بنیادی باتیں بتانے میں جھجکتے ہیں جن کو مائنس کرکے زندگی نہیں گذاری جاسکتی۔ہمارے تعلیمی ادارے جنسی تعلیم کا سلیبس بنانے میں اگر کامیاب بھی ہوجاتے ہیں تو اس کا نفاذ نہیں کرپاتے۔ ہمارا میڈیا ان باتوں کو شائستہ اسلوب میں ڈسکس کرنا گناہ عظیم سمجھتا ہے۔ لیکن

حقیقت سے انکھیں چرانے سے مسئلہ حل نہیں ہوتا بلکہ بڑھ جاتا ہے۔
...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, January 11, 2018 - 17:04
مصنف: کچھ دل سے
~!~ آج کی بات ~!~
وہ لوگ انمول ہیں جو خیر کی خبر دیتے ہیں پریشانی میں دلاسہ اور بھروسہ دیتے ہیں عقل کی بات کرتے ہیں ہمیشہ تنہائی میں اصلاح کی کوشش کرتے ہیں کوئی لالچ نہیں رکھتے ایسے لوگ قیمت...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, January 11, 2018 - 11:34


بسم اللہ االرحمٰن الرحیم
ڈاکٹر محمد عقیل
معصوم زینب کی شہادت پر اس وقت پورا الیکٹرانک اور سوشل میڈیا سراپا احتجاج اور غم و غصے کی کیفیت میں ہے۔ اس پر اہل علم بہت کچھ لکھ چکے اور لکھ رہے ہیں۔ اس کا ایک اور دردناک پہلو یہ ہے کہ کچھ لوگ خدا کے انصاف اور مذہب کو نشانہ بنارہے اور طنزو تشنیع کے تیر برسا رہے ہیں۔ ان میں کچھ ایسے لوگ بھی ہیں جو سنجیدہ طور پر خدا کی حکمت اور مذہب کی راہنمائی کو جاننا چاہتے ہیں۔ مجھے خود کئی سوال براہ راست اور بلاواسطہ اس موضوع پر مل چکے ہیں جن کا ایک تحریر میں جواب دینا مناسب معلوم ہوتا ہے۔ اس صورت حال کا جائزہ جذبات سے بالاتر ہوکرعقل اور...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, January 11, 2018 - 07:19


میری غلطی قانون کی حکمرانی پر اصرار۔۔۔۔۔۔تحریر صفی الدین اعوان
انیس سو باسٹھ   کا ایوبی دستور نیانیا نافذ ہوا تھا  ہرطرف قبرستان کی خاموشی تھی بنیادی حقوق  منسوخ کیئے جاچکے تھے عدالت کا رٹ کا حق   بھی ختم کردیا گیا تھا جس پر چیف جسٹس ایم آر کیانی مرحوم کراچی بارایسوسی ایشن کی تاریخی تقریر میں  آمریت کے خلاف بھرپور آواز بلندکرنے کی "غلطی" کرچکے تھے  اور مارشل لاء کے خلاف یہ واحد آواز تھی جو پورے پاکستان میں سب سے پہلے بلند ہوئی تھی  جشن مری کا موقع تھا شاعروں  کی "ریم" مری میں جمع تھی   وزیر قانون جناب  ...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, January 10, 2018 - 17:59
مصنف: کچھ دل سے
~!~ آج کی بات ~!~
محبت کسی کے لیے اپنی جان قربان کرنا نہیں ہے۔کیونکہ یہ جان تو اللہ کی امانت ہے ہمارے پاس۔
محبت تو کسی کی رضا اور خوشی کے لیےاپنی رضا اور خوشی قربان کرنے کا نام ہے۔
من چلے کا سودااشفاق احمد
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, January 10, 2018 - 14:31


ذرا نماز پڑھنا سکھادیجے
ڈاکٹر محمد عقیل
• حضرت ، ذرا نماز سے متعلق کچھ باتیں پوچھنی ہیں۔
o پوچھو کیا پوچھنا چاہتے ہو؟
• یہ بتائیں کہ نماز کی نیت زبان سے کرنی ہے کہ دل میں؟
o میاں نیت زبان سے کرو یا دل میں کرو، ہر صورت میں خالص ہونی چاہیے۔

جواب کچھ عجیب تھا لیکن اگلا سوال :اچھا ہاتھ کانوں تک اٹھانے ہیں یا کاندھے تک؟
o میاں کان اور کاندھے سے کیا فرق پڑتا ہے۔ حقیقت میں تو ہاتھ نفس کی پوجا سے اٹھانے ہیں۔
• اچھا ہاتھ کہاں باندھنے ہیں، سینے پر کہ ناف کے نیچے ؟
o ارے صاحبزادے، ہاتھ ادب سے باندھنے ہیں ، جہاں ادب محسوس ہو...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, January 10, 2018 - 11:55
مصنف: نوک جوک

"کچھ سالوں کے سوا، میں ساری زندگی ذاتی خوشی سے محروم رہا۔ اپنے خیر خواہوں اور چاہنے والوں سے صرف ایک بات کی درخواست...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, January 10, 2018 - 10:06

سیّدنا محمد صلی الله علیہ وسلّم نے فرمایا کہ ”لا نبی بعدی“ (میرے بعد کوئی نبی نہیں) ۔ یہ الفاظ آنحضرت صلی الله علیہ وسلّم سے حضرت ابو ھریرہ رضی الله عنہ نے صحیح بخاری حدیث نمبر 3455 ، صحیح مسلم حدیث نمبر 1842 میں ، حضرت سعد بن ابی وقاص رضی الله عنہ نے صحیح مسلم حدیث نمبر 2404 میں اور حضرت ثوبان بن بجداد رضی الله عنہ نے سنن ترمذی حدیث نمبر 2219 ، سنن ابی داؤد حدیث نمبر 4252 اور مستدرک حاکم میں حدیث نمبر 8390 میں صحیح اسناد کے ساتھہ بیان کی
جیسا کہ میں 8 ستمبر 2017ء کو بیان کر چکا ہوں سورت 53 النّجم میں الله تعالٰی نے فرمایا کہ سیّدنا محمد صلی الله علیہ وسلّم اپنی طرف سے کچھ نہیں کہتے...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, January 9, 2018 - 18:36
مصنف: کچھ دل سے

~!~ آج کی بات ~!~
بولنا تو قدرت کی طرف سے آ ہی جاتا ہے،
البتہ خاموشی ذہانت سے آتی ہے۔
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, January 9, 2018 - 14:40
محمد علم اللہ جامعہ ملیہ، دہلی”آدمی سکون کی تلاش میں کتنی ہی دُور کیوں نہ چلا جائے، آخر کار لوٹ کر اپنے احباب کی طرف ہی آتا ہے۔ اپنے پرانے دنوں کے بارے میں سوچ کر اور اپنے اس بچپن کی زندگی کو یاد کر کے زرا خوش ہو لیتا ہے لیکن پھر وہی شام، وہی رات اور وہی تنہائی ہوتی ہے۔ مجھے یہاں آنے سے پہلے معلوم تھا کہ پردیس میں لوگوں کا کیا احوال ہوتا ہے۔ اس وجہ سے جب یہاں سے کوئی گھر جاتا تو میں اس سے کچھ پوچھوں، یا نہ پوچھوں یہ ضرور پوچھتا ہوں، کہ وہاں کیسا لگتا ہے! یہ میں اس سے صرف اس کی دلی کیفیات معلوم کرنے کے لیے پوچھتا تھا اور نتیجہ صد فی صد یہی نکلتا تھا کہ وطن سے باہر سب کچھ ہے لیکن سکون نہیں ہے۔...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, January 9, 2018 - 14:19
مصنف: کچھ دل سے
25dbbd01615e2b76885f6ba37c25d444.jpgحدتحریر: کاشف جانباز

ہر چیز حد میں اچھی لگتی ہے۔ اگر حد پار کی جائے تو اچھی چیز بھی بری ہو جاتی ہے۔ اسی طرح وقت کی اصل وقعت، اس  کو  اپنوں کے ساتھ گذارنے میں ہے نہ کہ فرضی لیلٰی مجنوں کے سراب میں  گم گشتہ ہو کر اپنا آپ گنوا دینے میں۔ بگاڑ چاہے جتنا ہو اس میں سدھار کی امید ہمیشہ رہتی ہے۔ جو ہمارے روز و شب کی ترتیب بگڑ گئی ہے یہ ٹھیک ہو سکتی ہے۔ لیکن سیلف اسٹیم کو اس جنجال کے خلاف ابھارنا ہو گا ۔ ورنہ...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, January 9, 2018 - 12:10
مصنف: کچھ دل سے
اللہ تعالی سے خیر کی امید - خطبہ جمعہ مسجد نبویترجمہ: شفقت الرحمان مغل
فضیلۃ الشیخ ڈاکٹر  جسٹس عبد المحسن بن محمد القاسم حفظہ اللہ نے18-ربیع الثانی-1439  کا خطبہ جمعہ مسجد نبوی میں "عقیدہ توحید اور...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, January 8, 2018 - 19:19
مصنف: کچھ دل سے
Related image
اک زندگی عمل کے لیے بھی نصیب ہو
یہ زندگی تو نیک ارادوں میں کٹ گئی
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, January 8, 2018 - 17:25
مصنف: کچھ دل سے
~!~ آج کی بات ~!~
تمام انگلیاں لمبائی میں برابر نہیں ہوتی لیکن جب انہیں موڑا یا جھکایا جاتا ہے توسب لمبائی میں برابرہو جاتی ہیں ,بعض اوقات زندگی تب آسان ہوتی ہے جب ہم جھکتےہیں اور نرم رویہ اختیارکرتے ہیں
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, January 8, 2018 - 16:34
مصنف: کچھ دل سے
اسلام کی نرمیمسجد حرام کے امام وخطیب فضیلۃ الشیخ ڈاکٹرعبد الرحمن بن عبد العزیز السدیس حفظہ اللہ
جمعۃ المبارک 18 ربیع الثانی 1439 ھ بمطابق 5 جنوری 2018ء
ترجمہ: محمد عاطف الیاس
منتخب اقتباس:
ہر طرح کی تعریف اللہ ہی کے لیے ہے۔ اے اللہ!...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, January 7, 2018 - 07:39


خانہ بدوش ، زمین  دار  اور گورنر ۔۔۔۔۔تحریر صفی الدین اعوان ایک  دفعہ  کا ذکر ہے کہ ایک بادشاہ سلامت  کے سامنے  چوری کے تین  ملزمان  پیش کیئے گئے
بادشاہ نےچوری کے...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, January 6, 2018 - 21:01
انسان کی زندگی کہانی رات اور دن کی آنکھ مچولی کے مابین بھاگتےگزرتی ہے۔دن کے کھاتے میں گر ہار جیت کے برابر امکانات ہوتے ہیں تو رات نام ہی شکست کا ہے۔۔۔رات ڈھلتے ہی انسانی قوٰی زوال پذیر ہونے لگتے ہیں یوں رات زندگی سے دور کرتے ہوئے بناوٹ کی موت کا نام ہی تو ہے۔رات بےیقینی بھی ہے کہ کوئی نہیں جانتا آنے والی صُبح کا سورج کیا پیغام لے کر آئے۔وہ رات!!! دو زندگیوں کی بقا کی رات تھی۔۔۔دونوں بہت قریب ہوتے ہوئے،ایک دوسرے کو محسوس کر کے بھی آنے والے وقت سے انجان،اپنی ذات کی تنہائی میں درد کی منازل طے کرتے تھے۔وہ زندگی بخش رات تھی لیکن موت کا خوف ہر چند منٹوں بعد رگِ جاں کی ساری توانائی نچوڑ لیتا۔...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, January 6, 2018 - 12:35

کِسی چیز کو قبول (accept) یا رَد (reject) کرنے سے قبل اُس کے متعلق مستنَد معلومات حاصل کرنا ضروری ہے ۔ عصرِ حاضر میں یہ رسم پڑ چکی ہے کہ ہر چیز کو ذاتی پسند یا ناپسند کی بنیاد پر قبول یا رَد کیا جاتا ہے
اِن شاء الله آج سے میں اپنے ایک مطالعہ (جو 1953ء میں شروع ہو کر 1964ء میں مکمل ہوا) کا خلاصہ 8 اقساط میں پیش کرنے کی کوشش کروں گا ۔ واضح رہے کہ میری اِن تحاریر کی بنیاد قرآن شریف ۔ حدیث مباركه اور جیّد مفسّرین اور مفکّرین کی تحاریر ہیں

رَبِّ اشْرَحْ لِی صَدْرِی وَيَسِّرْ لِی أَمْرِی وَاحْلُلْ عُقْدة مِنْ لِسَانِی يَفْقَھُوا قَوْلِی

سورت 33 الاحزاب ۔ آیت 40 ہے ۔ مَا...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, January 4, 2018 - 12:34
اے خانہ بر انداز چمن کچھ تو ادھر بھیمحمد علم اللہ 
کل رات تقریبا گیارہ بجے اپنے مخلص اور مہربان دوست محمد احمد کے ساتھ جامعہ ملیہ اسلامیہ کی لائبریری سے اپنے گھر ابوالفضل لوٹ رہا تھا۔ جماعت اسلامی ہند کے قائم کردہ الشفا ہاسپیٹل سے زرا پیچھے، یعنی مسلم مجلس مشاورت اور جمعیت اہل حدیث والی گلی سے تھوڑا پہلے، جہاں زمین کا ٹکڑا خالی پڑا ہے، وہاں کچھ پیر مرد بیڑی سگریٹ کے مرغولے اڑاتے، تاش کھیلنے میں مصروف تھے۔ یہ دراصل جمعیت اہل حدیث کے کیمپس کا مرکزی دروازہ ہے، جو خاص مواقع جیسے جمعہ اور عیدین یا ایسے ہی کسی جلسے وغیرہ پر کھلتا ہے۔ یہ پوری آبادی مسلمانوں کی ہے تو خیال کیا جاسکتا ہے، یہ...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, January 4, 2018 - 12:29

تقسیم نے درد نہیں‌ بانٹا (دوسرا حصہ) محمد علم اللہ سونے کی چڑیا کہلائے جانے والے اس عظیم ہندوستان نے، تقسیم کے دوران سرحد کے دونوں طرف اپنے ہی چھہ لاکھ بیٹے بیٹیوں کا قتل عام دیکھا۔ لگ بھگ ایک کروڑ چالیس لاکھ لوگوں کو گھر سے بے گھر ہوتے دیکھا۔ اس وقت کے حالات و واقعات کی روداد اتنی تکلیف دہ اور مضطرب کردینے والی ہے کہ محض اس کا تصور کرکے ہی رونگٹے کھڑے ہوجاتے ہیں۔ بٹوارے کے دوران بہتر لاکھ مسلمان پاکستان کو ہجرت کرگئے، جب کہ رَکارڈ کے مطابق 1941ء سے 1951ء تک پاکستانی علاقوں سے بھارت آنے والے ہندوؤں اور سکھوں کی تعداد 45 لاکھ چالیس ہزار ہے۔
تاریخی شواہد بتاتے ہیں کہ...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, January 4, 2018 - 12:27

تقسیم نے درد نہیں بانٹا (پہلا حصہ) محمد علم اللہ لاریب! محمد علی جناح ایک تاریخ ساز شخصیت تھے۔ آخر تاریخ میں کتنی ایسی شخصیات ہیں، جن کے سر پہ مملکت کے قیام کا سہرا ہے؟ وہ ایک قدآور سیاست دان تھے؛ اپنے وقت کے معروف وکیل۔ یہ کہنا غلط نہ ہوگا کہ انھوں نے قیام پاکستان کا مقدمہ ایک ذہین اور محنتی وکیل کی طرح لڑا، اور جیت بھی گئے۔ متحدہ ہندوستان میں وہ ان نمایاں رہنماوں میں سے تھے، جو ہندو مسلم اتحاد کی علامت کے طور پر جانے جاتے تھے۔ لیکن بٹوارے کے بعد جو کچھ ہوا، اس کا بیان انتہائی تلخ، تکلیف دہ اور افسوس ناک ہے۔
آج محمد علی جناح کی 142 ویں سال گرہ ہے، اور اس موقع پر کچھ کہنا...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, January 4, 2018 - 12:22
دینی مدارس: عصری معنویت اور جدید تقاضے محمد علم اللہ کبھی کبھی کچھ ایسی تحریریں یا کتابیں میسر آجاتی ہیں، جن کو پڑھنے کے بعد بے اختیار مصنف یا مترجم کا ہاتھ چوم لینے کو جی چاہتا ہے۔ حالیہ دنوں میں ایسی ہی ایک کتاب میرے ہاتھ لگی، جسے میں بجا طور پر ایک بہترین، معلوماتی، تحقیقی، علمی اور ادبی کتاب کہہ سکتا ہوں۔ ”وٹ از مدرسہ“ اس کو پڑھنے کے بعد قاری کچھ سوچنے پر مجبور ہوتا ہے؛ پتا چلتا ہے کہ ایک عام انسان خاص کیسے بنتا ہے۔ یہ کتاب نوٹرے ڈیم یونیورسٹی، امریکا کے شعبہ اسلامک اسٹڈیز کے پروفیسر ابراہیم موسیٰ کی تحریر ہے۔
اس کا دل نشیں، رواں اور پرتاثیر اردو ترجمہ فاضل دیوبند اور جامعہ...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, January 4, 2018 - 11:33
(چار جنوری یوم وفات کی مناسبت سے خاص )
محمد علم اللہ 
کچھ شخصیات ایسی ہوتی ہیں، جن کا نقش آپ کے ذہن پر کنداں ہوجاتا ہے اور پھر وہ مٹائے نہیں مٹتا۔ اُنھی میں سے ایک مولانا محمد علی جوہر کی شخصیت ہے۔ مجھے نہیں معلوم کہ میں نے مولانا محمد علی جوہر کے بارے میں پہلی مرتبہ کب اور کیا سنا؟ لیکن ان کے بارے میں اتنا سنا کہ ان کی شخصیت کا ایک ہیولا سا میرے ذہن میں بن گیا۔ شیروانی، مخملی دوپلی ٹوپی اور گاندھی نما گول شیشے والی عینک زیب تن کیے ہوئے، ایک با رُعب شخصیت، جو انتہائی مختصر مدت میں بہت سے کام انجام دے کر، اس دُنیا سے رُخصت ہوگئے۔
جب میں عقل و شعور کی منزلیں طے کرتے ہوئے،...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, January 2, 2018 - 17:24
مصنف: کچھ دل سے
~!~ آج کی بات ~!~
کسوٹیاز عمر الیاس
کِسی کے ایمان کو جانچنے کی کسوٹی کیا ہے؟
آپ کِسی کا...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, January 2, 2018 - 14:12
مصنف: کچھ دل سے
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, January 2, 2018 - 09:07


قرآن کا نظریہ ارتقا
ڈاکٹر محمد عقیل
آج جس اہم موضوع پر بات کرنی ہے وہ قرآنی لائف سائکل ہے۔ انسان کا پورا وجود اسی ترقی و تنزلی سے ہمیشہ سے دوچار ہے۔ ابتدا میں انسان ایک روح یا بغیر مادی جسم کے ایک روحانی وجود کی صورت میں تخلیق ہوتا ہےجسے عالم ارواح کہتے ہیں ۔ جب اسے دنیا میں بھیجا جاتا ہے تو اس کا مزیدارتقا ہوتا ہے ۔اب ماں کے پیٹ میں اس روح کو قالب یعنی مادی جسم دینے کا عمل شروع ہوتا ہے۔ جو روحانی وجود اس عمل کو پورا نہیں کرپاتا ، وہ ماں کے پیٹ میں ہی مرجاتا ہے

۔

اگلا مرحلہ بچے کا ماں کے پیٹ سے دنیا کے پیٹ میں منتقلی ہے۔ اس مرحلے میں انسان تھری ڈائی...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, January 1, 2018 - 14:20
مصنف: کچھ دل سے
دین اسلام کا بنیادی عقیدہمسجد حرام کے امام وخطیب فضیلۃ شیخ ڈاکٹر خالد بن علی الغامدی حفظہ اللہ
جمعۃ المبارک 11 ربیع الثانی 1439 ھ بمطابق 29 دسمبر 2017
ترجمہ: محمد عاطف الیاس
الحمدللہ! ہر طرح کی تعریفیں اللہ تعالی ہی کے لئے ہیں۔ اسی نے اپنے رسول کو ہدایت اور دین حق کے ساتھ بھیجا تاکہ اسے تمام...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, December 31, 2017 - 16:44
میرا یہ سال یوں رہا۔ 
جنوری میں سپاجیریک میڈیسن کے بنیادی کورس کا اغاز کیا۔ جسم میں آکسیجن کی کمی اور اسکے بد اثرات۔ ٹیومز وغیرہ کا پیدا ہونا، بڑھنا اور روکنا۔ 
فرروی میں فنکشنل میڈیسن کا بنیادی...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: اتوار, December 31, 2017 - 15:32
مصنف: کچھ دل سے
~!~ آج کی بات ~!~
کچھ کھونے کا ڈر ہی آپ کی زندگی کو جینے لائق بناتا ہے۔۔۔...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, December 30, 2017 - 22:58
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, December 30, 2017 - 16:08
مصنف: کچھ دل سے
~!~ آج کی بات ~!~
اگر انسانی رویوں میں الجھوگے تو زندگی الجھن میں گزرے گی...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, December 30, 2017 - 14:35
مصنف: کچھ دل سے
اسرا و معراج ، فضائل و اسباق - خطبہ جمعہ مسجد نبویترجمہ: شفقت الرحمان مغل
فضیلۃ الشیخ ڈاکٹر عبد الباری بن عواض ثبیتی حفظہ اللہ  نے مسجد نبوی میں 11  -ربیع الثانی- 1439 کا خطبہ جمعہ " اسرا و معراج،،، فضائل و اسباق" کے عنوان پر ارشاد فرمایا  جس میں انہوں نے  کہا  کہ اسرا اور معراج کے طویل سفر کو اللہ تعالی نے اپنی قدرت کے اظہار کے لیے بیان فرمایا ، اس سفر میں بہت زیادہ اسباق  اور نصیحتیں ہیں کہ اس سفر کی سعادت...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, December 29, 2017 - 17:29
مصنف: کچھ دل سے
~!~ آج کی بات ~!~
خوش رہا کرو -پریشان رہنے والوں کو کبھی کچھ نہیں ملا -اگر...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, December 29, 2017 - 12:04
راہ مسدود ہے 
ہر طرف کتنی چھوٹی بڑی گاڑیاںآڑی ٹیڑھی پھنسی بیچ چوراہے پرڈرائیور* پان کی پیک منہ میں لئےگالیاں دے رہے ہیں ہوا میں کسی دوسرے ڈرائیور کا تصوّر کیے
پان کی پیک، بس کا دھواں ڈرائیور کے غلاظت بھرے منہ سے اُگلی ہوئی گالیاںجُز تعفّن نہیں کچھ، نہیں کچھ یہاں
نظم مفقود ہےراہ مسدود ہے
اُس کو جانے کی جلدی تھی اُس نے غلط راہ لیاُس کی جلدی کا عفریت کتنے ہی لوگوں کے معمول کو کھا گیااب سبھی گاڑیاں  راستے میں پھنسی ہیں کئی ہاتھ ہارن سے چمٹے ہوئے ہیںمگر کوئی بڑھ کر کہاں دیکھتا ہےکہ سُلجھاؤ کا  راستہ ہے کہاں
سوچ مفقو د ہےراہ...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, December 29, 2017 - 10:03

امام احمد ؒ بن حَنبل کہتے ہیں
ایک بار راہ چلتے ہوئے میں نے دیکھا کہ ایک ڈاکو لوگوں کو لوٹ رہا ہے ۔ کچھ دِنوں بعد مجھے وہی شخص مسجد میں نماز پڑھتا نظر آیا ۔ میں اس کے پاس گیا اور اسے سمجھایا کہ تمہاری یہ کیا نماز ہے ۔ الله تعالٰی کے ساتھ معاملہ یُوں نہیں کیا جاتا کہ ایک طرف تم لوگوں کو لُوٹو اور دوسری طرف تمہاری نماز الله کو قبول ہو اور پسند آتی رہے
ڈاکو بولا ”امام صاحب ۔ میرے اور الله کے مابین تقریباً سب دروازے بند ہیں ۔ میں چاہتا ہوں کوئی ایک دروازہ میرے اور الله کے مابین کھُلا رہے

کچھ عرصہ بعد میں حج پر گیا ۔ طواف کے دوران دیکھتا ہوں کہ ایک شخص کعبہ کے غلاف سے چمٹ کر...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعرات, December 28, 2017 - 17:16
مصنف: کچھ دل سے
~!~ آج کی بات ~!~
جب انسان کے دل میں لوگوں کیلئے سچی محبت ہوتی ہے تو ان کی...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, December 27, 2017 - 21:27
مصنف: شعیب صفدر
شاہ رخ جتوئی ضمانت پر رہا ہوچکا ہے اس کی رہائی کے ساتھ ہی سوشل اور روایتی میڈیا پر فیصلہ پر تنقید جاری ہے ۔عام افراد پاکستانی قانون سے نا واقف ہیں سو ان کو بس یہی نظر آرہا ہے کے ہمیشہ کی طرح ایک دولت مند شخص سزا سے بچ گیا ۔
پاکستان میں کچھ جرائم نا قابل راضی نامہ ہیں اور کچھ قابل راضی نامہ ہیں۔ قتل کا مقدمہ دفعہ 309 اور 310 تعزیرات پاکستان اور ضابطہ فوجداری دفعہ 345 ذیلی دفعہ 2 کے تحت عدالت مجاز کے اجازت سے قابل راضی نامہ ہوتا ہے ۔ مگر چونکہ اس قتل سے عام لوگوں میں خوف و ہراس پھیلا تھا (جو دراصل میڈیا کوریج کا نتیجہ تھا) اس لیے مقدمہ میں دہشت گردی کی دفعات بھی شامل کی گئیں جو...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, December 27, 2017 - 17:48
مصنف: شعیب صفدر

(نوٹ یہ تحریر مجھے بذریعہ وٹس اپ موصول ہوئی لکھاری کا علم نہیں مگر حسب حال ہے)

‎ہم پر یہ راز کھلا ک...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, December 27, 2017 - 17:14
مصنف: کچھ دل سے
~!~ آج کی بات ~!~
اچھا فیصلہ کرنے کی صلاحیت تجربے سے پیدا ہوتی ہے؛ ...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, December 27, 2017 - 13:08
اسلامی تاریخ کے سرسری مطالعے کی بنیاد پر یہ رائے قائم کیا گیا ہے کہ جب مسلمانوں کو قدرت و طاقت حاصل ہوجائے تو شاید یہ شرعی حکم ہے کہ تلوار لے کر تمام غیر مسلم ملکوں اور لوگوں پر چڑھ دوڑو۔۔حقیقت اسکے برعکس ہے۔اسلامی ریاست عام طور پر اعلا کلمۃ اللہ کی بنیاد پر…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, December 27, 2017 - 12:39
یہ مکالمہ ڈاکٹر مشتاق صاحب چیئرمین شعبہ قانون اسلامی یونیورسٹی، ڈاکٹر شہباز ، پروفیسر سرگودھا یونیورسٹی، ڈاکٹر زاہد مغل صاحب پروفیسر نسٹ یونیورسٹی کے درمیان ہوا۔ اس میں وہ تمام اشکالات زیربحث آئے جو کہ ایک نظریے کی اشاعت کے لیے جنگ کے جواز پر اٹھائے جاسکتے ہیں۔ اعتراضات ڈاکٹر شہباز صاحب نے اٹھائے اور…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: بدھ, December 27, 2017 - 08:06
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, December 26, 2017 - 21:17
سید ابو الحسن علی ند وی کا تصو ر پا کستا ن   خصوصی تحریر: بسلسلہ یوم وفات 31دسمبر1999ء   تحر یر عتیق الر حمن  (اسلام آ با د )(مضمون نگار وفاقی اردویونیورسٹی اسلام آباد میں ایم فل اسلامیات کا طالب علم ہے،شعبہ صحافت سے گذشتہ 10سال سے وابستہ ہے ملک کے بڑے چھوٹے جرائد میں ''دیس کی بات'' کے نام سے مضامین اشاعت پذیرہوچکے ہیں۔علمی و مطالعاتی شعبہ میں سید ابوالحسن علی ندوی کی کتب سے استفادہ کرتے ہیں۔اسی کی روشنی میں تعلیم یافتہ نوجوانوں کیلئے فکری پیام کے انتقال کیلئے علی میاں کی یوم وفات کے سلسلہ میں یہ مضمون تحریر کیا ہے ۔جس کو شائع کرکے ممنون فرمائیں۔) بر صغیر میں...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, December 26, 2017 - 16:28
مصنف: کچھ دل سے

بھلے لوگوں کی صفاتمسجد حرام کے امام وخطیب فضیلۃ الشیخ فیصل بن جمیل الغزاوی
جمعۃ المبارک 4 ربیع الثانی 1439 ہ بمطابق 22 دسمبر 2017
 ترجمہ محمد عاطف الیاس
اللہ رب العالمین کے لیے بے...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, December 26, 2017 - 13:01


میری کرسمس – کفر یا ایمان؟
ڈاکٹر محمد عقیل
میری کرسمس پر آج کل زوردار بحث چل رہی ہے۔ ایک گروہ اس اصطلاح کا مطلب خدا کا بیٹا لے کر اس کے کہنے والوں پر کفر کا اطلاق کررہا ہے تو دوسرا گروہ وارفتگی میں میری کرسمس بولنا مذہنی و اخلاقی فریضہ ثابت کرتے ہوئے دکھائی دیتا ہے۔ حقیقت ان دونوں کے بین بین ہے۔
جہاں تک میری کرسمس کے لغوی معنی کا تعلق ہے تو یہ سادہ الفاظ میں "ہیپی کرسمس "یا "کرسمس مبارک ہو” بنتا ہے۔ بالکل ایسے ہی جیسے ہم عید مبارک کہتے ہیں۔ بالفرض میری کرسمس کے لغوی معنی خدا کا بیٹا ہی کے ہیں تب بھی اس اصطلاح کے موجودہ معنی ” کرسمس...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: منگل, December 26, 2017 - 12:57


بگ بینگ سے پہلے کچھ نہ تھا ؟اسٹیفن ہاکنگ کے جواب کا تجزیہ
ڈاکٹر محمد عقیل
سوال: کیا کائنات کہیں ختم ہوتی ہے۔ اگر ہاں تو اس اختتام کے اس پار کیا ہے؟

جواب: ہمارا مشاہدہ ہمیں یہ بتاتا ہے کہ کائنات ایک انتہائی تیز رفتار اسراع کے ساتھ پھیل رہی ہے۔ میں سمجھتا ہوں کہ یہ پھیلاو لامتناہی ہے اور وقت کے ساتھ ساتھ اس کی وجہ سے کائنات مزید خالی اور تاریک ہوتی چلی جائے گی۔ اگرچہ کائنات کا کوئی اختتام نہیں پر اس کا ایک آغاز ضرور ہے۔ آج اس آغاز کو ہم بگ بینگ کہتے ہیں۔ یہ پوچھا جا سکتا ہے کہ بگ بینگ سے پرے کیا تھا اور اس کا جواب ہو گا کہ کچھ نہیں۔ایسے ہی جیسے قطب جنوبی سے پرے...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, December 25, 2017 - 16:05
کیا ڈیڑھ چلو پانی میں ایمان بہہ گیا

دور جدید کا ایک بڑا خسارہ برداشت کا جنازہ ہے۔ چند اہل علم و ہنر اس بات کو تسلیم کرنے سے انکاری ہیں اور ان کا خیال ہے کہ مروت، محبت اور رواداری قریب المرگ ضرور ہیں مگر ابھی جنازہ نہیں اٹھا۔ بعض کے ہاں یہ خیال پایا جاتا ہے کہ سکرات طاری ہے مگر ممکن ہےکہ پھر سے صحت پائیں۔ میں ان پرامید لوگوں کی شمع امید گل کرنا نہیں چاہتا مگر ان سے یہ سوال ضرور پوچھ لیتا ہوں کہ قریب المرگ ہے تو کب تک سرہانے سے لگے اس کو دیکھو گے؟سکرات طاری ہے تو وینٹیلیٹرز کب تک کام کریں گے؟موجودہ معاشرے میں جہاں ایک "فارورڈ" کے بٹن نے تحقیق کا گریباں چاک کیا ہے وہیں "کاپی پیسٹ"...
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, December 25, 2017 - 12:51
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سوموار, December 25, 2017 - 09:49

الله کے حُکم سے پاکستان بنانے والے مسلمانانِ ہند کے عظیم راہنما قائد اعظم محمد علی جناح کا آج یومِ ولادت ہے ۔ میں اس حوالے سے قائد اعظم کے متعلق لکھی ہوئی چند اہم تحاریر کے عنوان مع روابط لکھ رہا ہوں ۔ آپ سب پاکستانی ہیں یا کم از کم پاکستان سے تعلق رکھتے ہیں ۔ آپ کو پاکستان کے متعلق بنیادی حقائق معلوم ہونا چاہئیں تاکہ معاندانہ پروپیگنڈہ سے محفوظ رہ سکیں

قائد اعظم کی خواہش پر کہ بھارت کے ساتھ نہ کیا جائے پاکستان کا اعلان 14 اور 15 اگست کی درمیانی رات 11 بج کر 57 منٹ پر اور بھارت کا 12 بجے کے بعد کیا گیا ۔ 27 رمضان المبارک 1366 ھ اور 15 اگست 1947ء بروز جمعة المبارک سرزمینِ پاکستان...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, December 23, 2017 - 14:38


خدا شخصی ہے یا غیر شخصی ؟اسٹیفن ہاکنگ کے اعتراض کا تجزیہ
ڈاکٹر محمد عقیل
حال ہی میں اسٹیفن ہاکنگ کا ایک انٹرویو شائع ہوا ہے جس میں انہوں نے دس سوالات کے جواب دیے ہیں۔۔ ان کے پہلےجواب پر تبصرہ پیش خدمت ہے ۔ اس کا مقصد اہل مذہب کی غلطیوں کے ساتھ ساتھ اہل سائنس کی کوتاہیوں کی نشاندہی کرنا اور ایک ریکنسی لی ایشن کے نتیجے تک پہنچنا ہے۔
سوال: اگر خدا نہیں ہے تو اس کے وجود کا تصور اتنا مقبول کیسے ہو سکتا ہے؟

جواب: میں نے یہ دعوی کبھی نہیں کیا کہ خدا وجود نہیں رکھتا۔ ہم اس جہان میں کیوں ہیں؟ یہ سوال جب بھی ایک انسانی ذہن میں اٹھتا ہے تو اس کی...

زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, December 23, 2017 - 13:12
جہاد کی فرضیت اسلام کے جاری کردہ احکام میں سے نہیں ہے بلکہ کلمہ حق کی سربلندی اور انسانی سوسائٹی پر آسمانی تعلیمات کی بالادستی کے لیے جہاد اس سے قبل بھی ہوتا رہا ہے اور قرآن کریم نے اس جہاد کے مختلف مراحل کا تذکرہ بھی کیا ہے۔ جہاد کا تذکرہ بائبل میں بھی…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: سنیچر, December 23, 2017 - 12:31
لفظ ’جہاد‘ کا استعمال آئے دن سیاست دانوں،نشریاتی ایجنسیوں اور صحافتی اداروں کے ذریعے ہوتارہتاہے۔ اکثر موقعوں پر اِس کااستعمال دہشت گردی (Terrorism)اور کھلی تباہی(Wanton Destruction)جیسے مطالب بیان کرنے کی غرض سے کیاجاتاہے۔ حد یہ کہ ۱۱/ستمبر ،۷/جولائی اور حالیہ ممبئی حملوں پربھی مغربی تجزیہ نگاروں نے بڑی شاطرانہ چال سےاسی ’جہاد ‘کا لیبل چسپاں…
زمرہ: اردو بلاگ
تاریخ اشاعت: جمعہ, December 22, 2017 - 13:16
مصنف: کچھ دل سے


یا رب تو اپنے فضل سے آنا قبول کرتیرے سوا نہیں سہارا قبول کر
سوغاتِ فَقر دور سے لایا ہوں میں یہںوللہ تجھ کو فَقر ہے پیارا قبول کر
تیرے سوا نہیں سہارا قبول کر
الجھا ہے قلب خانہ کعبہ کی زلف میںتو ملتزم سے سینہ ملانا قبول کر
تیرے سوا نہیں سہارا قبول کر
زمزم ہے رشکِ و کوثر و تسنیم و سلسبیلزمزم سے دل کی آگ بجھانا قبول کر
تیرے سوا نہیں سہارا قبول کر
ہو رحم تیرا مجھ پہ تو آؤں گا بار باراب بھی بلایا تو نے کریما قبل کر
تیرے سوا نہیں سہارا قبول کر
اسود حجر کے چہرے پہ بوسہ ہے خوب تربوسہ نہ ہو سکے تو اشارہ قبول کر
تیرے سوا نہیں ہے سہارا...
زمرہ: اردو بلاگ

Pages

Subscribe to بلاگستان فیڈز